آپریشن بلیو اسٹار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
آپریشن بلیو سٹار
Operation Blue Star
Operation Bluestar Aftermath on Akal Takht.jpg
اکال تخت آپریشن کے بعد بھارتی حکومت کی طرف سے مرمت کیا جا رہا ہے۔ بعد میں سکھوں نے اس کو گرا کر دوبارہ تعمیر کیا۔[6]
تاریخ3تا 8 جون 1984ء
مقامامرتسر، بھارت ہرمیندر صاحب میں
نتیجہ

جرنیل سنگھ بھنڈراں والے قتل ہوا۔

محارب
  • Flag of Indian Army.svg بھارتی فوج
  • سینٹرل ریزرو پولیس فورس
  • بارڈر سیکورٹی فورس
  • پنجاب پولیس
  • معاون:
    Flag of مملکت متحدہ خصوصی فضائی سروس[1][2]
    سکھ عسکریت پسند[3][4][5]
    کمانڈر اور رہنما
    Flag of Indian Army.svg میجر جرنل کلدیپ سنگھ برار
    لیفٹنینٹ جرنل رنجیت سنگھ دیال [7]
    لیفٹنینٹ جرنل کرشناسوامی سندراجی
    جرنیل سنگھ بھنڈراں والے 
    بھائی امرک سنگھ 
    شائبگ سنگھ 
    طاقت
    10,000 مسلح فوجی نویں ڈویژن کے، نیشنل سیکورٹی گارڈ 175 پیراشوٹ رجمنٹ اور توپ خانہ یونٹس
    700 جوان سی آر پی ایف چوتھی بٹالین کے اور بی ایس ایف ساتویں بٹالین
    150 جوان پنجاب مسلح پولیس کے اور ہرمیندر پولیس اسٹیشن کے افسران۔
    175 تا 200
    ہلاکتیں اور نقصانات
    136 کل جانی نقصان[8] 140–200 جنگجو قتل
    492–5,000[9] شہری قتل

    1984ء میں بھارتی فوج کا اپنے ہی ملک میں امرتسر شہر میں واقع ہرمندر صاحب پر کیا جانے والا آپریشن۔ یہ آپریشن اس وقت کی بھارتی وزیر اعظم اندرا گاندھی کے حکم سے 3 سے 8 جون تک ہوا۔[10]

    مزید دیکھیے[ترمیم]

    حوالہ جات[ترمیم]

    1. Nicholas Watt, Jason Burke and Jason Deans۔ "Cameron orders inquiry into claims of British role in 1984 Amritsar attack"۔ دی گارڈین۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2014۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
    2. Swami، Praveen۔ "RAW chief consulted MI6 in build-up to Operation Bluestar"۔ Chennai, India: The Hindu۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2014۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
    3. K.S. Brar (جولائی 1993)۔ Operation Blue Star: the true story۔ UBS Publishers' Distributors. pp. 56–57. ISBN 978-81-85944-29-6. Retrieved 9 اگست 2013.
    4. Dogra, Cander Suta. "Operation Blue Star – the Untold Story"۔ The Hindu، 10 جون 2013. Web. 9 Aug 2013.
    5. Cynthia Keppley Mahmood (1 جنوری 2011)۔ Fighting for Faith and Nation: Dialogues with Sikh Militants۔ University of Pennsylvania Press. pp. Title, 91, 21, 200, 77, 19. ISBN 978-0-8122-0017-1. Retrieved 9 اگست 2013
    6. Architecture & History
    7. "Temple Raid: Army's Order was Restraint"۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 6 فروری 2012۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
    8. Official Website of Indian Army
    9. Kumar، Ram۔ Reduced to Ashes: The Insurgency and Human Rights in Punjab : Final Report, Volume 1۔ Committee for Coordination on Disappearances in Punjab۔ صفحہ 38۔ ISBN 9789993353577۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
    10. http://www.rediff.com/news/2004/jun/03spec.htm Rediff.com. 6 جون 1984. Retrieved 9 اگست 2009.