اپ مین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اِپ مین
叶问
Yip Man.jpg
اِپ مین
پیدائشاِپ کائی-مین (葉繼問)
1 اکتوبر 1893(1893-10-01)
فوشان، گوانگڈونگ، چنگ چین
وفات2 دسمبر 1972(1972-12-20) (عمر  79 سال)
مونگ کوک، کولون، برطانوی ہانگ کانگ[1]
مقامی نام叶问
دیگر نامیِپ مین
یِپ کائی مین
یے وین
رہائشبرطانوی ہانگ کانگ
نسلیتچینی
اندازونگ چن
استادچین واہ شن
این چنگ-سوک
لیانگ بیک
درجہگرینڈ ماسٹر
فعال سال1916–1972
پیشہمارشل آرٹسٹ
شریک حیاتچیانگ وینگ-سینگ (شادی. 1916; وفات. 1960)
شنگھائی پو (1955–1968)
اولاد
  • اپ چن (بیٹا)
  • اپ چنگ (بیٹا)
  • اپ نا-سم (بیٹی)
  • اپ نا-وُن (بیٹی)
  • اپ سو-وا (بیٹا)، شنگھائی پو سے
قابل ذکر رشتہ داراپ اوئی-ڈور (باپ)
ان شوئی (ماں)
قابل ذکر طلبابروس لی
لیانگ شیانگ
وانگ شن لیانگ
اپ چن
اپ چنگ
وکٹر کین
ولیم شیانگ
موئے یاٹ
لو من کم
قابل ذکر کلبونگ سون ایتھلیٹک ایسوسی ایشن
اپ مین
Ip Man (Chinese characters).svg
"اِپ مین" روایتی (اوپر) اور آسان (نیچے) چینی حروف میں۔
روایتی چینی 葉問
سادہ چینی 叶问
Ip Kai-man
روایتی چینی 葉繼問
سادہ چینی 叶继问

اِپ مین، نیز معروف بَہ یِپ مین،[2] (چینی: 葉問 / 叶问; 1 اکتوبر 1893ء – 2 دسمبر 1972ء) ایک چینی مارشل آرٹسٹ اور مارشل آرٹ ونگ چن کے گرینڈ ماسٹر تھے۔ اس کے کئی شاگرد تھے، جو بعد میں مارشل آرٹس کے ماسٹر بنے، ان میں سب سے مشہور بروس لی تھے۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

اِپ مین اِپ کائی مین (葉繼問) کے طور پر فیٹا (葉靄多) اور ان شوئی (吴瑞) کے یہاں چار بچوں میں تیسرے کے طور پر پیدا ہوئے تھے۔ وہ فوشان، گوانگڈونگ کے ایک امیر گھرانے میں پلا بڑھے، اور اپنے بڑے بھائی اِپ کائی گاک (葉繼格)، بڑی بہن اِپ وان می (葉允媚) اور چھوٹی بہن بہن اِپ وان ہم (葉允堪) کے ساتھ روایتی چینی تعلیم حاصل کی۔[3]

اِپ نے 9[4] یا 13 سال کی عمر میں چین واہ شن سے ونگ چن سیکھنا شروع کیا۔[5][6] چین اس وقت 57 سال کے تھے، اور اِپ؛ چین کے 16 ویں اور آخری شاگرد بنے۔[7][8] چین اپنی عمر کی وجہ سے 1909ء میں ہلکے فالج کا شکار ہونے اور اپنے گاؤں میں ریٹائر ہونے سے پہلے اِپ کو صرف تین سال تک تربیت دینے میں کامیاب رہے۔ اِپ نے اپنی زیادہ تر مہارت اور تکنیک چن کے دوسرے سب سے سینئر شاگرد این چنگ سوک (吳仲素) سے سیکھی۔[9]

16 سال کی عمر میں اپنے رشتہ دار لیونگ فوٹ ٹنگ کی مدد سے اِپ؛ ہانگ کانگ چلے گئے اور وہاں انھوں نے سینٹ اسٹیفن کالج؛ جو کہ امیر خاندانوں اور ہانگ کانگ میں رہنے والے غیر ملکیوں کے لیے ایک سیکنڈری اسکول ہے، میں اسکول میں تعلیم حاصل کی۔[3] ہانگ کانگ جانے کے چھ ماہ بعد؛ اِپ کے لائی نامی ایک درسی ساتھی (کلاس میٹ) نے انھیں بتایا کہ لائی کے والد کا ایک دوست جو کنگ فو کی تکنیکوں کا ماہر تھا، ان کے ساتھ رہ رہا تھا، اور اس نے اِپ کے ساتھ دوستانہ فائٹ (تکنیکی لڑائی) کرنے کی پیشکش کی تھی۔ اس وقت اِپ ناقابل شکست تھے لہذا انھوں نے چیلنج کو بے تابی سے قبول کیا۔ وہ اتوار کی دوپہر لائی کے گھر گیا اور مختصر خوشگوار تبادلے کے بعد اس شخص کو دو شخصی فائٹ کا چیلنج دیا۔ وہ آدمی لیانگ بیک تھا اور اس نے آسانی سے آئی پی مین کو زیر کیا۔ جس رفتار سے اس کا مقابلہ کیا گیا تھا اس پر ناقابل یقین اِپ نے دوسری لڑائی کی درخواست کی اور انھیں دوبارہ بالکل اسی طرح شکست ہوئی۔ اپنی شکست سے مایوس ہوکر اِپ بغیر کسی لفظ کے چلے گئے اور بعد میں اس قدر افسردہ ہوئے کہ انھوں نے یہ ذکر کرنے کی ہمت نہیں کی کہ وہ کنگ فو جانتے ہیں۔ ایک ہفتے بعد؛ لائی نے اِپ کو بتایا کہ جس آدمی سے ان کی لڑائی ہوئی تھی وہ ان کے پیچھے ان کے بارے ميں پوچھ رہے تھے۔ آئی پی نے جواب دیا کہ وہ واپس آنے کے لیے بہت شرمندہ تھا ، اس موقع پر لائی نے اسے بتایا کہ لیانگ بیک نے اس کی کنگ فو تکنیک کی بہت تعریف کی ہے اور وہ لیانگ جین کا بیٹا ہے، جنھوں نے اِپ کے ماسٹر چین واہ شن کو تربیت دی۔ اِپ نے لیانگ بیک سے ٹریننگ لی،[10] 1911 میں لیانگ کی وفات تک۔[11]

اِپ 1916ء میں فوشان واپس آئے جب وہ 24 سال کے تھے اور وہاں قومی حکومت کے لیے پولیس افسر بن گئے۔[3] اس نے اپنے کئی ماتحتوں، دوستوں اور رشتہ داروں کو ونگ چن سکھایا؛ لیکن سرکاری طور پر مارشل آرٹس سکول نہیں چلایا۔

انھوں نے چیانگ ونگ سنگ سے شادی کی اور ان سے کئی بچے تھے: بیٹوں میں اپ چن اور اپ چنگ اور بیٹیوں میں اپ این سم (葉雅心) اور اپ این ون (葉雅媛[12]

اِپ کومنتانگ کے رکن تھے، اور افواہوں کے مطابق؛ وہ 1938ء میں گوئیژو میں اس کی اکیڈمی میں سنٹرل بیورو آف انویسٹیگیشن اینڈ اسٹیٹسٹکس میں شامل ہوئے، جس کے بعد وہ ایک خفیہ انٹیلی جنس افسر کے طور پر فوشان واپس آئے۔ تاہم اس کی صداقت متنازعہ ہے۔[13]

اِپ دوسری چین-جاپانی جنگ کے دوران کوک فو کے ساتھ رہنے گئے اور جنگ کے بعد فوشان واپس آئے، جہاں انھوں نے بطور پولیس افسر اپنا کیریئر دوبارہ شروع کیا۔ اِپ کو سال 1949ء کے دوران اپنے دوسرے بیٹے اِپ چنگ کی تربیت کے لیے کچھ وقت ملا۔ چینی کمیونسٹ پارٹی کی طرف سے چینی خانہ جنگی جیتنے کے بعد 1949ء کے اختتام پر، جیسا کہ اِپ کومنتانگ کے رکن تھے؛ اِپ، ان کی اہلیہ اور ان کی بڑی بیٹی اِپ این سم؛ فوشان چھوڑ کر ہانگ کانگ منتقل ہوگئے۔[14]

ہانگ کانگ کی زندگی[ترمیم]

اِپ، ان کی بیوی چیانگ اور ان کی بیٹی 1950ء میں مَکاؤ کے ذریعہ ہانگ کانگ پہنچے۔ ان کی بیوی اور بیٹی بعد میں اپنے شناختی کارڈ حاصل کرنے کے لیے فوشان واپس آئیں۔ تاہم 1951ء میں چین اور ہانگ کانگ کے درمیان سرحدوں کی بندش کی وجہ سے؛ اِپ اور ان کی بیوی چیانگ کو پوری طرح سے الگ کر دیا گیا، بعد میں فوشان میں بیوی کی موت تک ٹھہرے رہے۔

ابتدائی طور پر ہانگ کانگ میں اِپ مین کا تدریسی کاروبار ناقص تھا؛ کیوں کہ اِپ کے شاگرد عام طور پر صرف چند مہینوں تک ہی رہتے تھے۔ انھوں نے اپنے اسکول کو دو بار منتقل کیا: پہلے شام شوئی پو میں کیسل پیک روڈ، اور پھر لی ٹاٹ اسٹریٹ (利達街یاؤ ما تی میں۔ تب تک ان کے کچھ طلباء ونگ چن میں مہارت حاصل کر چکے تھے اور وہ اپنے اسکول شروع کرنے کے قابل تھے۔ وہ آگے بڑھتے اور دوسرے مارشل فنکاروں کے ساتھ ان کی مہارت کا موازنہ کرتے اور ان کی فتوحات نے اِپ کی شہرت بڑھانے میں مدد کی۔

1955ء کے قریب ان کی شنگھائی سے ایک غیر شادی شدہ متعلقہ عورت تھی، جسے اں کے شاگردوں نے صرف "شنگھائی پو" (上海婆) کہا تھا۔ اِپ اور اس متعلقہ کا ایک ناجائز بیٹا بھی تھا جس کا نام اِپ سیو واہ (葉少華) تھا۔ اسی درمیان فوشان میں ان کی بیوی چیانگ 1960ء میں کینسر سے مر گئی۔ اِپ نے کبھی بھی اپنی متعلقہ کو اپنے دوسرے بیٹوں سے باضابطہ طور پر متعارف نہیں کرایا، جو بالآخر 1962ء میں اس سے دوبارہ ملنے کے لیے ہانگ کانگ پہنچے۔[15]

1967ء میں اِپ اور ان کے کچھ شاگرد نے ونگ سون (ونگ چن) قائم کیا جسے "ونگ چن" ایتھلیٹک ایسوسی ایشن (詠春體育會) بھی کہا جاتا ہے۔[16][17] ونگ سون ایتھلیٹک ایسوسی ایشن کا بنیادی مقصد اِپ کو ہانگ کانگ میں اپنی مالی مشکلات سے نمٹنے میں مدد کرنا تھا،[18] جو کہ ان کے افیون کے باقاعدہ استعمال کی وجہ سے تھا۔[19] ان کے ایک سابق شاگرد ڈنکن لیونگ نے دعوی کیا کہ اِپ نے اپنی افیون کی لت میں مدد کے لیے ٹیوشن کے پیسے استعمال کیے۔[20] اِپ کی متعلقہ 1968ء میں کینسر سے مر گئی، اور ان کا بیٹا بعد میں اپنے سوتیلے بھائیوں کی طرح ونگ چن پریکٹیشنر (مشق کرنے والا) بن گیا۔

موت و میراث[ترمیم]

ہانگ کانگ میں وو ہاپ شیک پبلک قبرستان میں اِپ مین کی قبر

اِپ کا 2 دسمبر 1972ء کو ہانگ کانگ میں 149 تنگ چوئی اسٹریٹ یونٹ میں انتقال ہوا،[1] لاریجیل کینسر سے، ان کے سب سے مشہور شاگرد بروس لی کی موت سے صرف سات ماہ پہلے۔[21] اسے ہانگ کانگ وو ہاپ شیک میں دفن کیا گیا۔

اِپ کی میراث ونگ چن کی عالمی مشق ہے۔ آئی پی کے قابل ذکر شاگردوں میں شامل ہیں وانگ شن لیانگ، بروس لی، موئے یاٹ، ہو کام منگ، وکٹر کین، ان کا بھتیجا لو من کام اور ولیم چیانگ۔[10] اِپ نے ونگ چون کی تاریخ لکھی۔[22] ان کی زندگی کے بہت سے نوادرات فوشان آبائی مندر کے میدان میں آئی پی مین میوزیم میں آویزاں ہیں۔ اِپ مین کو ان کی زندگی پر مبنی کئی فلموں میں دکھایا گیا ہے۔[23]

مارشل آرٹس کا نسب[ترمیم]

اِپ مین کے مطابق ونگ چن نسب۔[22][24]

انگ موئی (شاؤلین مندر کے پانچ مرشدوں میں سے ایک)
یم ونگ چن (سیلف ڈیفنس کی تکنیک (بعد میں طالب علم کے نام پر) انگ موئی نے سکھائی)[25]
لیونگ بوک چاؤ (یم کا شوہر)
لیونگ لین کوائی
وونگ واہ بو (خالی ہاتھ کے نظام کے بدلے لیونگ یی تائی نے قطب کی شکل سکھائی تھی)
لیونگ یی تائی (خالی ہاتھ کے نظام میں اس کے پول فارم کو شامل کیا جو اس نے وونگ سے سیکھا)
لیونگ جین
چین واہ شن
یپ مین (انگ چنگ-سوک، لیونگ بیک سے بھی سیکھا)
معروف شاگردان: ونگ چن کی شاخیں دیکھیں

میڈیا کی تصویر کَشی[ترمیم]

1976 کی فلم بروس لی: دی مین، دی میتھ میں فنگ جِن مین نے بروس لی کے ونگ چن سیفو (ماسٹر) کے طور پر اِپ مین کا ایک معمولی کردار ادا کیا۔

اِپ مین کو 1993ء میں ان کے ایک شاگرد بروس لی کی زندگی پر مبنی ایک امریکی سوانحی ڈرامہ فلم ڈریگن: دی بروس لی اسٹوری[مردہ ربط] میں وانگ لوئیونگ نے پیش کیا تھا۔[26]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب 影武者‧ 葉問次子葉正專訪 [Exclusive Interview with Ip Man's second son Ip Ching] (بزبان چینی). Ming Pao Weekly Online. 08 ستمبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 18 فروری 2013. 旺角通菜街一百四十九號一個單位內, ... 傳奇的老者在那個單位的一張沙發上遽然離世。 [Translation: ... in a unit at 149 Tung Choi Street, Mong Kok, ... the legendary old man passed away suddenly on a sofa in that unit.] 
  2. Knight، Dan (July 20, 2012). "Ip Man or Yip Man". kwokwingchun.com. 
  3. ^ ا ب پ Title: Yip Man – Portrait of a Kung Fu Master, Page:3, Author(s): Ip Ching and Ron Heimberger, Paperback: 116 pages, Publisher: Cedar Fort (23 January 2001), آئی ایس بی این 978-1-55517-516-0
  4. Title: 116 Wing Tsun Dummy Techniques as demonstrated by Grandmaster Yip Man, Page: 100, Author(s): Yip Chun, Publisher: Leung’s Publications (February 1981)
  5. Title: Wing Tsun Kuen - 19th Edition, Page: 47, Author(s): Leung Ting, Publisher: Leung's Publications (September 2003)
  6. Knight, Dan (11 July 2012). "Sam kwok Wing Chun – Yip Man Family Tree". Kwokwingchun.com. Retrieved 28 October 2019.
  7. Knight، Dan (July 11, 2012). "Sam kwok Wing Chun – Yip Man Family Tree". Kwokwingchun.com. اخذ شدہ بتاریخ 29 نومبر 2011. 
  8. Mastering Wing Chun, By Samuel Kwok
  9. "Lives of Chinese Martial Artists (6): Ng Chung So". Kung Fu Tea. اخذ شدہ بتاریخ July 11, 2020. 
  10. ^ ا ب "An Interview with Grandmaster Yip Man". www.kwokwingchun.com (بزبان انگریزی). January 22, 2014. اخذ شدہ بتاریخ 25 جنوری 2019. 
  11. Ron Heimberger، Ip Ching (2001). Ip Man: Portrait of a Kung Fu Master. Cedar Fort. صفحات 15. ISBN 9781555175160. 
  12. "Wing Chun Kuen". www.wingchun.si. 19 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 جنوری 2019. 
  13. Ken Ing, Wing Chun Warrior: The True Tales of Kung Fu Master Duncan Leung, Bruce Lee’s Fighting Companion, 2009, Blacksmith Books, p. 65
  14. Knight، Dan (20 July 2012). "Ip Man's Biography". Kwokwingchun.com. اخذ شدہ بتاریخ 02 اگست 2018. 
  15. The Creation of Wing Chun. United States: SUNY Press. 2015. صفحہ 247. ISBN 9781438456959. 
  16. Ip Ching, Ip Man: Portrait of a Kung Fu Master (Springville, UT: King Dragon Press, 2001)
  17. Ip Man Wing Chun 50th Anniversary Journal (Hong Kong: Wing Chun Athletic Association Limited, 2005)
  18. "Origin of Ving Tsun". www.vingtsun.org.hk. اخذ شدہ بتاریخ 02 دسمبر 2015. 
  19. Bruce Lee: Fighting Spirit: A Biography, Bruce Thomas, p. 208 "Both Bruce's father and even his wing chun master Yip Man were no strangers to the opium pipe."
  20. Ing، Ken (16 May 2009). "Asia Times Online :: China News, China Business News, Taiwan.". April 2, 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  21. Complete Wing Chun: The Definitive Guide to Wing Chun's History and Traditions, Robert Chu, Rene Ritchie, Y. Wu, page 9, Tuttle Publishing; 1st edition (20 June 1998). آئی ایس بی این 0-8048-3141-6, آئی ایس بی این 978-0-8048-3141-3.
  22. ^ ا ب "external copy of the History of Wing Chun Written by Yip Man". Vingtsun.com.hk. اخذ شدہ بتاریخ 29 نومبر 2011. 
  23. "Ip Man tong virtual tour". Foshanmuseum.com. 28 نومبر 2011 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 29 نومبر 2011. 
  24. Ip Man. "The Origin Of Wing Chun". Martial Arts & Self Defence London. Southfields Wing Chun London. 24 جولا‎ئی 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 29 نومبر 2011. 
  25. "Wing Chun Academy: Ng Mui". 01 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ July 11, 2020. 
  26. "Ip Man (Character)". IMDb. 25 دسمبر 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 فروری 2011. TV episode, Played by Cheng-Hui Yu (as Ye Wen)