مارتھا جیفرسن رینڈولف

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مارتھا جیفرسن رینڈولف
(انگریزی میں: Martha Jefferson Randolph ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Martha Jefferson Randolph portrait.jpg
 

مناصب
خاتون اول ریاست ہائے متحدہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
4 مارچ 1801  – 4 مارچ 1809 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ابیگیل ایڈمز 
ڈولی ٹوڈ میڈیسن  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 27 ستمبر 1772[1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مونٹیسلو  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 10 اکتوبر 1836 (64 سال)[1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
البیمارل کاؤنٹی، ورجینیا  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن مونٹیسلو قبرستان  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات تھامس مین رینڈولف (23 فروری 1790–)[5][6]  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد تھامس جیفرسن رینڈولف،  جارج ڈبلیو رینڈولف،  ورجینیا جیفرسن رینڈولف ٹرسٹ،  این کیری رینڈولف بینک ہیڈ،  سیپٹیمیا رینڈولف میکلیہم،  بینجمن فرینکلن رینڈولف،  میری ویدر لیوس رینڈولف،  کارنیلیا جے رینڈولف،  ایلن ویلز رینڈولف،  میری جیفرسن رینڈولف،  جیمز میڈیسن رینڈولف،  ایلونورا ویلز رینڈولف  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد ٹامس جیفرسن[5]  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ مارتھا جیفرسن[5]  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
میڈیسن ہیمنگز،  میری جیفنرسن ایپس،  ہیریئٹ ہیمنگز،  ایسٹن ہیمنگز  ویکی ڈیٹا پر (P3373) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان،  بردہ دار[7]  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[8]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Martha Jefferson Signature.svg
 

مارتھا جیفرسن رینڈولف (انگریزی: Martha Jefferson Randolph) ریاستہائے متحدہ کے تیسرے صدرتھامس جیفرسن اور ان کی اہلیہ مارتھا جیفرسن کی سب سے بڑی بیٹی تھیں۔ وہ مونٹیسیلو میں شارلوٹزویل، ورجینیا کے قریب پیدا ہوئیں۔

ان کی والدہ کا انتقال اس وقت ہوا جب وہ 10 سال کی تھیں، جب اس کے پانچ بہن بھائیوں میں سے صرف دو زندہ تھے۔ 1804ء تک وہ زندہ رہنے والی اکیلی اولاد تھیں۔ مارتھا جیفرسن رینڈولف اپنے بڑھاپے میں اپنے والد کے بہت قریب تھیں۔ وہ ان کی بیوی مارتھا جیفرسن کے ساتھ ان کے بچوں میں سے اکلوتی تھی جو 25 سال کی عمر میں زندہ رہے۔ وہ چار زبانیں بولتی تھی اور فرانسیسی اشرافیہ کی بیٹیوں کے ساتھ پیرس کے کانونٹ اسکول میں حاصل کی گئی تعلیم سے بہت متاثر تھی۔

انہوں نے تھامس مین رینڈولف جونیئر سے شادی کی، جو وفاقی اور ریاستی سطح پر ایک سیاست دان تھے اور ورجینیا کے گورنر (1819ء-1822ء) کے طور پر منتخب ہوئے، جس نے انہیں ورجینیا کی خاتون اول بنا دیا۔ ان کے بارہ بچے تھے۔ جب اس کے رنڈوے والد امریکی صدر تھے، وہ کبھی کبھار ان کے ساتھ وائٹ ہاؤس میں رہتی تھیں، ان کی میزبان اور غیر رسمی خاتون اول کے طور پر خدمات انجام دیتی تھیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

مارتھا جیفرسن رینڈولف 27 ستمبر 1772ء، [9] کو مونٹیسیلو میں پیدا ہوئیں، جو ورجینیا میں اس کے والد کی جائداد تھی (تب برطانوی امریکا میں)۔ ان کے والد تھامس جیفرسن اور ولادہ مارتھا جیفرسن تھیں۔ [10] اس کے دادا دادی پیٹر جیفرسن، ایک پلانٹر اور سرویئر، اور جین رینڈولف تھے۔ [11][12] اس کے نانا جان وائلز (1715ء–1773ء) اور ان کی پہلی بیوی، مارتھا ایپس (1712ء–1748ء) تھے۔ ویلز ایک وکیل، غلاموں کے تاجر، برسٹل میں مقیم تاجروں فیرل اینڈ جونز اور خوشحال پلانٹر کے لیے کاروباری ایجنٹ تھے۔ [13]

اس کی والدہ مارتھا جیفرسن 6 ستمبر 1782ے کو تھامس جیفرسن کے آخری بچے کی پیدائش کے چار ماہ بعد 33 سال کی عمر میں انتقال کر گئیں۔ اس نے بعد میں اس دور اور اپنے والد کے غم کے بارے میں لکھا، "ان اداسیوں میں میں اس کی مستقل ساتھی تھی، بہت سے پرتشدد غموں کی تنہا گواہ تھی۔" [14] پاٹسی کی عمر 10 سال تھی جب اس کی ماں کا انتقال ہو گیا۔ [15] [16]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6gh9ttf — بنام: Martha Jefferson Randolph — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  2. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/memorial/24322659 — بنام: Martha Randolph — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. ^ ا ب دا پیرایج پرسن آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4638&url_prefix=https://www.thepeerage.com/&id=p32352.htm#i323512 — بنام: Martha Jefferson — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — مصنف: ڈئریل راجر لنڈی — خالق: ڈئریل راجر لنڈی
  4. ^ ا ب بنام: Martha Jefferson, gen. Patsy Randolph — FemBio ID: https://www.fembio.org/biographie.php/frau/frauendatenbank?fem_id=22747 — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Банк інформації про видатних жінок
  5. ^ ا ب پ عنوان : Kindred Britain
  6. دا پیرایج پرسن آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4638&url_prefix=https://www.thepeerage.com/&id=p32352.htm#i323512 — اخذ شدہ بتاریخ: 7 اگست 2020
  7. https://www.washingtonpost.com/history/interactive/2022/congress-slaveowners-names-list/
  8. Identifiants et Référentiels — اخذ شدہ بتاریخ: 23 مئی 2020
  9. "Martha Jefferson Randolph". www.monticello.org (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ جنوری 6, 2020. 
  10. Malone, Dumas، ویکی نویس (1933). "Jefferson, Thomas". Dictionary of American Biography. 10. Charles Scribner's Sons. صفحات 5–6. 
  11. Brodie، Fawn (1974). Thomas Jefferson: An Intimate History. W. W. Norton & Company. صفحات 33–34. ISBN 978-0-393-31752-7. 
  12. Tucker, George (1837). The Life of Thomas Jefferson, Third President of the United States; 2 vol. Carey, Lea & Blanchard. 
  13. Watson، Robert P.؛ Yon، Richard (2003). "The Unknown Presidential Wife: Martha Wayles Skelton Jefferson". Jefferson Legacy Foundation. اکتوبر 15, 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ جنوری 7, 2012. Wayles never remarried but had five children – Nance, Critta, Thenia, Peter, and Sally – to his slave Elizabeth "Betty" Hemings, the youngest of which would become famous for her relationship with Thomas Jefferson.)" Note: This is incorrect on the number and some of the names; see Note for Monticello website 
  14. Hyland Jr.، William G. (2015). Martha Jefferson: An Intimate Life with Thomas Jefferson. Lanham, MD: Rowman and Littlefield. صفحہ 1. ISBN 978-1-4422-3984-5. 
  15. "Martha Jefferson Randolph's Room at Monticello". Monticello (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ جنوری 6, 2020.