آئزک نیوٹن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
سر آئزک نیوٹن
Sir Isaac Newton
Portrait of man in black with shoulder-length, wavy brown hair, a large sharp nose, and a distracted gaze
آئزک نیوٹن 1689 (عمر 46).
پیدائش 25 دسمبر 1642
نیا انداز تاریخ: 4 جنوری 1643 (1643-01-04)[1]
وولزتھروپ, لنکن شائر, مملکت انگلستان
وفات 20 مارچ 1727 (عمر 84)
قدیم انداز تاریخ: 20 مارچ 1726(1726-03-20)
 نیا انداز تاریخ: 31 مارچ 1727(1727-03-31)

کنسنگٹن, مڈلسیکس, انگلستان, مملکت برطانیہ عظمی
سکونت ویسٹ منسٹر ایبی
سکونت انگلستان
قومیت انگریز (بعد میں برطانوی)
میدان
ادارے
مادر علمی ٹرنٹی کالج، کیمبرج
تعلیمی مشیر
  • اسحاق بیرو[2]
  • بینجمن پولین[3]
قابل ذکر طلباء
وجہِ معروفیت برائے
اثرات
متاثر
دستخط
Is. Newton
آئزک نیوٹن
آئزک نیوٹن

سر آئزک نیوٹن (انگریزی: Sir Isaac Newton) (4 جنوری 1643ء31 مارچ 1727ء) ایک انگریز طبیعیات دان، ریاضیدان، خلادان، فلسفی اور کیمیا دان تھے جن کا شمار تاریخ کی انتہائی اہم شخصیات میں ہوتا ہے۔ [5] 1687ء میں چھپنے والی ان کی کتاب قدرتی فلسفہ کے حسابی اصول (لاطینی: Philosophiæ Naturalis Principia Mathematica) سائنس کی تاریخ کی اہم ترین کتاب مانی جاتی ہے جس میں کلاسیکی میکینکس کے اصولوں کی بنیاد رکھی گئی۔ اسی کتاب میں نیوٹن نے کشش ثقل کا قانون اور اپنے تین قوانین حرکت بتائے۔ یہ قوانین اگلے تین سو سال تک طبیعیات کی بنیاد بنے رہے۔ نیوٹن نے ثابت کیا کہ زمین پر موجود اجسام اور سیارے اور ستارے ایک ہی قوانین کے تحت حرکت کرتے ہیں۔ اس نے اپنے قوانین حرکت اور کیپلر کے قوانین کے درمیان مماثلت ثابت کر کے کائنات میں زمین کی مرکزیت کے اعتقاد کو مکمل طور پر ختم کردیا اور سائنسی انقلاب کو آگے بڑھانے میں مدد دی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ خطا در حوالہ: غلط <ref> ٹیگ؛ حوالہ بنام OSNS کے لیے کوئی متن فراہم نہیں کیا گیا
  2. ^ Feingold, Mordechai. Barrow, Isaac (1630–1677), Oxford Dictionary of National Biography, Oxford University Press, September 2004; online edn, May 2007. Retrieved 24 February 2009; explained further in Mordechai Feingold's "Newton, Leibniz, and Barrow Too: An Attempt at a Reinterpretation" in Isis, Vol. 84, No. 2 (June 1993), pp. 310–338.
  3. ^ "Newton, Isaac" in the Dictionary of Scientific Biography, n.4.
  4. ^ Stokes, Mitch (2010). Isaac Newton. Thomas Nelson. p. 97. ISBN 1-59555-303-7. http://books.google.gr/books?id=zpsoSXCeg5gC&pg=PA972. 
  5. ^ http://www.adherents.com/adh_influ.html