لوی بن غالب

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے

لوی رسول اللہ کے نویں پشت پر جد امجد ہیں۔ آپ تمام عرب کے سردار تھے۔ آپ انتہائی بردبار اور نہایت دانا آدمی تھے۔


لوی بن غالب
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 274 (عمر 1748–1749 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مکہ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مقام وفات مکہ  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش مکہ  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت قریش  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
زوجہ ماویہ بنت کعب بن القین
اولاد کعب بن لوی[1]  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد غالب بن فہر
والدہ عاتکہ بنت یخلد بن النصر

تعارف[ترمیم]

آپ کا نام لوی اور کنیت ابو کعب تھی۔ آپ کے والد کا نام غالب بن فہر اور والدہ کا نام عاتکہ بنت یخلد بن النصر تھا۔ [2]

آپ کا سلسلہ نسب کچھ یوں ہے لوی بن غالب بن فہر بن مالک بن نضر بن کنانہ بن خزیمہ بن مدرکہ بن الیاس بن مضر بن نزار بن معد بن عدنان

لوی رسول اللہ کے نویں پشت پر جد امجد ہیں۔ آپ تک رسول اللہ کا شجرہ نسب کچھ یوں ہے۔ محمد ﷺ بن عبداللہ بن عبدالمطلب بن ھاشم بن عبد مناف بن قصی بن کلاب بن مرہ بن کعب بن لوی [3]

سیرت[ترمیم]

لوی بن غالب انتہائی بردبار اور دانا آدمی تھے۔ [4] آپ کو اللہ تعالی نے حلم اور حکمت کی صفات سے نوازا تھا۔ بچپن میں آپ کی زبان سے ایسے جملے نکلتے تھےجو ضرب المثل بن جایا کرتے تھے۔ چند آپ کے اقوال درج ذیل ہیں۔

  1. کتنی نیکیاں بوسیدہ نہیں ہوتیں نہ گمنام ہوتی ہیں۔
  2. اور جب چیز گمنام ہو جاتی ہے تو اس کا تذکرہ نہیں کیا جاتا۔
  3. جسے نیکی کا والی بنایا جاتا ہے اس کی نیکی پھیل جاتی ہے۔ [5]

اپنے والد کی وفات کے بعد لوی عرب کے سردار منتخب ہوئے۔ آپ نے کعبہ کے نزدیک ایک کنواں کھودا جس کا نام عسرا تھا جس سے حاجی سیراب ہوتے تھے۔ [6]

اولاد[ترمیم]

لوی بن غالب کو اللہ تعالی نے ماویہ بنت کعب بن القین سے تین بیٹے کعب، عامر اور سامہ پیدا ہوئے۔ [7] آپ کی اولاد میں سات بیٹے تھے۔

  1. کعب
  2. عامر
  3. سامہ
  4. عوف
  5. خزیمہ
  6. سعد
  7. حارث [8]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب https://www.wikitree.com/wiki/Ibn_Gh%C4%81lib-1 — اخذ شدہ بتاریخ: 8 ستمبر 2019
  2. سیرت انسائیکلو پیڈیا تصنیف و تالیف حافظ محمد ابراہیم طاہر گیلانی، حافظ عبد اللہ ناصر مدنی اور حافظ محمد عثمان یوسف جلد دوم صفحہ 49
  3. ضیاء النبی مولف پیر محمد کرم شاہ جلد اول صفحہ 399
  4. سیرت انسائیکلو پیڈیا تصنیف و تالیف حافظ محمد ابراہیم طاہر گیلانی، حافظ عبد اللہ ناصر مدنی اور حافظ محمد عثمان یوسف جلد دوم صفحہ 50
  5. حضور کے آباؤاجداد مولف علامہ یونس مبین صفحہ 152 اور 153
  6. مدرک الطالب فی نسب آل ابی طالب الموسوم بہ معارف الانساب تالیف قمر عباس الاعرجی صفحہ 21
  7. محمد رسول اللہ ﷺ کے آباؤاجداد کا تذکرہ مولف ڈاکٹر محمود الحسن عارف صفحہ 208
  8. سیرت انسائیکلو پیڈیا تصنیف و تالیف حافظ محمد ابراہیم طاہر گیلانی، حافظ عبد اللہ ناصر مدنی اور حافظ محمد عثمان یوسف جلد دوم صفحہ 50