صوبہ پنجاب (برطانوی ہند)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پنجاب
برطانوی مستعمر
1849–1947
Coat of arms of پنجاب
Coat of arms
British Punjab 1909.svg
برطانوی پنجاب کا نقشہ 1909
تاریخی دورنو سامراجیت
• قیام
1849
• تقسیمِ ہند
14 اگست 1947
آج یہ اس کا حصہ ہے:بھارت اور پاکستان

صوبہ پنجاب 1849 میں برطانوی راج کے دوران برطانوی ہند کا ایک صوبہ تھا۔ ایسٹ انڈیا کمپنی نے پنجاب کی تاریخی عسکری اور دفاعی اہمیت کے بعد کو سمجھتے ہوئے اسے برطانوی ہندوستان میں شامل کیا۔ پنجاب برطانوی ہندوستان میں شامل ہونے والے آخری علاقوں میں سے ایک ہےاس وقت مغلوں کے بعد یہاں پر مہاراجا رنجیت سنگھ کی قائم کی گئیں حکومت تھئ ۔ یہ پانچ ڈویژنوں لاہور، دہلی، جالندھر، راولپنڈی، ملتان اور بہت سی نوابی ریاستوں پر مشتمل تھا۔جن میں قابل ذکر بہاولپور کی ریاست ہے۔

علاقائی بولی پنجابی کا لفظ پنج کا مطلب ہے پانچ اور آب کا مطلب دریا۔ پنجاب یعنی پانچ دریاوں کی سرزمین جو اسے سیراب کرنے والے پانچ دریاوں راوِی، ستلج، جہلم، چناب اور بیاس کی وجہ سے دیا گیا ہےان پانچوں دریاؤں کے نام رگ وید میں بھی درج ہے انڈس ویلی کی دس ہزار سال قبل مسیح کی تاریخ جس کی دریافت شہداء تاریخی مقامات ہڑپہ اور موہنجوداڑو ہیں چندر گپت موریا خاندان کا دور حکومت 550 قبل مسیح کا زمانہ جن کا دار الحکومت ٹیکسلا رہا ہے۔اس ٹیکسلا پر 324 قبل مسیح میں سکندر اعظم نے حملہ کیا اور لڑتا ہوا جل بھگیا چاہا کے راجپوت بادشاہ راجا پورس سے تاریخی جنگ ہوئی جو دریائے جہلم کے کنارے پر تھے۔ 712 میں محمد بن قاسم پنجاب کے جنوبی حصہ ملتان تک آیا جو عربوں کی آمد کا دور تھا۔ تیموری خاندان کے مغل بادشاہوں کے دور حکومت کے بعد مہاراجا رنجیت سنگھ نے پنجاب پر قبضہ کر لیا اور پھر انگریزوں نے اٹھارہ سو انچاس میں اس پر قبضہ کرلیا۔ 1947 کی ہونے والی تقسیم ہند کے نتیجے میں پنجاب کو بھی دو حصوں میں بانٹ دیا گیا: مشرقی پنجاب بھارت کے حصے میں آیا اور مغربی پنجاب پاکستان کے حصے میں آیا۔ موجودہ دور میں اس میں بھارتی پنجاب، چنڈی گڑھ، دہلی، ہریانہ، ہماچل پردیش اور پاکستانی پنجاب، اسلام آباد اور خیبر پختونخوا (1901 تک)شامل ہیں۔

تاریخ[ترمیم]

پنجاب کی تاریخ میں دکھ دور اور 17 سو سے 500 قبل مسیح کے زمانے میں بی اے علاقہ آباد تھا 21 فروری 1849 کو برطانوی افواج نے سکھوں کو گجرات کی لڑائی میں شکست دے دی- برطانیہ کی فتح نے پنجاب کو ایسٹ انڈیا کپمنی کی جھولی میں ڈال دیا- پنجاب 2 اپریل 1849 برطانوی راج کا حصہ بنا - اس خطے نے برطانیہ کو بہت سے فوجی مہیا کیے جنھوں نے بوطانوی سلطنت کو دنیا کے مختلف خطوں میں وسعت دی- 1901 دریائے سندھ پار کے سرحدی علاقوں کو الگ کر کے ایک نیا صوبہ شمال مغربی سرحدی صوبہ تشکیل دیا گیا- جسے آج کل خیبر پختونخوا کہتے ہیں-

انتظامیہ[ترمیم]

class="wikitable "

مزید دیکھیے[ترمیم]