خلیل الرحمان داؤدی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
خلیل الرحمان داؤدی
پیدائش 2 مارچ 1923(1923-03-02)ء
لاوڑ، میرٹھ، برطانوی ہندوستان
وفات 26 جنوری 2002(2002-01-26)ءلاہور، پاکستان
قلمی نام خلیل الرحمان داؤدی
پیشہ نقاد، محقق، ماہرِ مخطوطات
زبان عربی، اردو زبان، فارسی
نسل مہاجر
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
اصناف تنقید، تحقیق، ترجمہ
نمایاں کام مجموعہ نثرِ غالب اُردو
مذہبِ عشق
بہارِ دانش
اردو کی قدیم منظوم داستانیں
نورتن

خلیل الرحمان داؤدی (پیدائش: 2 مارچ، 1923ء - وفات: 26 جنوری، 2002ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے عربی، اردو اور فارسی زبان کے نامور محقق، نقاد اور ماہرِ مخطوطات تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

خلیل الرحمان داؤدی 2 مارچ،1923ء کو لاوڑ، میرٹھ، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے اردو کی متعدد کلاسیکی کتب مرتب کیں اور ان کے متن کی تدوین کی۔ ان کی مرتبہ کتابوں میں مذہب عشق، دیوانِ درد، قواعد زبان اردو، نورتن، بہارِ دانش، سروش سخن، یاگارِ غالب، تذکرہ گلستانِ سخن (جلد اول، دوم)، اردو کی قدیم منظوم داستانیں، مجموعہ نثرِ غالب (اُردو) اور کلیات انشاکے نام سرِ فہرست ہیں۔[1]

تصانیف[ترمیم]

  • سروش سخن
  • نورتن
  • یادگار غالب
  • دیوان درد
  • قصہ اگرگل
  • مجموعہ نثرِ غالب (اُردو)
  • مذہب عشق
  • تذکرہ گلستانِ سخن (جلد اول، دوم)
  • اردو کی قدیم منظوم داستانیں
  • قواعد زبان اردو
  • بہارِ دانش
  • کلیات انشا

وفات[ترمیم]

خلیل الرحمان داؤدی 26 جنوری، 2002ء کو لاہور، پاکستان میں وفات پا گئے۔وہ لاہور میں قبرستان تکیہ معصوم شاہ سمن آباد میں سپردِ خاک ہوئے۔[2][1]

حوالہ جات[ترمیم]