افسر صدیقی امروہوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
افسر صدیقی امروہوی
معلومات شخصیت
پیدائش 9 دسمبر 1896  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
امروہہ،  برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 9 فروری 1984 (88 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
کراچی،  پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
مدفن سخی حسن  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام دفن (P119) ویکی ڈیٹا پر
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند
Flag of Pakistan.svg پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
استاد مضطر خیرآبادی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں استاد (P1066) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ شاعر،  مترجم،  مدیر،  محقق  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان اردو،  فارسی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
شعبۂ عمل غزل،  مرثیہ،  تحقیق،  ادارت،  تذکرہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شعبۂ عمل (P101) ویکی ڈیٹا پر
P literature.svg باب ادب

افسر صدیقی امروہوی (پیدائش: 9 دسمبر، 1896ء - وفات: 9 فروری، 1984ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے ممتاز شاعر، محقق، مترجم اور صحافی تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

افسر صدیقی امروہوی 3 رجب، 1314ھ بمطابق 9 دسمبر، 1896ء بروز بدھ کو امروہہ، اترپردیش، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے[1][2][3]۔ ان کے جدِ اعلیٰ نوازش علی عرف نوازی صدیقی 1713ء میں دہلی سے امروہہ آئے اور یہاں مستقل سکونت اختیار کی۔ افسر کے والد کا نام شمس الدین تھا۔ میر فضل حسین سعید امروہوی سے تعلیم کی ابتدا کی۔ مختلف اساتذہ سے اردو اور فارسی کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد اردو مڈل، اردو ٹریننگ اور ہندی مڈل کے امتحانات پاس کیے۔ فارسی، سندھی، انگریزی اور پنجابی زبانیں حسبِ ضرورت جانتے تھے۔ وہ شاعری میں مضطر خیرآبادی اور شوق قدوائی لکھنوی کے شاگرد تھے۔ 1927ء میں کراچی، پاکستان منتقل ہو گئے اور تا عمر اسی شہر میں بسر کی۔ 1962ء میں انجمن ترقی اردو پاکستان سے وابستہ ہوئے اور قلمی کتابوں کی تفصیلی فہرست کی تیاری پر معمور ہوئے۔[4] انہوں نے 1935ء کے لگ بھگ کراچی سے ماہنامہ تنویر جاری کیا جس نے کئی موضوعات پر خاص نمبر شائع کیے۔[1]

تصانیف[ترمیم]

شاعری[ترمیم]

  • رباعیات ِافسر (1914ء)
  • برق ِتخیل (1924ء)
  • تابش ِخیال (1929ء)
  • شہاب ِتخیل (بلوچ لیتھو پرنٹنگ پریس کراچی، 1939ء)
  • سرمایۂ تغزل (1983ء)

تذکرہ[ترمیم]

  • عروس الاذکار (نصیرالدین نقش حیدرآبادی کا لکھا تذکرہ) انجمن ترقی اردو کراچی، 1975ء
  • تذکرہ شعرائے امروہہ

تنقید و تحقیق و ترتیب[ترمیم]

  • ہادی الجمع
  • فیضانِ انیس
  • گلستان ِ قمر
  • مصحفی حیات و کلام (مکتبۂ نیا دور کراچی، 1975ء)
  • بیاض مراثی (گیارہویں بارھویں صدی ہجری کے مراثی کا مجموعہ) انجمن ترقی اردو کراچی، 1975ء
  • مخطوطات انجمن ترقی اُردو - جلد اول (انجمن ترقی اردو کراچی، 1965ء)
  • مخطوطات انجمن ترقی اُردو - جلد دوم (انجمن ترقی اردو کراچی، 1967ء)
  • مخطوطات انجمن ترقی اُردو - جلد سوم (انجمن ترقی اردو کراچی، 1975ء)
  • مخطوطات انجمن ترقی اُردو - جلد چہارم (انجمن ترقی اردو کراچی، 1976ء)
  • مخطوطات انجمن ترقی اُردو - جلد پنجم (انجمن ترقی اردو کراچی، 1978ء)
  • مدائع الشعراء (انجمن ترقی اردو کراچی، 1975ء)
  • مثنوی عاقبت بخیر (سید ساجد علی فنائی، انجمن ترقی اردو کراچی، 1981ء)
  • مثنوی نوسرباز (انجمن ترقی اردو پاکستان، 1982ء)

تراجم[ترمیم]

  • جوزف ولماٹ (ناول)

وفات[ترمیم]

افسر صدیقی امروہوی 9 فروری، 1984ء کو کراچی، پاکستان میں وفات پا گئے۔ وہ کراچی میں سخی حسن کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔[1][2][3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ عقیل عباس جعفری، پاکستان کرونیکل، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء، ص 555
  2. ^ ا ب افسر صدیقی امروہوی، سوانح و تصانیف ویب، پاکستان
  3. ^ ا ب ڈاکٹر محمد منیر احمد سلیچ، وفیات ناموران پاکستان، لاہور، اردو سائنس بورڈ، لاہور، 2006ء، ص 143
  4. سرفراز علی رضوی: ماخذات (احوال شعرا و مشاہیر) جلد سوم، انجمن ترقی اردو پاکستان، 1987ء، ص 148-149