محمد قاسم قادری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
محمد قاسم قادری
معلومات شخصیت
پیدائش 6 جون 1977 (43 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
فیصل آباد  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب اسلام
فرقہ سنی
فقہی مسلک حنفی
تعداد اولاد 4 بیٹی  ویکی ڈیٹا پر (P1971) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ رضویہ مظہر الاسلام
جامعہ نظامیہ رضویہ لاہور  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استاذ عبدالقیوم ہزاروی،  محمد الیاس قادری  ویکی ڈیٹا پر (P1066) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ مفتی،  مصنف  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

مفتی محمد قاسم قادری (ولادت: 6 جون 1977ء) ایک پاکستانی سنی مفسر قرآن و مفتی ہیں۔

دنیاوی تعلیم[ترمیم]

گریجویشن۔آپ نے ایم اے پارٹ ون کے امتحانات دیے اور فرسٹ ڈویژن حاصل کی  جبکہ دینی مصروفیات کے سبب پارٹ ٹو کے امتحانات  دینے کا آج تک ٹائم نہیں ملا۔

دینی تعلیم[ترمیم]

1992-93ء میں فیصل آباد فیضان مدینہ سے پونے دو سال کی مدت میں قرآنِ پا ک حفظ کیا۔

درسِ نظامی(عالم کورس) 1994ء میں درس نظامی میں داخلہ لے لیا، ابتدا میں ’’جامعہ رضویہ‘‘  فیصل آباد، پھر’’جامعہ قادریہ‘‘ فیصل آباد اور بعد ازیں’’جامعہ نظامیہ رضویہ‘‘ لاہورمیں تعلیم حاصل کی اور آخر میں دورۂ حدیث’’ جامعہ رضویہ‘‘ فیصل آباد میں کیا۔ان تمام جامعات میں پاکستان کے صف ِ اول کے معروف، جید، فاضل علمائے کرام سے علمی اکتساب کیا۔ دورانِ تعلیم سب سے بڑی مصروفیت نصابی اور غیر نصابی کتب کا مطالعہ رہا۔

آپپ کی مادری زبان پنجابی ہے  اور ا س کے علاوہ چار زبانوں میں مختلف نوعیت کی مہارت رکھتے ہیں  (1)اردو۔ لکھنے، بولنے، پڑھنے اور سمجھنے میں اچھی مہارت ہے۔(2)عربی۔پڑھنے میں  عمدہ مہارت ہے۔(3) فارسی۔ بآسانی پڑھ  لیتے ہیں۔(4)انگلش۔  میں اچھی مہارت ہے۔ مدنی چینل پر ایک سو کے قریب انگلش پروگرام کرچکے ہیں۔

2007ء میں آپ کی شادی آبائی شہر فیصل آباد میں ہوئی۔ آپ کی چاربیٹیوں سے نوازا ہےجن کے نام یہ ہیں (1)زینب(2)مریم (3)فاطمہ (4) انیسہ۔

اساتذہ و تدیرس[ترمیم]

آپ نے اپنے وقت کے جید علما  جیسے عبد القیوم ہزاروی، شیخ الحدیث غلام نبی، عبد الستار سعیدی، مفتی گل احمد عتیقی، مفتی نذیر احمد سیالوی، علامہ صدیق ہزاروی  اور دیگر اساتذہ سے علم حاصل کیا۔ تقریباً آٹھ سال سے دعوت اسلامی کے مختلف جامعات میں تدریس فرمائی۔ دار الافتاء اہلسنت میں فتوی نویسی کا آغاز کیا اور اب رئیس دار الافتاء اہلسنت اور مجلس تحقیقات شرعیہ کے نگران  کے منصب پر فائز ہیں۔

تلامذہ[ترمیم]

آپ سے سینکڑوں طلبہ نے تعلیم حاصل کی  اور بہت سے طلبہ اہم ترین دینی خدمات میں مصروف ہیں، ان میں سے مفتی علی اصغر مدنی، مفتی ہاشم  خان مدنی، نائب مفتی سجاد مدنی، نائب مفتی حسان مدنی، نائب مفتی نوید رضا عطاری، سینئیر متخصص مولانا ماجد علی مدنی، سینئیر متخصص مولانا جمیل مدنی اورسینئیر متخصص مولانا شفیق مدنی سر فہرست ہیں۔

تصنیفات[ترمیم]

آپ نے متعدد  کتب بھی تصنیف فرمائی ہیں جن میں سے کچھ زیور طبع سے آراستہ ہو کر منظر عام پر آ چکی ہیں  جیسے

  • کَنْزُ الْعِرْفَانْ فِیْ تَرْجَمَۃِ الْقُرْآنْ، مَعْرِفَۃُ الْقُرْآنْ عَلٰی کَنْزِ الْعِرْفَانْ (6 جلدیں)
  • صِرَاطُ الْجِنَانْ فِیْ تَفْسِیْرِ الْقُرْآنْ (10 جلدیں)
  • ایمان کی حفاظت
  • فیضان دعا
  • دکھ درد اور بیماریوں کا علاج
  • وقف کے شرعی احکام
  • علم اور علما کی اہمیت
  • رحمتوں کی برسات
  • عشق رسول مع امتی پر حقوق مصطفٰی
  • رسائل قادریہ

حوالہ جات[ترمیم]