ضلع انامایا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
آندھرا پردیش کا ضلع
راجمپیٹ میں 108 فٹ انامایا مجسمہ
راجمپیٹ میں 108 فٹ انامایا مجسمہ
آندھرا پردیش میں انامایا ضلع کا مقام
آندھرا پردیش میں انامایا ضلع کا مقام
Map
متناسقات: 14°03′N 78°45′E / 14.05°N 78.75°E / 14.05; 78.75متناسقات: 14°03′N 78°45′E / 14.05°N 78.75°E / 14.05; 78.75
ملک بھارت
ریاستآندھرا پردیش
علاقہرائل سیما
قائم شدہ4 اپریل 2022
قائم ازحکومت آندھرا پردیش
وجہ تسمیہاناماچاریہ
ہیڈکوارٹررائے چوٹی
بڑا شہرمدنپلی
انتظامی تقسیم
  • 3 ریونیو ڈویژن مدناپلے، رائے چوٹی، راجمپیت
  • 30 منڈل
رقبہ[1]
 • کل7,951 کلومیٹر2 (3,070 میل مربع)
آبادی (2011)[2][3]
 • کل1,697,308
 • کثافت210/کلومیٹر2 (550/میل مربع)
زبان
 • سرکاریتیلگو زبان
شرح خواندگی[4]
 • خواندہ10,03,000
منطقۂ وقتبھارتی معیاری وقت (UTC+05:30)
ڈاک اشاریہ رمز516XXX, 517XXX
ویب سائٹannamayya.ap.gov.in

ضلع انامایا آندھرا پردیش کے رائل سیما علاقے کے آٹھ اضلاع میں سے ایک ہے، جو 2022ء میں قائم ہوا تھا۔ رائے چوٹی ضلع کا انتظامی ہیڈکوارٹر ہے اور مدنپلی ضلع کا سب سے زیادہ آبادی والا شہر ہے۔

نام[ترمیم]

ضلع کا نام اناماچاریہ کے نام پر رکھا گیا ہے، [5] 15 ویں صدی کے ہندو سنت کا تعلق ٹلاپاکا، راجمپیٹ سے ہے اور سب سے قدیم ہندوستانی موسیقار جس نے بھگوان وینکٹیشور کی تعریف میں سنکرتناس نامی گانے لکھے تھے۔ [6]

تاریخ[ترمیم]

رائے چوٹی میں بہت سے کلاں سنگی سائٹس اور پتھر کے دائرے ہیں۔ ضلع کے سنڈوپلے منڈل میں دیوندلاپلی میں ایک مشہور میگالیتھک سائٹ ہے۔

نندلور [7] ضلع میں تلپاکا، راجامپیٹا ، کنڈورو، خازی پیٹا کے ساتھ ضلع میں بدھ مت کا ایک اہم مقام ہے۔


انامایا ضلع 4 اپریل 2022ء کو سابقہ چتور ضلع اور وائی ایس آر اضلاع کے کچھ حصوں سے پارلیمانی حلقہ کی بنیاد پر آندھرا پردیش کے اضلاع کی تنظیم نو کے ایک حصے کے طور پر تشکیل دیا گیا تھا۔ [8]

جغرافیہ[ترمیم]

ضلع انامایا آندھرا پردیش کا انتہائی جنوب مغربی ضلع ہے جو شمالی عرض البلد کے 13° 19' 55" اور 14° 42' 32" اور 78° 18' 55" اور 79° 20'26" مشرقی طول البلد کے جغرافیائی ہم آہنگی کے اندر واقع ہے۔ یہ ضلع رائل سیما کا حصہ ہے۔ اس ضلع کی سرحد شمال میں ضلع کڑپہ ، مغرب میں سری ستھیا سائی ضلع اور جنوب میں ضلع چکبالا پور اور کولار ضلع کرناٹک اور آندھرا پردیش کے چتور ضلع سے، مشرق میں آندھرا پردیش کے نیلور اور تروپتی اضلاع سے جڑی ہوئی ہے۔ [9]

آبادیات[ترمیم]

2011ء کی مردم شماری کی بنیاد پر، انامایا ضلع کی آبادی 16,97,308 تھی، جس میں سے 391,511 (23.07%) شہری علاقوں میں رہتے ہیں۔ انامایا ضلع میں جنس کا تناسب 989 خواتین فی 1000 مردوں پر ہے۔ درج فہرست ذاتیں اور درج فہرست قبائل بالترتیب آبادی کا 2,28,501 (13.46%) اور 62,475 (3.68%) ہیں۔ [2] :80–84[3] :82–87

2011ء کی مردم شماری کی بنیاد پر 81.91% آبادی تیلگو ، 16.40% اردو اور 1.04% لمباڈی اپنی پہلی زبان بولتی ہے۔ [10]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. CPO 2022, p. IX.
  2. ^ ا ب "District Census Hand Book – YSR Kadapa" (PDF)۔ Census of India۔ Registrar General and Census Commissioner of India 
  3. ^ ا ب "District Census Hand Book – Chittoor" (PDF)۔ Census of India۔ Registrar General and Census Commissioner of India 
  4. CPO 2022, p. iX.
  5. Srinivasa Rao Apparasu (2022-04-05)۔ "Andhra adds 13 new districts with aim to boost governance"۔ Hindustan Times (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 09 اپریل 2022 
  6. "Life and Times of Sri Tallapaka Annamacharya"۔ Svasa.org۔ 18 ستمبر 2009 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 جون 2013 
  7. Debala Mitra، مدیر (1983)۔ Indian Archaeology 1979–80—A Review (PDF)۔ New Delhi: Archaeological Survey of India, Government of India۔ 08 مئی 2012 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ 
  8. CPO 2022.
  9. CPO 2022, p. III.
  10. "Table C-16 Population by Mother Tongue: Andhra Pradesh"۔ Census of India۔ Registrar General and Census Commissioner of India 

بیرونی روابط[ترمیم]