ادھو ٹھاکرے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ادھو ٹھاکرے
تفصیل=

انیسویں وزیر اعلی مہاراشٹر
آغاز منصب
28 نومبر 2019
گورنر
Fleche-defaut-droite-gris-32.png دیویندر فرنویس
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
شیو سینا
آغاز منصب
23 جنوری 2013
Fleche-defaut-droite-gris-32.png بال ٹھاکرے
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
مدیر اعلیٰ، سامنا
آغاز منصب
جون 2006
Fleche-defaut-droite-gris-32.png بال ٹھاکرے
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 27 جولا‎ئی 1960 (60 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ممبئی  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش Matoshree, باندرہ, ممبئی, مہاراشٹر, بھارت
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت شیو سینا  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد 2 (بشمول آدتیہ ٹھاکرے)
والد بال ٹھاکرے  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

اُدھوَ ٹھاکرے (ولادت 27 جولائی 1960ء) ایک بھارتی سیاست دان جو مہاراشٹر کے موجودہ وزیر اعلیٰ ہیں۔ وہ مراٹھی اور ہندو شدت پسند سیاسی جماعت شیو سینا کے صدر ہیں۔ وہ شیو سینا کے بانی اور سابق صدت بال ٹھاکرے کے بیٹے ہیں۔[1]

ابتدائی ایام میں وہ ہندو (ایک مراٹھی اخبار) کی ذمہ داری سنبھالتے تھے اور ساتھ سیاست میں بھی فعال تھے۔ وہ انتخابات کی سرگرمیوں اور تیاریوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے تھے۔ ان کی پارٹی نے بریہان ممبئی میونسپل کارپوریشن کا انتخاب 2002ء میں جیتا اور اس کے معا بعد 2003ء میں انہیں پارٹی کا فعال صدر نامزد کر دیا گیا۔ کسی زمانہ میں تھاکرے خاندان اور شیو سینا کے سابق لیڈر ناراین رانے کے درمیان میں اختلاف ہو گیا اور اس کی وجہ سے رانے کو پارٹی سے برطرف کر دیا گیا۔ اس کے بعد ادھو ٹھاکرے کا اپنے ہی چچا زاد بھائی اور سیاست دان راج ٹھاکرے سے جھگڑا ہو گیا اور بات اتنی بڑھ گئی کہ 2006ء میں راج ٹھاکرے نے شیو سینا چھوڑ دی اوی اپنی ایک نئی سیاست جماعت مہاراشٹر نو نرمان سینا تشکیل دی۔[2]

ذاتی زندگی[ترمیم]

ادھو کی شادی رشمی سے ہوئی۔ دونوں کے یہاں دو بیٹوں کی ولادت ہوئی، آدتیہ ٹھاکرے اور تیجس۔[3] آدتیہ ٹھاکرے بھی اب سیاست دان ہیں اور 2019ء کے مہاراشٹر اسمبلی انتخابات میں وہ ایم ایل اے منتخب ہوئے ہیں۔

آدتیہ ٹھاکرے یووا سینا کے صدر ہیں۔ یووا سینا شیو سینا کی اسٹوڈنٹ ونگ ہے۔ تیجس فی الحال بفلو سٹی، نیو یارک میں زیر تعلیم ہیں۔ تیجس کو اپنے بڑے بھائی اور والد کی طرح سیاست کا اتنا شوق نہیں ہے۔ 16 جولائی 2012ء کو ادھو ٹھاکرے کو سینہ میں درد کی وجہ سے ممبئی لیلا وتی ہسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں ان کی انتڑیوں کا آپریشن ہوا۔[4]

ادھو کو مصوری کا بہت شوق ہے۔ انہوں نے مہاراشٹر کے کئی قلعوں کی آسمانی تصویر کشی کی ہے جنہیں جہانگیر آرٹ گیلری میں 2004ء میں نمائش کے لیے رکھا گیا تھا۔[5][6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "How A Murder Case Led To Raj Thackeray's Exit From Shiv Sena". HuffPost India (بزبان انگریزی). 25 ستمبر 2019. اخذ شدہ بتاریخ 8 نومبر 2019. 
  2. "How A Murder Case Led To Raj Thackeray's Exit From Shiv Sena". HuffPost India (بزبان انگریزی). 25 ستمبر 2019. اخذ شدہ بتاریخ 8 نومبر 2019. 
  3. "Uddhav مئی Shift to New House After LS Elections". دی انڈین ایکسپریس. Mumbai. 9 اپریل 2014. اخذ شدہ بتاریخ 25 اپریل 2014. 
  4. "Shiv Sena leader Uddhav Thackeray discharged from hospital". 23 جولائی 2012. 
  5. "Thackeray's new conquest". انڈیا ٹوڈے. Mumbai. 26 جنوری 2004. اخذ شدہ بتاریخ 25 اپریل 2014.  Check date values in: |access-date=, |date= (معاونت)
  6. Vijapurkar, Mahesh (14 جنوری 2004). "Uddhav Thackeray and those scenic forts". دی ہندو. اخذ شدہ بتاریخ 25 اپریل 2014.