کنہیا کمار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کنہیا کمار
(ہندی میں: कन्हैया कुमार ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
معلومات شخصیت
پیدائش 13 جنوری 1987 (34 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جواہر لعل نہرو یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان،  فعالیت پسند  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

کنہیا کمار (انگریزی: Kanhaiya Kumar) سابقًا جواہر لال نہرو یونیورسٹی کی طلبہ انجمن کے صدر رہ چکے ہیں۔ ان کے دور قیادت میں افضل گرو کی سزائے موت پر ایک تنقیدی جلسے میں حصہ لینے کے علاوہ ملک کے خلاف نعرے بازی کرنے کا ان پر الزام ہے۔ تاہم کنہیا نے ان الزامات سے صاف انکار کیا۔ وہ ملک کے کونے کونے میں پھر کر نریندر مودی اور بی جے پی کے خلاف مہم چلاتے رہے ہیں۔ وہ نوٹ بندی اور شہریت ترمیمی قانون، 2020ء کے سخت ناقد رہے ہیں۔ وہ بھارت کی ریاست بہار میں اس قانون کے خلاف کئی مظاہروں کا حصہ رہ چکے ہیں۔ اس کی وجہ ان کے قافلے پر کئی بار حملے بھی ہو چکے ہیں۔ وہ بنیادی طور پر بائیں محاذ کی سوچ رکھتے ہیں اور سی پی آئی کے رکن ہیں۔

2019ء کے لوک سبھا انتخابات میں متنازع بیانات کے لیے مشہور مرکزی وزیر گری راج سنگھ سے بیگو سرائ حلقے انتخاب لڑے تھے، تاہم کامباب نہیں ہو سکے۔[1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]