نور الحسن راشد کاندھلوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
نور الحسن راشد کاندھلوی
معلومات شخصیت
پیدائش 20 دسمبر 1950 (69 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
کاندھلہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مذہب اسلام
فرقہ اہل سنت
فقہی مسلک حنفی
والد افتخار الحسن کاندھلوی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی مظاہر علوم سہارنپور  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ مصنف،  عالم  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
تحریک تبلیغی جماعت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تحریک (P135) ویکی ڈیٹا پر
P islam.svg باب اسلام

نور الحسن راشد کاندھلوی بھارت کے مشہور اسلامی مؤلف اور محقق ہیں، مشہور محدث اور مفسر افتخار الحسن کاندھلوی کے صاحبزادہ ہیں۔

سلسلہ نسب[ترمیم]

وہ بکری اور صدیقی سلسلۂ نسب سے تعلق رکھتے ہیں، پورا سلسلۂ نسب یوں ہے: نور الحسن بن افتخار الحسن بن رؤوف الحسن بن مفتی الہٰی بخش بن عوض بن ابو جعفر محمد بن عبد اللہ بن محمد بن عبد اللہ عمویہ بن سعد بن حسین بن قاسم بن نضر بن قاسم بن محمد بن عبد اللہ بن عبد الرحمٰن بن قاسم بن محمد بن ابو بکر صدیق۔

ولادت و تعلیم[ترمیم]

10 ربیع الاوّل 1370 ہجری مطابق 20 دسمبر 1950 عیسوی میں بھارت کے مغربی صوبہ اتر پردیش کے ضلع مظفر نگر کے شہر کاندھلہ کے ایک علمی و دینی گھرانہ میں پیدا ہوئے اور اپنے ہی علاقہ کے مکتب و مدرسہ میں ابتدائی تعلیم حاصل کی، پھر اعلٰی تعلیم کے لیے مظاہر العلوم سہارنپور گئے اور وہاں سے علوم شریعہ میں سنہ 1390ھ مطابق 1070ء میں فراغت حاصل کی، فراغت کے بعد پوری توجہ اور تندہی کے ساتھ علوم ومعارف کی اشاعت اور تالیف و تحقیق میں مشغول ہو گئے۔

تالیفات[ترمیم]

  • قاسم العلوم مولانا قاسم نانوتوی حیات و خدمات
  • مولانا عبد اللہ انصاری حیات و خدمات
  • سوانح حیات مولانا مظہر نانوتوی
  • رسائلِ حاجی امداد اللہ مہاجر مکی و رشید احمد گنگوہی
  • سابق امیر تبلیغ مولانا انعام الحسن کاندھلوی
  • مختصر سوانح حیات مفتی الہٰی بخش
  • اوراد و وظائف رمضان المبارک

حوالہ جات[ترمیم]

  • كتاب السلالة البكرية الصديقية - التاريخ والأنساب والمشاهير، الجزء الثاني، تأليف: أحمد عبد النبي فرغل الدعباسي البكري (عربی زبان میں)