چینگدو جے-10

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جے-10 پرجوش ڈریگن
J-10 Vigorous Dragon
ایف-10 ہر اول دستہ
F-10 Vanguard
J-10a zhas.png
چینگدو جے-10 کا ایک متغیر طیارہ
کردار کثیر المقاصد لڑاکا طیارہ
اصلی وطن چین
تیار کرنے والے چینگدو ہوائی جہاز انڈسٹری گروپ
ڈیزائنر گروپ چینگدو ہوائی جہاز ڈیزائن انسٹی ٹیوٹ
اولین پرواز 23 مارچ 1998[1]
متعارف کرایا گیا 2006[2]
حیثیت برسرکار
بنیادی استعمال کنندگان پیپلز لبریشن آرمی فضائیہ
مہیا کیا گیا 2002 – تاحال[3]
تعداد تعمیر 346+[4][5]
پروگرام پر لاگت 500 ملین رینمنبی مختص 1982[1] (پروجیکٹ #10)
ایک کی قیمت 190 ملین رینمنبی (27.84 ملین امریکی ڈالر; 2010)[6]

چینگدو جے-10 (انگریزی: Chengdu J-10) (آسان چینی حروف: 歼-10; روایتی چینی حروف: 殲-10; نیٹو رپورٹنگ نام: آتشیں پرندہ(Firebird) [7]، پرجوش ڈریگن بھی کہا جاتا ہے (چینی: 猛龙; پینین: Měnglóng[8][9] ایک ہلکے زون کا کثیر المقاصد لڑاکا طیارہ ہے جو ہر موسم میں اڑنے کی صلاحیت رکھتا ہے، جسے ڈیلٹا ونگ اور کنرڈ ڈیزائن کے ساتھ ترتیب دیا گیا ہے۔ [10] اور چینگدو ہوائی جہاز کارپوریشن نے پیپلز لبریشن آرمی کی فضائیہ کے لیے تیار کیا ہے۔

تاریخ ارتقا[ترمیم]

دنگ شاوپنگ نے پروگرام کو شروع کرنے کی اجازت دی اور اس کے لیے 0.5 بلین رینمنبی کو بجٹ مختص کیا تا کہ ایک مقامی طیارہ تیار کیا جا سکے۔ پراجیکٹ # 10 [1] پر کام کا آغاز کئی سال بعد جنوری 1988ء میں شروع ہوا۔ [11] یہ منصوبہ مگ-29، سخوئی سو-27 جو سوویت اتحاد میں بنائے گئے اور ایف-16 جو ریاستہائے متحدہ امریکا میں پہلے سے فعال تھا کے ایک جواب کے طور پر بنایا گیا۔ ہوائی جہاز ابتدائی طور پر ایک مخصوص لڑاکا طیارے کے طور پر ڈیزائن کیا گیا تھا، لیکن بعد میں اسے ہوا سے ہوا لڑائی اور زمین پر حملے کے مشن دونوں کے قابل ہونے والا ایک کثیر المقاصد لڑاکا طیارہ بنایا گیا۔

10 جنوری، 2007ء کو چینی حکومت نے جے-10 کی سرکاری طور پر نمائش کی، جب اس کی تصاویر شینہوا نیوز ایجنسی میں شائع کی گئیں۔ طیارے کی موجودگی کے بارے میں اس کے اعلان سے کافی عرصہ قبل بھی اس کے بارے میں معلومات تھیں تاہم رازداری کی وجہ سے صحیح تفصیلات کسی کو معلوم نہیں تھیں۔ پرواز کی جانچ کے دوران حادثات کی افواہیں اصل میں اے ایل-31 انجن سے منسلک تھیں۔ [12]

پہلا پروٹوٹائپ "جے-10 01" نومبر 1997 میں مکمل ہوا اور 23 مارچ 1998ء میں اس نے اپنی پہلی انتیس منٹ کی پرواز کی۔ [1][13]

فعال تاریخ[ترمیم]

چین[ترمیم]

پہلا طیارہ کو تیرہویں ٹیسٹ ریجمیںٹ کو 23 فروری 2003ء کو دیا گیا۔ اسی سال دسمبر میں اس کے "فعال" ہونے کا اعلان کیا گیا۔ [1][14]

جے-10سی اپریل 2018ء کو لڑائی کی خدمت میں داخل ہوا۔ [15]

پاکستان[ترمیم]

فروری 2006ء چین کے دورے پر اس وقت کے صدر پاکستان پرویز مشرف جے-10 اور جے ایف-17 کی تصنیف جگہ کا دورہ بھی کیا۔ نومبر 2009ء میں پاکستان نے عوامی جمہوریہ چین کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے جس میں 36 جے-10بی لڑاکا طیاروں کے تقریباً 1.4 بلین ڈالر کے معاہدے پر دستخط کیے گئے۔ [16][17]

مزید دیکھیے[ترمیم]

چینگدو جے-9

موازنہ کردار، ترتیب اور دور کا ہوائی جہاز[ترمیم]

ایف-16

داسو رافال

مگ-29

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت ٹ Wang Jieqing۔ "J-10 Fighter Test Flight Process Secret Revealed"۔ Southern Weekend۔
  2. "中国自行研制的歼-10战机正式列装我军航空兵" (Chinese زبان میں)۔ شینہوا نیوز ایجنسی۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 جنوری 2012۔
  3. "Chengdu J-10 (Jian-10, Fighter aircraft-10 / F-10)"۔ globalsecurity.org۔
  4. International Institute for Strategic Studies: The Military Balance 2017, p.284
  5. International Institute for Strategic Studies: The Military Balance 2017, p.283
  6. Lucy Hornby۔ "reuters, China J-10"۔ In.reuters.com۔ اخذ شدہ بتاریخ 2011-05-23۔
  7. Gulf Security after 2020. International Institute for Strategic Studies. 19 دسمبر 2017. p. 25. https://www.iiss.org/-/media//documents/publications/gulf%20security%20after%202020/iran%20pamphlets%20book-text.pdf?la=en۔ اخذ کردہ بتاریخ 28 اپریل 2018. 
  8. "J-10 (Jian 10) Vigorous Dragon Multirole Tactical Fighter"۔ Airforce Technology۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2019۔
  9. "Chengdu (AVIC) J-10 (Vigorous Dragon) / F-10 Vanguard"۔ Military Factory۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2019۔
  10. "Archived copy"۔ مورخہ 5 جولا‎ئی 2008 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2015-10-24۔
  11. John Pike۔ "Chinese Aircraft – J-10"۔ Globalsecurity.org۔ اخذ شدہ بتاریخ 2011-05-23۔
  12. Rupprecht, Andreas, 2013. Dragon's Wings. Birmingham: Ian Allan Publishing Ltd.
  13. Zhang Baoxin۔ "CAC J-10 External Design Did Not Receive Foreign Assistance"۔ Aerospace World magazine۔
  14. "Sinodefence.com: J-10 Multirole Fighter Aircraft"۔ مورخہ 29 مارچ 2007 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2007-04-09۔
  15. ZX (ویکی نویس.)۔ "China's fighter jet J-10C begins combat duty"۔ Xinhuanet۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 اپریل 2018۔
  16. "Pakistan signs deal for Chinese J-10 fighters". Flight International. 13 November 2009. http://www.flightglobal.com/news/articles/pakistan-signs-deal-for-chinese-j-10-fighters-334681/۔ اخذ کردہ بتاریخ 8 September 2013. 
  17. Farhan Bokhari۔ "Pakistan in Chinese fighter jet deal"۔ Financial Times۔ اخذ شدہ بتاریخ 8 ستمبر 2013۔

بیرونی روابط[ترمیم]