محاصرہ مدینہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
محاصرہ مدینہ
بسلسلہ پہلی جنگ عظیم کے دوران میں عرب بغاوت
تاریخ10 جون 1916 – 10 جنوری 1919
مقاممدینہ، ولایت حجاز
نتیجہ برطانیہ اور عرب فتح
محارب

Flag of the United Kingdom.svg مملکت متحدہ

Flag of عرب بغاوت مملکت حجاز
Flag of سلطنت عثمانیہ سلطنت عثمانیہ
کمانڈر اور رہنما
Flag of مملکت متحدہ تھامس لارنس
Flag of مملکت متحدہ لارڈ ایلن بی
Flag of عرب بغاوت فیصل بن حسین
Flag of عرب بغاوت عبداللہ اول بن حسین
Flag of عرب بغاوت علی بن حسین حجازی
Flag of سلطنت عثمانیہ فخری پاشا
طاقت
30,000 (1916)[1]
50,000 (1918)[2]
3,000 (1916)[3]
11,000 (1918)[4]
ہلاکتیں اور نقصانات
خاصی 8,000 مصر کو انخلا[4]

مدینہ عرب کا ایک مقدس شہر ہے جو پہلی جنگ عظیم کے دوران میں ایک طویل محاصرے گزرا۔ اس وقت مدینہ سلطنت عثمانیہ کا حصہ تھا۔ اس وقت سلطنت عثمانیہ نے مرکزی طاقتوں کا ساتھ دیا۔ شریف مکہ نے سلطنت عثمانیہ سے غداری کی اور خلیفہ کے خلاف علم بغاوت بلند کیا، جس میں لارنس آف عربیہ کا ہاتھ تھا۔ شریف مکہ نے مکہ پر قبضہ کرنے کے بعد مدینہ کا محاصرہ کیا۔ یہ تاریخ کے طویل ترین محاصروں میں سے ایک تھا جو جنگ کے بعد بھی جاری رہا۔ فخری پاشا نے مدینہ کا دفاع کیا۔ انگریزوں اسے اس کی شجاعت کی وجہ سے اسے شیر صحرا (the Lion of the Desert) کہتے تھے۔[5] محاصرہ دو سال اور سات ماہ تک جاری رہا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Spencer C. Tucker, "aqaba"#v=onepage&q="joined%20by%2030,000%20tribesmen,%20faisal%20immediately%20led%20an%20assault%20on%20the%20turkish%20garrison%20at%20medina"&f=false Arab Revolt (1916–1918)، The Encyclopedia of World War I، ABC-CLIO, 2005, ISBN 1-85109-420-2, page 117.
  2. Mehmet Bahadir Dördüncü، Mecca-Medina: the Yıldız albums of Sultan Abdülhamid II، Tughra Books, 2006, ISBN 1-59784-054-8, page 29
  3. Polly a. Mohs, Military Intelligence and the Arab Revolt: The first modern intelligence war، Routledge, ISBN 1-134-19254-1, page 40
  4. ^ ا ب Süleyman Beyoğlu ، The end broken point of Turkish – Arabian relations: The evacuation of Medine، Atatürk Atatürk Research Centre Journal (Number 78, Edition: XXVI, نومبر 2010) (ترکی زبان میں)
  5. Defence Of Medina، İsmail Bilgin, ISBN 975-263-496-6, Timas Publishing Group.