الطاف علی بریلوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
الطاف علی بریلوی
الطاف علی بریلوی

معلومات شخصیت
پیدائش 10 جولا‎ئی 1905  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
بریلی،  برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 24 ستمبر 1986 (81 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
کراچی،  پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
مدفن سخی حسن،  کراچی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام دفن (P119) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ صحافی،  ماہر تعلیم،  ادیب  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان اردو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
شعبۂ عمل پاکستان میں تعلیم،  سوانح،  ادارت،  خاکہ نگاری  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شعبۂ عمل (P101) ویکی ڈیٹا پر
تحریک تحریک پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تحریک (P135) ویکی ڈیٹا پر
P literature.svg باب ادب

سید الطاف علی بریلوی (پیدائش: 10 جولائی، 1905ء - وفات: 24 ستمبر، 1986ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے ادیب، صحافی، ماہر تعلیم اور تحریک پاکستان کے کارکن تھے۔ سر سید احمد خان کی قائم کردہ آل انڈیا ایجوکیشنل کانفرنس کی پاکستان میں شاخ آل پاکستان ایجوکیشنل کانفرنس کے نام سے قائم کی۔ انہوں نے نے تعلیم کے شعبے میں ناقابلِ فراموش خدمات انجام دیں اور کراچی میں سر سید گورنمنٹ گرلز کالج قائم کیا۔

حالات زندگی[ترمیم]

الطاف علی بریلوی 10 جولائی، 1905 میں بریلی، اترپردیش، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے تھے۔ 1935ء میں انہوں نے سر سید احمد خان کی قائم کردہ آل انڈیا ایجوکیشنل کانفرنس سے بطور آفس سیکریٹری اپنی عملی زندگی کا آغاز کیا۔ تقسیم ہند کے بعد انہوں نے کراچی میں اس ادارے کی پاکستان میں شاخ قائم کی اور اس کے زیر اہتمام سر سید گرلز کالج قائم کیا۔ انہوں نے ایک علمی اور ادبی سہ ماہی جریدہ العلم بھی جاری کیااور متعدد کتابیں بھی تحریر کیں جن میں حیات حافظ رحمت خان، چند محسن چند دوست، مقالات بریلوی،علی گڑھ تحریک: قومی نظمیں، طالب علم کی ڈائری اور مسلمانوں کی تعلیمی جدوجہد قابلِ ذکر ہیں۔[2]

تصانیف[ترمیم]

  • طالب علم کی ڈائری
  • حیات حافظ رحمت خاں
  • مسلمانوں کی تعلیمی جدوجہد
  • مسلمان کی دنیا
  • چند محسن چند دوست
  • تعلیم و تعلیم
  • علی گڑھ تحریک اور قومی نظمیں
  • تعلیمی مسائل-پس منظر و پیش منظر
  • راہی اور راہ نما
  • نامہ ہائے صدق و صَفا
  • حاصل مطالعہ
  • مقالات بریلوی
  • تخلیقات و نگارشات

وفات[ترمیم]

الطاف علی بریلوی 24 ستمبر، 1986ء کو کراچی، پاکستان میں وفات پاگئے۔ وہ کراچی میں سخی حسن کے قبرستان میں سپردِ خاک ہیں۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. رؤف پاریکھ (19 ستمبر 2017ء)۔ "سید الطاف علی بریلوی: ایجوکیٹنگ دی نیشن"۔ ڈان۔ کراچی، پاکستان۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 ستمبر 2017ء۔
  2. ^ ا ب عقیل عباس جعفری: پاکستان کرونیکل، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء، ص 603