اصمعی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اصمعی
(عربی میں: عبد الملك ابن قريب الباهلي الأصمعي ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 740  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بصرہ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 828 (87–88 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بصرہ  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش عراق
نسل عرب
مذہب اسلام
عملی زندگی
استاذ ابو عمرو بصری، شعبہ بن الحجاج
تلمیذ خاص ابو الفضل الرياشی  ویکی ڈیٹا پر (P802) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ماہرِ علم اللسان،  ماہر نباتیات  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان عربی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل شاعری،  لسانيات،  اشتقاقیات  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابو سعید عبد الملک بن قریب باہلی اصمعی عرب کے ایک نامور ادیب تھے۔ اصمعی بصرہ میں پیدا ہوئے اور تعلیم بھی یہیں حاصل کی۔ بصرہ کے علما سے استفادہ کرنے کے علاوہ قبائل عرب کے ساتھ رہ کر ان سے لغات، اشعار اور اخبار کا بے پایاں ذخیرہ جمع کیا اور اسے رسائل کی صورت میں مدون کیا۔ اصمعی بالخصوص عربی لغت کا بے نظیر ماہر تھا۔ خلیفہ ہارون الرشید نے اسے بغداد میں طلب کرکے اپنے بیٹے امین الرشید کا اتالیق مقرر کیا۔ اصمعی نے قدیم شعرائے عرب کا جو کلام جمع کیا وہ اصمعیات کے عنوان سے شائع ہو چکا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]