تنویر عباسی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ڈاکٹر تنویر عباسی
پیدائش نورالنبی
7 اکتوبر 1934(1934-10-07)

صوبھودیرو، ضلع خیرپور، سندھ، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان)
وفات 25 نومبر 1999(1999-11-25) (عمر  65 سال)

اسلام آباد، پاکستان
قلمی نام تنویر عباسی
پیشہ شاعر،محقق، نقاد
زبان سندھی
نسل سندھی
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
اصناف شاعری، تحقیق، تنقید، سفرنامہ
نمایاں کام شاہ لطیف جی شاعری
تنویر چئے
نانک یوسف جو کلام
اہم اعزازات صدارتی تمغا برائے حسن کارکردگی
پاکستان رائٹرز گلڈ ایوارڈ
تمغا امتیاز
نارائن شیام ایوارڈ

ڈاکٹر تنویر عباسی (پیدائش: 7 اکتوبر، 1934ء - وفات: 25 نومبر، 1999ء ) پاکستان سے تعلق رکھنے والے سندھی زبان کے مشہور و معروف شاعر، محقق اور نقاد تھے۔ وہ شاہ عبداللطیف بھٹائی کی شاعری پرتحقیقی و تنقیدی کتاب شاہ لطیف جی شاعری کی وجہ سے مشہور معروف ہیں۔

حالات زندگی[ترمیم]

ڈاکٹر تنویر عباسی 7 اکتوبر، 1934ء کوصوبھودیرو، ضلع خیرپور، سندھ، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان میں پیدا ہوئے۔[1]۔ ان کا اصل نام نورالنبی تھا۔ ان کی تصانیف میں رگوں تھیوں رباب، سج تری ائیں ھیٹان، ہی دھرتی، تنویر چئے، منھن جنیں مشعل، ساجن سونھن سرت ،شاہ لطیف جی شاعری، نانک یوسف جو کلام اور کلام خوش خیر محمد ہیسباٹی سر فہرست ہیں۔[1]

تصانیف[ترمیم]

  • تنویر چئے (شاعری)
  • ہی دھرتی (شاعری)
  • ترورا (مضامین)
  • نانک یوسف جو کلام (تنقید)
  • کلام خوش خیر محمد ہیسباٹی (تنقید)
  • سج تری ہیٹھاں (شاعری)
  • شاہ لطیف جی شاعری (لطیفیات)
  • بارانا بول (بچوں کا ادب)
  • جے ماریانہ موت (ناول)
  • شعر (شاعری)
  • رگوں تھیوں رباب (شاعری)

اعزازات[ترمیم]

حکومت پاکستان نے ڈاکٹر تنویر عباسی کے فن کے اعتراف میں ان کی وفات کے بعد صدارتی تمغا برائے حسن کارکردگی اور تمغا امتیازعطا کیا۔ اس کے علاوہ انہوں نے پاکستان رائٹرز گلڈ ایوارڈ اور نارائن شیام ایوارڈ بھی حاصل کیے۔[1]

وفات[ترمیم]

ڈاکٹر تنویر عباسی 25 نومبر، 1999ء کو اسلام آباد، پاکستان میں وفات پاگئے۔ وہ [سلام آبادکے مرکزی قبرستان میں سپردِ خاک ہوئے۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت پاکستان کرونیکل: عقیل عباس جعفری، ص 849، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء