گایتری دیوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
گایتری دیوی
Maharani-gayatri-devi.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 23 مئی 1919[1][2]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لندن  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 29 جولا‎ئی 2009 (90 سال)[3][1][2]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جے پور[4]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت (26 جنوری 1950–)
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند (–14 اگست 1947)
Flag of India.svg ڈومنین بھارت (15 اگست 1947–26 جنوری 1950)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد نسل
والد جیتیندر نارائن  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ اندرا دیوی  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دیگر معلومات
پیشہ سیاست دان،  مصنفہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[5]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

بھارتی سیاست دان۔ رکن پارلیمان۔ جے پور کی سابق ریاست کی راج ماتا۔ کوچ بہاربنگال کے سابق شاہی خاندان میں ان کی پیدائش ہوئی۔ 9 مئی 1940 کو ان کی شادی جے پور کے مہاراجہ مان سنگھ سے ہوئی۔ مان سنگھ کی وہ تیسری بیوی تھیں۔ آزادی کے بعد جب ان کی ریاست کا خاتمہ ہوا تو انہوں نے عملی سیاست میں حصہ لیا۔ ان کی مقبولیت کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ جب انہوں نے 1962 میں لوک سبھا انتخابات ميں کھڑے ہونے کا فیصلہ کیا تو انہيں ریکارڈ ووٹوں سے جیت حاصل ہوئی۔ ان کی جیت کو گینیز بک آف ورلڈ ریکارڈ نے بھی درج کیا تھا، لیکن ان کی زندگی میں ایک وقت ایسا بھی آیا جب اپنے نظریے کے سبب ایمرجنسی کے دوران میں انہيں جیل بھیج دیا گیا۔ گایتری دیوی کو راجستھان کی علامت قرار دیا جاتا تھا۔ انہوں نے رفاہ عامہ کے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ گایتری دیوی نے راجستھان ميں پہلا پبلک اسکول کھلوایا جبکہ عورتوں کو پردے سے باہر نکالنے کا راستہ دکھایا اور خود مردوں کے درمیان میں ٹینس کھلینے نکلیں۔ یہ وہ دور تھا جب خواتین اکثر پردے میں رہا کرتی تھیں۔ اس کے علاوہ اپنے شوہر کی طرح انہيں بھی پولو کھیلنے کا شوق تھا۔ پولو کے سبب ہی انہوں نے جے پور کو پوری دنیا ميں مقبول بنایا۔ اکثر یورپی ممالک کے شاہی خاندان بھی گایتری دیوی سے دیرینہ تعلق رکھتے تھے۔ 29 جولائی 2009ء کو جے پور میں ان کا انتقال ہوا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/cgi-bin/fg.cgi?page=gr&GRid=40036151 — بنام: Gayatri Devi — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  2. ^ ا ب Babelio author ID: https://www.babelio.com/auteur/wd/260923 — بنام: Gayatri Devi — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. http://articles.timesofindia.indiatimes.com/2009-07-30/india/28157766_1_rajmata-gayatri-devi-jai-maharani
  4. ربط : https://d-nb.info/gnd/120675218  — اخذ شدہ بتاریخ: 31 دسمبر 2014 — اجازت نامہ: CC0
  5. Identifiants et Référentiels — اخذ شدہ بتاریخ: 11 مئی 2020 — ناشر: Bibliographic Agency for Higher Education