شینہائی انقلاب

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شینہائی انقلاب
Xinhai Revolution
1911ء کا چینی انقلاب
(Chinese Revolution of 1911)
بسلسلہ چنگ مخالف تحریک
Xinhai Revolution in Shanghai.jpg
شینہائی انقلاب کے دوران نانجنگ روڈ
تاریخ10 اکتوبر 1911ء (1911ء-10-10) – 12 فروری 1912 (1912-02-12)
(4 مہینا، 2 دن)
مقامچنگ خاندان
نتیجہ

چینی انقلابی اتحاد کی فتح

محارب

Flag of China (1889–1912).svg چنگ خاندان

Flag of چین جمہوریہ چین کی عبوری حکومت
ہوبئی جمہوریہ چین کی فوجی حکومت
تونگمینگہوئی
گیلاوہوئی
تیاندیہوئی
مختلف دیگر انقلابی گروہ اور قوتیں
علاقائی حکام اور جنگجو
کمانڈر اور رہنما
ملکہ دوواگیر لونگیو
شہزادہ-ریجنٹ زایفینگ
وزیر اعظم یوان شیکائی
فینگ گؤژانگ
ما انلیانگ
دوان چیروی
یانگ زینگشین
ما چی
کئی دیگر اشرافیہ چنگ خاندان
عبوری صدر سن یات سین
جنرل ہوانگ شینگ
سونگ جیاورین
چئن چیمئی
Flag of چین عبوری نائب صدر لی یوانہونگ
Flag of چین عبوری صدر یوان شیکائی
طاقت
200,000 100,000
ہلاکتیں اور نقصانات
~170,000 ~50,000

شینہائی انقلاب (انگریزی: Xinhai Revolution) (چینی: 辛亥革命; پینین: Xīnhài Gémìng) جسے چینی انقلاب اور 1911ء کا انقلاب بھی کہا جاتا ہے ایک انقلاب تھا جس نے چین کے آخری سلسلہ شاہی (چنگ خاندان) کا خاتمہ کیا جس کے نتیجے میں جمہوریہ چین (1912ء–1949ء) کا قیام عمل میں آیا۔ انقلاب کا نام شینہائی اس وجہ سے ہے کیونکہ یہ 1911ء میں ہوا جو چینی تقویم کے مطابق شینہائی (辛亥; 'دھاتی سور') کا سال ہے۔ [2]

اس انقلاب میں بہت سے بغاوتیں اور شورشیں شامل تھیں۔ اس کا اہم موڑ 10 اکتوبر 1911ء کو ہونے والی ووچانگ شورش (چینی: 武昌起义) تھی جو "ریلوے تحفظ تحریک" پر غلط انداز میں پیش آنے کی وجہ سے تھی۔ انقلاب کا اختتام 12 فروری 1912ء کو چھ سالہ آخری شہنشاہ پویی کی تخت سے دستبرداری پر ہوا۔ اس کے ساتھ ہی دو ہزار سالہ چینی شاہی دور کا اختتام اور چینی ابتدائی جمہوری دور کا آغاز ہوا۔ [3]

انقلاب کی بنیادی وجہ چنگ خاندان کا زوال تھا جو چین کو جدید بنانے اور غیر ملکی جارحیت کا مقابلہ کرنے میں ناکام ثابت ہوا تھا۔ بہت سے زیر زمین "چنگ مخالف گروہ"، جلاوطن چینی انقلابی چنگ خاندان کو ختم کرنے کی کوشش میں تھے۔ مختصر خانہ جنگی چنگ حکومت کے با اثر چینی فوجی اور حکومتی اہلکار یوان شیکائی اور تونگمینگہوئی (متحدہ جماعت) کے رہنما سن یات سین کے درمیان ایک سیاسی سمجھوتے کے ذریعے ختم ہوئی۔

جمہوریہ چین اور اصل سرزمین چین پر عوامی جمہوریہ چین دونوں خود کو شینہائی انقلاب کا جائز جانشین تصور کرتے ہیں اور قوم پرستی، جمہوریت، چین اور قومی اتحاد کے نظریات سمیت اس کا احترام کرتے ہیں۔ تائیوان میں 10 اکتوبر "دہرے دس" دن کے طور پر جمہوریہ چین کا "قومی دن" ہے۔ اصل سرزمین چین، ہانگ کانگ اور مکاؤ میں یہ دن شینہائی انقلاب کے سالانہ جشن کے طور پر منایا جاتا ہے۔


مزید دیکھیے[ترمیم]

انقلاب روس

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Kit-ching (1978), pp. 49–52.
  2. Li Xing. [2010] (2010). The Rise of China and the Capitalist World Order. Ashgate Publishing, Ltd. ISBN 0-7546-7913-6, ISBN 978-0-7546-7913-4. p. 91.
  3. Li, Xiaobing. [2007] (2007). A History of the Modern Chinese Army. University Press of Kentucky. ISBN 0-8131-2438-7, ISBN 978-0-8131-2438-4. pg 13. pg 26–27.