محمد عزیز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
محمد عزیز
(بنگالی میں: মোহাম্মদ আজিজ ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Bollywood Playback Singers-Mohammed Aziz.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (بنگالی میں: সৈয়দ মোহাম্মাদ আজিজ-উন-নবী ویکی ڈیٹا پر پیدائشی نام (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 2 جولا‎ئی 1954  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کولکاتا  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 27 نومبر 2018 (64 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ممبئی  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
فنی زندگی
پیشہ پس پردہ گلوکار  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان بنگلہ، ہندی  ویکی ڈیٹا پر زبانیں (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

محمد عزیز (2 جولائی 1958ء - 27 نومبر 2018ء) بھارت کے ایک پس پردہ گلوکار تھے جنہوں نے بالی وڈ، بنگالی اور اوڑیہ فلمی صنعتوں میں گلوکاری کی۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

ان کا اصل نام سید عزیز النبی اور مختصر نام مُنا تھا۔ وہ اشوک نگر، مغربی بنگال، بھارت میں پیدا ہوئے۔ موسیقی سے والہانہ لگاؤ اور گلوکار محمد رفیع سے عقیدت کی وجہ سے انہوں نے بچپن سے ہی گانا شروع کر دیا تھا۔

فنی زندگی[ترمیم]

عزیز، ایک بنگالی زبان کی فلم “جیوتی“ میں گلوکاری کر کے فلمی گلوکاری کی زندگی میں داخل ہوئے۔ وہ 1984ء میں ایک پروڈیوسر کے رشتہ دار کی وساطت سے ممبئی آ گئے۔ ان کی پہلی ہندی فلم “امبر“ تھی جو 1984ء میں پردہ سیمیں پر آئی تھی۔[1]

عزیز نے ایک گلوکار کی حیثیت سے اپنی فنی زندگی کا آغاز کلکتہ کے ایک ریستوران “ غالب “ سے کیا تھا۔ اس دوران میوزک ڈائریکٹر انو ملک نے انہیں بالی ووڈ اداکار امیتابھ بچن کی فلم مرد میں ایک نغمہ ’مرد تانگے والا‘ گانے کا موقع دیا۔ اس فلم کے ہیرو بالی وڈ کے اداکار امیتابھ بچن اور ہیروئن امریتا سنگھ تھیں۔ 1985ء میں ’مرد تانگے والا‘ نے اُنہیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچایا۔ اس کے بعد محمد ایک مقبول گلوکار کی فہرست میں آگئے اور کئی معروف میوزک ڈائریکٹر مثلاً کلیان جی آنند جی، لکشمی کانت پیارے لال، راہول دیو برمن، نوشاد، او پی نیر، بپی لہری، راجیش روشن، رام لکشمن، رویندر جین، اُوشا کھنہ، آنند ملند، ندیم شرون، جتن للت، انو ملک، دامودر راؤ، آنند راج آنند اور آدیش شری واستود جیسے موسیقاروں کے ترتیب دیے ہوئے گیت گائے۔ 80 کی دہائی میں محمد عزیز کی آواز میں گائے فلمی گیت سپر اسٹار امیتابھ بچن، متھن چکرورتی اور پھر گووندا پر فلمائے گئے۔

محمد عزیز نے ’مائی نیم از لکھن‘، ’تیری بے وفائی کا شکوہ کروں تو‘، ’لال دوپٹہ ململ کا‘، ’پت جھڑ ساون بسنت بہار‘، ’پیار ہمارا امر رہے گا‘ سمیت درجنوں مقبول ترین گیت گائے۔محمد عزیز کا نغمہ ’’آپ کے آجانے سے ‘‘ فلموں کے چاہنے والوں میں خوب مقبول ہوا ۔

انہوں نے مرد کے علاوہ بنجارن، آدمی کھلونا ہے، لو 86، پاپی دیوتا، ظلم کو جلا دوں گا، پتھر کے انسان، بیوی ہو تو ایسی، برسات کی رات جیسی کئی فلموں میں گانے گائے۔ محمد عزیز نے ہندی فلموں کے علاوہ بنگالی، اڑیااور دیگر علاقائی زبان کی فلموں میں بھی بطور پلے بیک گانے گائے۔ وہ محمد رفیع کے بہت بڑے پرستار تھے۔

گلوکار محمد عزیز ہندی فلمی صنعت میں فلموں کے لیے 1980ء اور 1990ء کے عشروں میں بہترین نغمے پیش کیے۔

وفات[ترمیم]

27 نومبر 2018ء گلوکار محمد عزیز کا ایک ناناوتی اسپتال، ممبئی میں دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے 64 سال کی عمر میں انتقال ہو گیا۔[2][3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Mohammed Aziz"۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  2. "مشہور گلوکار محمد عزیز کا انتقال"۔ دی وائر اردو۔ 27 نومبر 2018۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  3. "محمد عزیز کا انتقال: محمد رفیع کے بڑے پرستار کی آواز خاموش"۔ قومی آواز۔ 27 نومبر 2018۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔