عبد العزیز فلک پیما

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عبد العزیز فلک پیما
پیدائش میاں عبد العزیز
جنوری، 1881ء

لاہور، صوبہ پنجاب (برطانوی ہند)
وفات مئی 7، 1951(1951-05-07)ء

لاہور، پاکستان
آخری آرام گاہ میانی صاحب قبرستان، لاہور
قلمی نام فلک پیما
پیشہ ادیب، سیاستدان
زبان اردو
نسل پنجابی
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
اصناف مضمون
نمایاں کام فلک پیما
فلک پیمائیاں
آسمان اور آنسو

عبد العزیز فلک پیما (پیدائش: جنوری، 1881ء - وفات: 7 مئی، 1951ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے ممتاز ادیب اور سیاست دان تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

عبد العزیز فلک پیما جنوری، 1881ء کو لاہور، صوبہ پنجاب (برطانوی ہند) میں پیدا ہوئے۔ پہلے گورنمنت کالج لاہور میں استاد مقرر ہوئے اور پھر مجلس قانون ساز کے رکن رہے، اکتوبر 1930ء میں گول میز کانفرنس کے سیکریٹری کی حیثیت ے فرائض انجام دیے۔ عبد العزیز فلک پیما نے ریاست جے پور اور ریاست کپور تھلہ میں وزیر مال کے مناصب پر فرائض انجام دیے، تقسیم ہند کے بعد وہ حکومت پاکستان اور حکومت پنجاب کے مختلف عہدوں پر فائز رہے۔[1]

ادبی خدمات[ترمیم]

عبد العزیز فلک پیما فلسفہ سے خاص دلچسپی رکھتے تھے۔ 1922ء میں انہوں نے جریدے ہمایوں سے اپنی قلمی سفر کا آغاز کیا اور پھر ہندوستان بھر کے جرائد میں ان کے مضامین شائع ہونے لگے۔ فلک پیما ان کا قلمی نام تھا جو بعد ازاں ان کے نام کا جزو بن گیا۔[1]

تصانیف[ترمیم]

ان کے مضامین فلک پیما، فلک پیمائیاں اور آسمان اور آنسو کے نام سے شائع ہوچکے ہیں۔[1]

وفات[ترمیم]

عبد العزیز فلک پیما 7 مئی، 1951 میں وفات پاگئے۔ وہ میانی صاحب قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت عقیل عباس جعفری: پاکستان کرونیکل، ص 61، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء