بٹ کوئن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
بٹ کوئن
Bitcoin logo.svg
بٹ کوئن کا عمومی لوگو[1]
نام اور قیمت
ذیلی اکائی
 ۔00000001 ستوشی[2]
علامت BTC, XBT,[3] BitcoinSign.svg، ฿[4][5]
آبادیات
تاریخ اجرا 3 جنوری 2009 (2009-01-03)
صارفین بین الاقوامی
اجرا
بہی کھاتہ معاملات کی تصدیق اور حفاظت پیئر ٹو پیئر نیٹورک کے ذریعہ کی جاتی ہے۔[6]
مقررہ قیمت
Issuance پچیس بٹ کوئن ہر دس منٹ میں
 ماخذ تمام بٹ کوئن سرکولیشن میں
 قاعدہ 21 ملین بٹ کوئنز ہونے تک ہر چار سال میں تمام نئے بٹ کوئن کا تخلیقی ریٹ نصف ہوتا جائے گا[7]:17 - اس وقت ہر نئے بلاک کے ساتھ (تقریباً ہر دس منٹ میں) پچیس نئے بٹ کوئنز بن رہے ہیں۔

بٹ کوئن (انگریزی: bitcoin) ایک ڈیجیٹل کرنسی اور پیئر ٹو پیئر پیمنٹ نیٹورک ہے جو آزاد مصدر دستور پر مبنی ہے[8] اور عوامی نوشتہ سودا کا استعمال کرتی ہے۔ بٹ کوئن کمانے یا حاصل کرنے میں کسی شخص یا کسی بینک کا کوئی اختیار نہیں۔ یہ مکمل آزاد کر نسی ہے، جس کو ہم اپنے کمپیوٹر کی مدد سے بھی خود بنا سکتے ہیں۔
بٹ کوئن کرنسی کا دیگر رائج کرنسیوں مثلا ڈالر اور یورو سے موازنہ کیا جاسکتا ہے، لیکن رائج کرنسیوں اور بٹ کوئن میں کچھ فرق ہے۔
سب سے اہم فرق یہ ہے کہ بٹ کوئن مکمل طور پر ایک ڈیجیٹل کرنسی ہے جس کا وجود محض انٹرنیٹ تک محدود ہے، خارجی طور پر اس کا کوئی جسمانی وجود نہیں۔ اسی طرح بٹ کوئن کرنسی کے پیچھے کوئی طاقتور مرکزی ادارہ مثلا مرکزی بینک نہیں ہے اور نہ ہی کسی حکومت نے اب تک اسے جائز کرنسی قرار دیا ہے، اسی وجہ سے ریاستہائے متحدہ امریکا کے وزارت خزانہ نے اسے غیر مرکزی کرنسی (decentralized currency) قرار دیا ہے[9] ،کیونکہ اس کرنسی کو ایک شخص براہ راست دوسرے شخص کو منتقل کرسکتا ہے، اس کے لیے کسی بینک یا حکومتی ادارہ کی ضرورت نہیں ہوتی۔ تاہم انٹرنیٹ کے ذریعہ بٹ کوئن کو دیگر رائج کرنسیوں کی طرح ہی استعمال کیا جاسکتا ہے۔
بٹ کوئن کا آغاز 2009ء میں کازب‌نام ستوشی ناکاماتو نے کیا۔[10] اسے کرپٹوکرنسی کہتے ہیں کیونکہ یہ پبلک کی کرپٹوگرافی کے اصولوں پر مبنی ہے۔ [11]
یہ کرنسی حسابی عمل لوگرتھم کی بنیاد پر کام کرتی ہے،جس کے لئے کمپیوٹر کو انٹر نیٹ سے منسلک کر کے، کمپیوٹر کے پروسیسر سے کام لیا جاتا ہے۔ جس کمپیوٹر کا پروسیسر جتنا طاقتور ہوتا ہے، اتنی جلد وہ حسابی عمل لوگرتھم کا سوال حل کرکے بٹ کوائن بناتا ہے۔
بٹ کوئن خاصی تحقیق وتجسس کا موضوع بھی رہا ہے، کیونکہ کرپٹوگرافی کرنسی ہونے کی وجہ سے اس کے مالکان اور صارفین پتہ لگانا خاصا مشکل ہے، اس وجہ سے اس کا غیر قانونی استعمال بھی کیا جاسکتا ہے۔ 2013ء میں غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ویب سائٹ سلک روڈ کو امریکی ایف بی آئی نے بند، اور 144٫000 بٹ کوئنز کو منجمد کردیا، اس وقت اس کی قیمت 28.5 ملین ڈالرز تھی۔[12] جبکہ امریکی حکومت بٹ کوئن کے معاملہ میں دیگر حکومتوں سے زیادہ فراخ دلی سے کام لیتی ہے۔[13] چین میں یوان کے ساتھ بٹ کوئن کی فروخت پر پابندی ہے، نیز بٹ کوئن منڈیاں (exchanges) کے لیے بینک اکاؤنٹ رکھنے کی اجازت نہیں۔

کرپٹوکرنسی[ترمیم]

بٹ کوئن کو ایک کرپٹوکرنسی (انگریزی: cryptocurrency) سمجھا جاتا ہے، اس کا مفہوم یہ ہے کہ یہ کرنسی بنیادی طور پر رازداری کے اصولوں کو ملحوظ رکھتی ہے۔ نیز اسے اپنی نوعیت کی واحد کرنسی سمجھا جاتا ہے، لیکن درحقیقت اس طرح کی کم از کم 60 کرپٹوکرنسیاں انٹرنیٹ پر موجود ہیں، جن میں سے 6 کرنسیاں اصل ہیں۔ چونکہ بٹ کوئن ایک آزاد مصدر کرنسی ہے، اس لیے اس کی نقل اور اس میں کچھ اصلاحات کرکے دوسری نئی کرنسی بنائی جاسکتی ہے، اس لیے اس وقت موجود تمام کرپٹوکرنسیاں باستثناء رپل (انگریزی: Ripple) [14] بٹ کوئن کی طرح ہی کام کرتی ہیں۔

بلوک چین[ترمیم]

بلوک چین (block chain) ایک نئی طرح کا انٹرنیٹ ہے جس میں ڈیجیٹل معلومات ہر ایک دیکھ سکتا ہے مگر اسے کاپی نہیں کر سکتا۔ ہر دس منٹ میں ہونے والی لین دین (transaction) کا ریکارڈ چیک کر کے محفوظ کر دیا جاتا ہے جسے بلوک کہتے ہیں۔ سارا ڈاٹا نیٹ ورک پر ہوتا ہے اس لئے ہر ایک اسے دیکھ سکتا ہے۔[15]

امریکہ میں بٹ کوائن[ترمیم]

جولائی 2017 کی ابتدا میں امریکی Commodity Futures Trading Commission نے بٹ کوائن کو Swap Execution Facility عطا کر دی ہے جس کا مطلب ہے کہ اب بٹ کوائن کی options trading ہو سکے گی۔[16]

اقتباس[ترمیم]

  • "ہم اس دعوے سے متفق نہیں ہیں کہ سونے کی طرح بٹ کوائن بھی کاونٹر پارٹی رسک سے آزاد ہے۔ ایتھریئم بھی ایک نوزائیدہ کرپٹو کرنسی ہے اور جیسا کہ ہم نے دیکھا کہ یہ مجازی کرنسیاں بالآخر ایک ماسٹر کوڈ کے تابع ہوتی ہیں۔ایتھریئم کے معاملے میں یہ چابی ایک کونسل کے پاس ہے جو مستقبل میں اس کرنسی کا انفلیشن ریٹ طے کرے گی۔ بٹ کوائن کو کنٹرول کرنے کی چابی Gavin Andresen کے پاس ہے جو Massachusetts کا ایک انجینیئر ہے۔ اس بات کی کوئی گارنٹی نہیں ہے کہ وہ مستقبل میں بٹ کوائن کے بلوک چین کے ضابطوں کو تبدیل نہیں کریں گے "
Another claim we don’t agree with is that Bitcoin is as free of counter-party risk as gold. What we have seen with Ethereum, another nascent cryptocurrency, is that these virtual currencies ultimately have a master key. With Ethereum, that key is controlled by a council that decides its future inflation rate; with Bitcoin, that key is controlled by Gavin Andresen, an engineer based in Massachusetts. There’s no guarantee that they won’t change the source code for the Bitcoin blockchain in the future[17]
  • بٹ کوائن کا مطلب حکومتی کرنسی کی موت ہے۔ اس کا مطلب خود حکومت کی موت ہے۔ (یعنی بٹ کوائن کنٹرول کرنے والے بینکار اب دنیا پر حکومت کریں گے۔)
Bitcoin means the final death of government fiat money. It means the end of Big Government.[18]
  • بٹ کوائن کو مقبول بنانے کے لئے مختلف ممالک میں کرنسی کرائسس پیدا کیئے جا رہے ہیں۔ مثال کے طور پر جب انڈیا کی حکومت نے بڑی مالیت کے کرنسی نوٹ منسوخ کر دیئے تو کرپٹو کرنسی کی مانگ میں یکدم زبردست اضافہ ہوا۔ اسی طرح جب وینیزویلا میں افراط زر میں اضافہ ہوا تو بٹ کوائن کی طلب میں بھی اضافہ ہوا۔ اور یہ بھی ممکن ہے کہ بینک آف جاپان کی منفی شرح سود کی پالیسی نے بٹ کوائن کے استعمال کو اس قدر عام کر دیا کہ جاپان میں یہ قانونی کرنسی کے طور پر قبول کی جاتی ہے۔
For example, when the Indian government banned the use of their largest bank notes, demand for crypto-currency accelerated dramatically in the country. Similarly, as crippling inflation grew in Venezuela, so did the appeal of Bitcoin. It’s also possible that the Bank of Japan’s negative interest rate policy played a role in Bitcoin use becoming so common that the country now accepts it as a form of legal payment.[19]


  • "بٹ کوائن کی قیمت ایک ہفتے میں 30 فیصد گر چکی تھی۔ لیکن بھارتی حکومت نے اسے قانونی کرنسی تسلیم کر کے اس کی قیمت 33 فیصد بڑھا دی"[20]
  • "بٹ کوائن بنیادی طور پر (جعلی) کرنسی ہے جبکہ سونا بنیادی طور پر (حقیقی) بچت ہے۔"
bitcoin is more the cash, whilst gold is more the savings.[21]
  • "Nothing comes from nothing. Fake money produces fake prosperity. Take away the fake money… and the fake prosperity goes “poof,” too."[22]
  • "the virtual is not an adequate substitute for the authentic"[23]
  • بٹ کوائن کی حقیقی طلب اس وقت پتہ چلے گی جب عالمی مالیاتی کرائسس سینٹرل بینکنگ اور کیپیٹل کنٹرول کی سیاست پر اعتماد ختم کر دے گا۔[24]

مزید دیکھیے[ترمیم]

بیرونی ربط[ترمیم]


حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Bitcoin Graphics in Vector Format (Illustrator)". 
  2. "Cracking the Bitcoin: Digging Into a $131M USD Virtual Currency". ڈیلی ٹیک. 12 جوان 2011. وثق شدہ اصل جمع شدہ20 جنوری 2013 کو. اخذ کردہ بتاریخ 30 ستمبر 2012. 
  3. Jon Matonis (17 ستمبر 2013). "Bitcoin gaining market-based legitimacy as XBT". Coindesk. اخذ کردہ بتاریخ 14 دسمبر 2013. 
  4. Matonis، Jon (22 جنوری 2013). "Bitcoin Casinos Release 2012 Earnings". Forbes (New York). Archived from the original on 16 فروری 2013. http://archive.is/JHWHM. "Responsible for more than 50% of daily network volume on the Bitcoin blockchain, SatoshiDice reported first year earnings from wagering at an impressive ฿33٫310." 
  5. This also is the baht symbol
  6. Barber, Simon; Boyen, Xavier; Shi, Elaine and Uzun, Esrin (2012). "Bitter to Better – how to make Bitcoin a better currency". Financial Cryptography and Data Security. کمپیوٹر سائنس میں لیکچر نوٹس (Springer) 7397: 399. doi:10.1007/978-3-642-32946-3_29. آئی ایس بی این 978-3-642-32945-6. http://crypto.stanford.edu/~xb/fc12/bitcoin.pdf. 
  7. Ron Dorit؛ Adi Shamir (2012). "Quantitative Analysis of the Full Bitcoin Transaction Graph". Cryptology ePrint Archive. اخذ کردہ بتاریخ 18 اکتوبر 2012. 
  8. https://github.com/bitcoin/bitcoin
  9. "Bitcoin Goes To Washington, Senate To Hold Hearing On Virtual Currencies". International Business Times. 18 نومبر 2013. اخذ کردہ بتاریخ 3 اپریل 2014. 
  10. جوشوا ڈیویس (10 اکتوبر 2011). "کرپٹوکرنسی". دی نیو یارکر. اخذ کردہ بتاریخ 19 نومبر 2013. 
  11. بٹ کوئن پر نظر؟ دیگر کچھ کرپٹوکرنسیوں کا تعارف، آرس ٹیکنیکا، 26 مئی 2013
  12. Andy Greenberg (23 اکتوبر 2013). "FBI Says It's Seized $28.5 Million In Bitcoins From Ross Ulbricht, Alleged Owner Of Silk Road" (blog). Forbes.com. http://www.forbes.com/sites/andygreenberg/2013/10/25/fbi-says-its-seized-20-million-in-bitcoins-from-ross-ulbricht-alleged-owner-of-silk-road/۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 نومبر 2013. 
  13. Peterson, Andrea (27 جنوری 2014). "This map shows which countries are friendly to Bitcoin". The Switch (The Washington Post). http://www.washingtonpost.com/blogs/the-switch/wp/2014/01/27/this-map-shows-which-countries-are-friendly-to-bitcoin/۔ اخذ کردہ بتاریخ 28 جنوری 2014. 
  14. https://ripple.com/
  15. What is Blockchain Technology? A Step-by-Step Guide For Beginners
  16. CFTC Approves Options Trading In Bitcoin
  17. Is A Bitcoin "As Good As Gold"?
  18. [1]
  19. How Washington's Reaction To Trump's Budget Justifies The Rise Of Bitcoin
  20. Bitcoin Surges Back Above $2700 As India "Legalizes" Cryptocurrency
  21. What's going on with bitcoin?
  22. How Dumb Is The Fed?
  23. America 2017 = France 1789
  24. What The Mainstream Doesn't Get About Bitcoin

بیرونی روابط[ترمیم]