ایکتا کپور

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ایکتا کپور
Ekta Kapoor at 98.3 FM Radio Mirchi 3.jpg
ایکتا کپور 98.3 ایف ایم ریڈیو مرچی کے اسٹوڈیو میں

معلومات شخصیت
پیدائش 7 جون 1975ء (عمر 46 سال)[1]
ممبئی  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قومیت بھارتی
والد جیتیندر  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ شوبھا کپور  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
عملی زندگی
مادر علمی متھی بائی کالج
بمبئی اسکاٹش اسکول  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ٹیلی ویژن پروڈیوسر، بالاجی ٹیلی فلمز کی مشترکہ مینیجنگ ڈائریکٹر
پیشہ ورانہ زبان ہندی،  انگریزی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دور فعالیت 1995–تاحال
اعزازات
IND Padma Shri BAR.png فنون میں پدم شری  (2020)[2]  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ایکتا کپور (پیدائش: 7 جون، 1975ء) (سندھی: ايڪتا جیتندرا ڪپوُر) ایک بھارتی ٹیلی ویژن اور فلم پروڈیوسر ہے۔ وہ بالاجی ٹیلی فلمز کی مشترکہ مینیجنگ ڈائریکٹر اور کریئیٹیو ڈائریکٹر ہیں، جو ان کی خود کی پروڈکشن کمپنی بھی ہے۔

کپور جتیندر اور شوبھا کپور کی بیٹی ہے۔ اس کا چھوٹا بھائی تشار کپور ایک بالی وڈ اداکار ہے۔[3][4][5] اس نے اپنی اسکول کی پڑھائی بمبئی اسکاٹش اسکول، ماہم سے مکمل کی اور میٹھی بائی کالج میں داخلہ لیا۔ اس نے کئی ٹی وی سیریلوں اور فلموں کو بنایا، جن میں ہم پانچ، کیونکہ ساس بھی کبھی بہو تھی، کہانی گھر گھر کی، کسوٹی زندگی کی، پوتر رشتہ، بڑے اچھے لگتے ہیں (مشترکہ طور پر ڈیرئین آموس کے ساتھ بنایا گیا) اور جودھا اکبر[6] کپور نے ٹی وی سیریز ناگن، یہ ہے محبتیں، کُم کُم بھاگیہ، کَوَچ اور قسم تیرے پیار کی۔ اس نے اپنے فیشن سیریز ای کے لیبل کا بھی افتتاح کیا۔

ذاتی زندگی[ترمیم]

ایکتا کپور اداکار جیتندر اور شوبھا کپور کی بیٹی ہیں۔ ان کا چھوٹا بھائی تشار کپور بھی بالی ووڈ اداکار ہے۔[7] [8] [9] انھوں نےبمبئی سکاٹش اسکول اور مٹھی بائی کالج سےتعلیم حاصل کی۔ [10] ایکتا کپور شادی شدہ نہیں ہیں۔ ان کا ایک بیٹا ہےجس کا نام راوی کپور ہے  جو 27 جنوری 2019 کو سروگیسی کے ذریعے پیدا ہوا تھا ۔[11][12]

کیریئر[ترمیم]

ایکتا کپور نے 15 سال کی عمر میں اپنے کیریئر کا آغاز کیا۔ فیچر فلم ساز کیلاش سریندر ناتھ کے ساتھ کام کا آغاز کیا پھر انہوں نے پروڈیوسر بننے کا فیصلہ کیا۔ [13]

2001 میں انہوں نے بولی وڈ میں فلمی پروڈکشن کا آغاز کیا ۔2012 میں ایکتا کپور نے اپنے پروڈکشن ہاؤس بالاجی ٹیلی فیلم کے ذریعہ میڈیا تربیتی ادارہ برائے تخلیقی کمال کا بھی آغاز کیا۔ [14] [15] [16]

کام[ترمیم]

ٹیلی ویژن
فلمیں
بطور پروڈیوسر بالاجی موشن پکچرز کے پرچم تلے
سال عنوان ہدایت کار نوٹس
2001 کیونکہ... میں جھوٹ نہیں بولتا ڈیوڈ دھاون
2003 کچھ تو ہے انوراگ باسو اور انیل وی کمار
2004 کرشنا کاٹیج سنت رام ورما
2005 کیا کول ہیں ہم سنگیت سیوان
2005 کوئی آپ سا پارتو مترا
2007 شوٹ آؤٹ ایٹ لوکھنڈوالا اپوروا لاکھیا بہ شرکت سنجے گپتا
2008 مشن استنبول اپوروا لاکھیا بہ شرکت سنیل شیٹی
2008 سی کے کمپنی سچن یاردی
2008 ای ایم آئی – لیا ہے تو چکانا پڑے گا سوربھ کابرا بہ شرکت سنیل شیٹی
2008 گجا کے مادیشا کنڑا فلم
2010 لو، سیکس اور دھوکا دباکر بینرجی
2010 ونس اپان اے ٹائم ان ممبئی ملن لتھریا
2011 تریانچے بیٹ کرن یادنیوپاویت مراٹھی فلم
2011 شور ان دی سٹی راج ندی مورو اور کرشنا ڈی کے
2011 راگنی ایم ایم ایس پون کرپلانی بہ شرکت امیت کپور اور سدھارتھ ایم جین
2011 دی ڈرٹی پکچر ملن لتھریا
2012 کیا سوپر کول ہیں ہم سچن یاردی
2013 ایک تھی ڈائن کنن ایر بہ شرکت وشال بھردواج
2013 شوٹ آؤٹ ایٹ وڈالا سنجے گپتا بہ شرکت سنجے گپتا
2013 لٹیرا وکرمادیہ موٹوانے بہ شرکت انوراگ کشیپ
2013 ونس اپان اے ٹائم ان ممبئی دوبارہ ملن لتھریا
2014 راگنی ایم ایم ایس 2 بھوشن پٹیل بہ شرکت شوبھا کپور
2015 وشواروپ 2 کمل ہاسن بہ شرکت شوبھا کپور
2016 کیا کول ہیں ہم 3 امیش گیگڈے بہ شرکت شوبھا کپور
متعاقب اعلان ہوگا ویرے دی ویڈنگ ششانک گھوش بہ شرکت ریا کپور

ایوارڈ اور دیگر اعزازات[ترمیم]

ایشیا کا سماجی بااختیار ایوارڈ - فریڈم تھرو ایجوکیشن 2012ء[17]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "PICS: Ekta Kapoor's 41st birthday bash". The Times of India. 8 June 2016. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 11 جون 2016. 
  2. https://pib.gov.in/newsite/PrintRelease.aspx?relid=197647 — اخذ شدہ بتاریخ: 23 فروری 2020
  3. Sabharwal، Rahul (21 January 2010). "Meet the 'real' Ekta Kapoor". Hindustan Times. 25 جنوری 2010 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2010. 
  4. "Ekta Kapoor springs a surprise". The Hindu. 1 July 2002. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2010. 
  5. "Ekta Kapoor & family take pay cut". The Hindu. 2 October 2009. 09 مارچ 2010 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2010. 
  6. Shekhar (2012-02-20). "Ekta Kapoor's obsession with 'K' was strategy, but not superstition". Entertainment.oneindia.in. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 اگست 2012. 
  7. Sabharwal، Rahul (21 January 2010). "Meet the 'real' Ekta Kapoor". ہندوستان ٹائمز. 25 جنوری 2010 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2010. 
  8. "Ekta Kapoor springs a surprise". دی ہندو. 1 July 2002. 29 دسمبر 2010 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2010. 
  9. "Ekta Kapoor & family take pay cut". دی ہندو. 2 October 2009. 09 مارچ 2010 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 31 جنوری 2010. 
  10. "Ekta Kapoor- Joint Managing Director&Creative Director of Balaji Telefilms". IndianBillGates (بزبان انگریزی). 16 September 2015. 29 اگست 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 29 اگست 2017. 
  11. "Ekta Kapoor names her newborn son after father Jeetendra, calls him Ravie Kapoor". Hindustan Times (بزبان انگریزی). 31 January 2019. اخذ شدہ بتاریخ 05 مارچ 2020. 
  12. "Ekta Kapoor on becoming a mother: 'I had stored my eggs when I was 36. Had a calling for a long time'". Hindustan Times (بزبان انگریزی). 7 March 2020. اخذ شدہ بتاریخ 19 دسمبر 2020. 
  13. "Balaji Telefilms Limited : Television, Motion Pictures". balajitelefilms.com. 24 مارچ 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019. 
  14. "Balaji Telefilms launches training academy in filmmaking". 15 May 2012. 28 مارچ 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019. 
  15. "Balaji Telefilms to start chain of acting, editing schools". indiainfoline.com. 
  16. "Ekta Kapoor's obsession with 'K' was strategy, but not superstition". Filmibeat. Greynium Information Technologies. 20 February 2012. 15 اکتوبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 اگست 2012. 
  17. "Recipients of Asia's Social Empowerment Award". 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2017.