موضوعات

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

موضوعات: اصطلاح حدیث موضوع کی جمع ہے

موضوع کی تعریف[ترمیم]

اصطلاح حدیث میں جب کسی راوی میں یہ عیب ثابت ہو جائے کہ وہ رسول اللہ ﷺ پر جھوٹ بولتا ہے اور من گھڑت باتیں ان کی طرف منسوب کرتا ہے تو اس کی روایت کو موضوع کہتے ہیں

لغوی معنی[ترمیم]

یہ لفظ وضع سے بنا ہے وضع الشئی کا معنی ہے فلاں نے کسی شے کو گرا دیا روایت کے موضوع کہنے کی بھی وجہ یہی ہے کہ رتبہ اور مقام کے اعتبار سے یہ انتہائی نیچے اور گری ہوئی ہوتی ہے

اصطلاحی معنی[ترمیم]

محدثین کی اصطلاح میں اس کی تعریف یوں کی جاتی ہے

وہ جھوٹی، مصنوعی اور خود ساختہ بات جسے رسول اللہ کی طرف منسوب کر دیا گیا ہوحدیث موضوع کہلاتی ہے

موضوع اور ضعیف میں فرق[ترمیم]

موضوع اور ضعیف الگ الگ ہیں موضوع گھڑی ہوئی بات یہ حدیث رسول نہیں قابل رد ہے اور ضعیف جس کی روایت کمزور ہو یہ قول رسول اور حدیث شمار ہوتی ہے ۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. معجم اصطلاحات حدیث،صفحہ 374،ڈاکٹر سہل حسن،ادارہ تحقیقات اسلامی اسلام آباد