موزی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
موزی
(چینی میں: 墨子 خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 470 ق م  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
ریاست لو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
تاریخ وفات سنہ 391 ق م  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
رہائش ریاست سونگ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رہائش (P551) ویکی ڈیٹا پر
شہریت ژؤ سلطنت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
قابل ذکر شاگرد چن ہوا لی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شاگرد (P802) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ فلسفی،  رزمی انجینئر،  انجینئر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
شعبۂ عمل اخلاقی فلسفہ،  اخلاقیات،  سماجی فلسفہ،  سیاسی فلسفہ،  منطق،  علمیات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شعبۂ عمل (P101) ویکی ڈیٹا پر

موزی، مو تزو یا میشیس[1] (حقیقی نام: مو دی، عرصہ حیات: 470 – 391 ق م)[2] سو مکاتب فکر کے دور (ابتدائی متحارب ریاستوں کے دور) کے دوران ایک چینی فلسفی گزرے ہیں۔ موزی نامی کتاب ان کی اور ان کے مریدین کی طرف منسوب ہے۔

سوانح[ترمیم]

موزی موجودہ تینگژؤ، شانڈونگ میں پیدا ہوئے تھے۔ انہوں نے موزی مت مکتب فکر کی بنیاد رکھی جو کنفیوشس مت اور تاؤ مت کے مخالف تھا۔ ان کا فلسفہ مروجہ رسوم کے بجائے ضبط نفس، مشاہدۂ نفس اور استناد/معتبری پر زور دیتا ہے۔ متحارب ریاستوں کے دور کے دوران موزی مت سرگرم اور ترقی یافتہ اور کئی ریاستوں میں عروج پر تھا تاہم قانون پرست چِن سلطنت کے اقتدار میں آنے کے بعد اس کا زوال آ گیا۔ کہا جاتا ہے کہ اس دور کے دوران موزی مت کے کئی صحائف تباہ کر دیئے گئے، جب چن شی ہوانگ کے حکم پر کتب نذر آتش اور علما کو زندہ درگور کیا گیا تھا۔ جب کنفیوشس مت ہان سلطنت کے دور میں نمایاں مکتب فکر بن گیا تو موزی مت کی اہمیت مزید گھٹ گئی حتیٰ کہ مغربی ہان سلطنت کے درمیانی عہد میں بالکل معدوم ہو گیا۔[3]

موزی تمام تر چینی ثقافت میں کتاب ہزار حرفی (Thousand Character Classic) کی وجہ سے بچوں میں مقبول ہیں، ہزار حرفی صحیفہ میں داستان درج ہے کہ جب انہوں نے خالص سفید ریشم پر رنگ چڑھتے دیکھا تو وہ غمگین ہو گئے، جس نے ان کے درشتی (سادگی، عفت) کے خیال کو غیر مبہم و قابل فہم بنا دیا۔ چینی بولنے والوں کے موجودہ نوجوان شائقین کے لیے اُن کے مکتب فکر کی صورت اور اس کے بانی کو اینی میٹیڈ ٹی وی سلسلے ”دی لیجنڈ آف چِن“ کے ذریعے مقبول کیا گیا تھا۔

ائی (愛) کا تصور چوتھی صدی قبل مسیح میں کنفیوشس کے رین (仁 ، ”کریم النفسی“) کے رد عمل میں چینی فلسفی موزی کا منکشف کیا ہوا ہے۔ موزی نے چینیوں کے خاندان اور قبیلے سے متعلق حد سے زیادہ لگاؤ پر چڑھائی کرنے کو برا سمجھا اور اسے ”آفاقی محبت“ (جیان ائی، 兼愛) کے تصور سے بدلنے کی کوشش کی۔ اس میں انہوں نے کنفیوشس پسندوں سے براہ راست مباحثہ کیا جو یہ یقین رکھتے تھے کہ لوگوں کے لیے خاص معاملات میں خاص افراد کے متعلق متفکر ہونا فطری اور درست ہے۔ اس کے برعکس موزی سمجھتے تھے کہ لوگوں کو بنیادی طور پر سب کے لیے یکساں طور پر متفکر ہونا چاہیے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Chad Hansen۔ A Daoist Theory of Chinese Thought: A Philosophical Interpretation۔ Oxford University Press۔ صفحہ 394۔ آئی ایس بی این 978-0-19-506729-3۔ There was a fleeting movement to introduce use of Micius for Mozi, whose bones no doubt relaxed when the movement failed.
  2. Průšek, Jaroslav and Zbigniew Słupski, eds., Dictionary of Oriental Literatures: East Asia (Charles Tuttle, 1978): 119-120.
  3. Chris Fraser۔ "Mohism"۔ "The Stanford Encyclopedia of Philosophy"۔