ملائیشیا ایئر لائنز کی پرواز 370

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ملائیشیا ایئر لائنز پرواز 370
9M-MRO، حادثہ کا شکار ہوائی جہاز، پیرس میں 2011
لاپتہ ہوائی جہاز کا خلاصہ
تاریخ حادثہ 8 مارچ 2014 (2014-03-08)
بمقام آخری مقام رابطہ: 6°55′15″N 103°34′43″E / 6.92083°N 103.57861°E / 6.92083; 103.57861
مسافروں کی تعداد 227
عملہ 12
طرز جہاز بوئنگ 777-200ای آر
مشتغل ملائیشیا ایئرلائنز
رجسٹریشن نمبر 9M-MRO
مقام پرواز کوالالمپور بین الاقوامی ہوائی اڈہ
منزل بیجنگ کیپٹل انٹرنیشنل ایئرپورٹ

ملائیشیا کا ایک طیارہ جو 8 مارچ کو کوالالمپور سے بیجنگ جاتے ہوئے جو ملائیشیا اور ویتنام کے درمیان گم ہوگیا بدقسمت گمشدہ طیارے میں عملے کے 12 افراد سمیت 239 افراد سوار ہیں طیارے کا تاحال کچھ پتہ نہیں چلا۔

واقعات کا سلسلہ[ترمیم]

گمشدگی[ترمیم]

8 مارچ پر 00:41 مقامی وقت کو جہاز کوالا لمپور انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے روانہ ہوا اور منصوبے کے مطابق بیجنگ کیپٹل انٹرنیشل ایئرپورٹ میں 06:30 مقامی وقت کو اترنا تھا۔ 35,000 فٹ کی مقررہ کروز بلندی تک چڑھا اور 471 بحری میل فی گھنٹا پر سفر کر رہا تھا جب سارا رابطہ منقطع ہو گیا اور ٹرانسپونڈر کا سگنل بھی غائب ہو گیا۔ جہاز کا آخری معلوم مقام 01:20 مقامی وقت پر IGARI نامی وے پوائنٹ پر تھا۔

توقع تھی کہ جہاز نے ہو چی مِنھ شہر کے ایئر ٹریفک کنٹرول سے رابطہ قائم کرنا تھا، جیسے ہی وہ ویتنامی فضائی حدود میں داخل ہوا، اس مقام سے تھوڑے ہی شمال کو جہاں رابطہ منقطع ہوا۔ ایک دیگر جہاز کے پائلٹ نے MH370 کے پائلٹوں سے رابطہ قائم کرنے کی کوشش کی، ویتنامی ایئر ٹریفک کنٹرول سے رابطہ قائم کرنے کا درخواست آگے بھیجنے کے لیے، 1:30 کے تھوڑی دیر بعد۔ پائلٹ نے کہا کہ رابطہ قائم کیا گیا، لیکن بڑبڑاہٹ اور سٹیٹک کے علاوہ کچھ نہ سنائی دیا۔

ریڈار سکرین سے غائب ہونے سے ہہلے نہ جہاز کے عملے نے نہ کمیونیکیشن سسٹم نے ڈسٹریس سگنل بھیجا، یا خراب موسم یا تکنیکی گڑبڑ کا اشارہ۔

بعد کا ابلاغ[ترمیم]

وال سٹریٹ جرنل نے بتایا، امریکی حکومت میں ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے، کہ جہاز کا سیٹلائٹ کمیونیکیشن لِنک پانچ گھنٹے کے لیے ہر آدھا گھنٹا سگنل بھیجتا گیا، جو رولز روائس انجن صنعت کار نے وصول کیے۔ اس بیان سے نتیجہ نکالا گیا کہ ٹرانسپونڈر کے بند ہونے کے چار گھنٹے بعد جہاز ہوا میں رہا۔

ملیشیا کے قائم مقام وزیرِ ٹرانسپورٹ نے اس دعوے کو رد کیا، اور کہا کہ انجن کا آخری سگنل 01:07 کو وصول کیا گیا، ریڈار سے غائب ہونے سے پہلے جو تھا۔ روٹرز نے بعد میں وضاحت کی کہ انجن ریپورٹ کی ناموجودگی کا یہ نہیں مطلب کہ جاری اڑان کا بالکل ثبوت نہیں ہے، بلکہ ثبوت ایک 'پِنگ' کی شکل بھی اختیار کر سکتا ہے، جو سیٹلائٹوں کو اشارہ کرتا ہے کہ جہاز رابطہ قائم کرنے کے لیے تیار ہے، اور ضروری نہیں ہے کہ اس سگنل میں ڈاٹا یا معلومات بھی شامل ہو۔ وال سٹریٹ جرنل نے رولز روائس کا حوالہ نکال دیا، اور کہا کہ جاری اڑان کا یقین جہاز کے سیٹلائٹ کمیونیکیشن لِنک سے بھیجے ہوئے سگنلوں کے تجزیے پر مبنی ہے، اور ان سگنلوں میں کوئی ڈاٹا نہیں تھا۔

13 مارچ پر، وائٹ ہاؤس پریس سیکرٹری نے کہا کہ بحرِ ہند میں تلاش کا ایک نیا مقام قائم کیا جا رہا ہے، نئی معلومات پر مبنی۔ پینٹاگون کا ایک اعلیٰ اہلکار نے کہا کہ انہیں اندازا تھا کہ جہاز کا تصادم بحر ہند میں ہوا۔ اِنمارسَیٹ نامی سیٹلائٹ کمپنی نے بھی تصدیق کیا کہ ان کے نیٹورک پر جہاز کا سگنل وصول کیا گیا۔

تخمینہ شدہ راستہ[ترمیم]

11 مارچ پر فوجی ریڈار کے سابق ڈاٹا کے تجزیے سے معلوم ہوا کہ شہری ریڈار سے رابطہ منقطع کرنے کے بعد، جہاز نے مغرب کو نازک موڑ لی، اور آبنائے ملاکا کی طرف سفر کرنے لگا، اور مزید ستر منٹ کے لیے جہاز ملیشیائی فوجی ریڈار پر نمودار رہا۔ جہاز نے ملیشیا کی خشکی پار کی اور پُولاؤُ پیراک کے نزدیک فوجی ریڈار سے غائب ہو گیا۔ یہ مقام شہری ریڈار سے غائب ہونے کے مقام سے 500 کلومیٹر دور تھا۔ نیو یارک ٹائمز اور روٹرز نے بیان کیا کہ راستے میں تبدیلی دلالت کرتی ہے کہ جہاز اس وقت پائلٹ کے قابو میں تھا۔

سیٹلائٹ سے وصول شدہ جہاز کے آخری 'پِنگ' سے جہاز اور سیٹلائٹ کے درمیان فاصلہ معلوم کیا گیا ہے، اور اس کے مطابق جہاز کا اس وقت مقام سیٹلائٹ سے ہم فاصلہ دو قوسوں پر کہیں بھی پڑ سکتا ہے۔ ایک قوس قزاقستان اور ترکمنستان کے سرحد سے شمالی تھائیلینڈ تک دوڑتی ہے، اور دوسری انڈونیشیا سے جنوبی بحر ہند کو۔

مسافر اور عملہ[ترمیم]

ملائیشیا ایئرلائنز نے 227 مسافروں کے نام اور قومیتوں جاری کیے ہیں جبکہ 12 عملے کے افراد بھی جہاز پر سوار تھے۔ [1]

پرواز پر سوار لوگ اور قومیتیں 370
قومیت مسافر عملہ کل
Flag of Australia.svg آسٹریلیا 6 6
Flag of Canada.svg کینیڈا 2 2
Flag of the People's Republic of China.svg چین 152 152
Flag of France.svg فرانس 4 4
Flag of Hong Kong.svg ہانگ کانگ[2] 1 1
Flag of India.svg بھارت 5 5
Flag of Indonesia.svg انڈونیشیا 7 7
Flag of Iran.svg ایران[lower-alpha 1] 2 2
Flag of Malaysia.svg ملائیشیا 38 12 50
Flag of the Netherlands.svg نیدرلینڈز 1 1
Flag of New Zealand.svg نیوزی لینڈ 2 2
Flag of Russia.svg روس 1 1
Flag of the Republic of China.svg تائیوان 1 1
Flag of Ukraine.svg یوکرین 2 2
Flag of the United States.svg ریاستہائے متحدہ امریکا 3 3
کل (15 قومییں) 227 12 239


گمشدہ طیارے کے بارے مفروضے[ترمیم]

  1. طیارہ جزائر انڈمان پر اتار لیا گیا
  2. طیارہ قزاقستان چلا گیا
  3. طیارہ جنوب کی سمت گیا
  4. طیارہ چین کا صحرائے تکلہ مکان میں چلا گیا
  5. آگ یا دیگر فنی خرابی کی وجہ سے طیارہ نے جزیرہ لنگکاوی کی طرف پرواز کی
  6. طیارہ پاکستان میں چلا گیا
  7. طیارہ کسی دوسرے طیارے کے ریڈار کے سائے میں چھپ گیا
  8. طیارے میں کشمکش کے بعد طیارہ اغوا
  9. ہوا کا دباؤ کم کر کے مسافروں کو مار دیا گیا
  10. طیارے کو دہشتگردی کے لیے دوبارہ اڑایا جائے گا

حوالہ جات[ترمیم]

ملاحظات[ترمیم]

  1. The manifest released by ملائشیا Airlines lists an آسٹریاn and an Italian. These have since been identified as two ایرانian nationals who boarded Flight 370 using stolen passports.[3]