غریب (اصطلاح حدیث)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

علم مصطلح الحديث

اقسامِ حدیث باعتبار مُسند الیہ

حدیث قدسی  · حدیث مرفوع
حدیث موقوف  ·
حدیث مقطوع

اقسامِ حدیث باعتبار تعدادِ سند

حدیث متواتر  · حدیث احاد

اقسامِ اُحاد باعتبار تعدادِ سند

حدیث مشہور  · حدیث عزیز  · حدیث غریب

اقسامِ اُحاد باعتبار قوت و ضعف

حدیثِ مقبول  · حدیثِ مردود

اقسامِ حدیثِ مقبول

حدیثِ صحیح  · حدیثِ صحیح لذاتہٖ · حدیثِ صحیح لغیرہٖ
حدیثِ حسن  ·
حدیثِ حسن لذاتہٖ · حدیثِ حسن لغیرہٖ

اقسامِ حدیثِ مردود

حدیث ضعیف
حدیثِ مردود بوجہ سقوطِ راوی
حدیثِ مردود بوجہ طعنِ راوی

اقسامِ حدیثِ مردود بوجہ سقوطِ راوی

حدیث مُعلق  · حدیث مُرسل
حدیث مُعضل  ·
حدیث منقطع
حدیث مدلس  ·
حدیث مرسل خفی
حدیث معنعن

اقسامِ حدیثِ مردود بوجہ طعنِ راوی

حدیث موضوع  · حدیث متروک
حدیث منکر  ·
حدیث معلل

اقسامِ حدیثِ معلل

حدیث مدرج  · حدیث مقلوب
حدیث مزید فی متصل الاسناد  ·
حدیث مضطرب
حدیث مصحف  ·
حدیث شاذ

طعنِ راوی کے اسباب

مخالفتِ ثقات  · جہالۃ بالراوی
بدعت  ·
سوءِ حفظ

اقسامِ کتبِ حدیث

اربعین  · سنن  · جامع  · مستخرج  · جزو  · مستدرک  · معجم

دیگر اصطلاحاتِ حدیث

اعتبار  · شاہد  · متابع
متصل  ·
متفق علیہ  · مسند · واضح
مسلسل بالید  ·
مسلسل بالاولیہ  · مسلسل بالحلف

علم حدیث میں غریب سے مراد وہ حدیث ہے جس کے سلسلہ اسناد میں کسی طبقہ میں روایت کا دارومدار صرف ایک راوی پر ہو،اگرچہ دوسرے طبقوں میں ،ایک سے زیادہ راوی بھی ہو سکتے ہیں۔ اسے حدیثِ مفرد بھی کہا جاتا ہے حدیث غریب کوفرد بھی کہتے ہیں پھرفرد کی دوقسمیں ہیں،

  • فردِ مطلق:یہ حدیث غریب ہے
  • فرد نسبی:یہ ہے کہ صحابی سے تومتعدد تابعی روایت کریں؛ لیکن اس کے بعد راوی کہیں ایک ہی رہ جائے؛

فرد اور غریب دونوں ہم معنی لفظ ہیں؛ مگرمحدثین عام طور پر فرد مطلق کوفرد اور فردِ نسبی کوغریب کہتے ہیں، ان کے ہاں یہ بات عجیب ہے کہ زمانہ تابعین میں تواس حدیث کو زیادہ راوی روایت کریں اور آگے کسی دور میں اس کاراوی ایک رہ جائے، اس سے یہ بھی معلوم ہوا کہ ایسی حدیث غریب ہونے کے باوجود صحیح ہی رہتی ہے، بشرطیکہ سند کا اتصال قائم ہو اور رواۃ کمزور نہ ہوں؛ سوکسی حدیث کا غریب ہونا اس کی صحت کے منافی نہیں ہے۔ حدیثِ غریب کی مندرجہ ذیل دو قسمیں ہیں:

  • غریبِ مطلق: جس حدیث کی اصل سند ہی میں غرابت ہو، وہ غریب ِ مطلق کہلاتی ہے۔ یعنی وہ حدیث جسے صرف ایک صحابی روایت کر رہے ہوں
  • غریبِ نسبی: یہ وہ حدیث ہے جس کے آغاز میں نہیں، بلکہ درمیان میں غرابت پائی جاتی ہواور صرف ایک راوی پایاجائے۔