میر جعفر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
میر جعفر
Mir Ja'afar with his Courtiers.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1691  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کومیلا  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 5 فروری 1765 (73–74 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بنگال  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مناصب
نواب بنگال اور مرشدآباد (6 )   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
2 جولا‎ئی 1757  – 20 اکتوبر 1760 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png سراج الدولہ 
میر قاسم  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
نواب بنگال اور مرشدآباد (6 )   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
25 جولا‎ئی 1763  – 5 فروری 1765 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png میر قاسم 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
دیگر معلومات
پیشہ سیاست دان[2]  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
میر جعفر (بائیں) اور اس کا بڑا بیٹا، میر میراں
جنگ پلاسی میں فیروزمندی کے بعد میر جعفر رابرٹ کلائیو کے ساتھ ملقات کرتے ہوئے۔

میر جعفر نواب سراج الدولہ کی فوج کا سپہ سالار تھا، جس نے جنگ پلاسی کے دوران نواب سراج الدولہ کے ساتھ غداری کرکے شہرت پائی۔

جعفر علی خان نواب سراج الدولہ کی فوج میں ایک سردار تھا۔ بعد میں ترقی کرتے ہوئے سپہ سالار کے عہدے تک پہنچ گیا۔ یہ نہایت بد فطرت آدمی تھا۔ اس کی نگاہیں تخت بنگال پر تھیں۔ یہ چاہتا تھا کہ نوجوان نواب کو ہٹا کر خود نواب بن جائے، اس لیے اس نے نواب سراج الدولہ سے غداری کر کے ان کی شکست اور انگریزوں کی جیت کا راستہ ہموار کیا، جس کے بعد بنگال پر انگریزوں کا عملاً قبضہ ہو گیا۔

اس خدمت کے صلے میں انگریزوں نے میر جعفر کو 1757ء میں برائے نام بنگال کا نواب مقرر کر دیا۔ یہ ایک کٹھ پتلی حکمران تھا، اصل اختیارات لارڈ رابرٹ کلائیو کے ہاتھ میں تھے۔ چنانچہ انگریزوں کو لوٹ مار کی کھلی آزادی تھی۔ انہوں نے بنگالی عوام کو جی بھر لوٹا۔ پنگالیوں کے قالین کے کاروبار تباہ ہو گئے۔

میر جعفر کی لالچ اور غداری کی وجہ سے بنگال سے اسلامی حکومت ختم ہو گئی اور برصغیر پہ انگریزوں کے قبضے کا راستہ ہموار ہو گیا، جو اگلے 190 سال تک برقرار رہا۔

بعد ازاں انگریز نے میر جعفر کو معزول کر کے اس کی پنشن مقرر کر دی اور اس کے داماد میر قاسم علی خان کو نواب بنا دیا۔ یہ انگریزوں کا مخالف تھا۔ اس نے انگریزوں سے جنگ کی تو انگریزوں نے میر جعفر کو دوبارہ نواب بنا دیا۔

میر جعفر کی وفات 5 فروری 1765ء میں ہوئی[3]

علامہ اقبال نے بطور غدار میر صادق کے ساتھ اس کا بھی تذکرہ کیا.

جعفر از بنگال و صادق از دکن
ننگِ آدم، ننگِ دین، ننگِ وطن

حوالہ جات[ترمیم]

  1. دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Mir-Jafar — بنام: Mir Ja'far — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  2. اجازت نامہ: گنو آزاد مسوداتی اجازہ
  3. The Cambridge History of India, Vol V.P.174