موسی صدر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
موسی صدر
(فارسی میں: موسى صدر ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Imam Musa Sadr (19) (cropped).jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 15 اپریل 1928  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قم[1]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 31 اگست 1978 (50 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاريخ غائب 31 اگست 1978[2]  ویکی ڈیٹا پر (P746) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Iran.svg ایران
Flag of Lebanon.svg لبنان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ تہران  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استاذ آیت اللہ منتظری  ویکی ڈیٹا پر (P1066) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان،  الٰہیات دان،  آخوند  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل فلسفہ  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

موسیٰ صدر شیعہ عالم دین اور مجتہد تھے۔ 1928ء میں ایران کے شہر قم میں پیدا ہوئے، تہران یونیورسٹی سے 1956ء میں اسلامی شریعت اور سیاسیات میں ڈگریاں حاصل کیں، اعلی تعلیم کی خاطر نجف چلے گئے، وہاں سے 1960ء میں لبنان کی طرف سفر کیا اور لبنان میں شیعوں کی حالت زار کو دیکھ کر وہیں پر قیام پزیر ہو گئے اور رفاہی کاموں کا اجرا کیا۔ جن میں بہت سے سکولز، چیرٹی سنٹرز شامل ہیں۔ اسرائیل کے حملوں سے شیعہ علاقوں کے دفاع کے لیے امل نامی مسلح تنظیم کی بنیاد رکھی۔ لبنان میں شیعوں کے متحد کرنے کے لیے المجلس الاسلامی الشیعی الاعلی کی بنیاد رکھی۔ 1978ء میں لیبیا کے سرکاری دورے میں اغوا کر لیے گئے اور ابھی ان کے زندہ یا فوت ہونے کا کچھ علم نہیں ہے۔[3]

حوالہ جات[ترمیم]