شرومنی اکالی دل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(اکالی دل سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search
شرومنی اکالی دل
Shiromani Akali Dal
ਸ਼੍ਰੋਮਣੀ ਅਕਾਲੀ ਦਲ
صدر Sukhbir Singh Badal
تاسیس 14 سمبر 1920
صدر دفتر Block #6, Madhya Marg
Sector 28, چندی گڑھ
طلبا تنظیم Student Organisation of India[1] (SOI)[2]
یوتھ ونگ Youth Akali Dal
نظریات سکھ مت
پنجابیت[3]
Punjabi Nationalism[4]
سیاسی حیثیت Right-wing[5]
ای سی آئی حیثیت State Party[6]
اتحاد قومی جمہوری اتحاد (بھارت)
لوک سبھا میں نشستیں
4 / 545
/ 545
<div style="background-color:
  1. FF9900; width: خطاء تعبیری: غیر متوقع < مشتغل۔%; height: 100%;">
[7](موجودہ 541 ارکان + 1 اسپیکر)
راجیہ سبھا میں نشستیں
3 / 245
ودھان سبھا میں نشستیں
60 / 117
(پنجاب قانون ساز اسمبلی)
1 / 90
(مجلس قانون ساز ہریانا)
انتخابی نشان
Weighing Balance
ویب سائٹ
www.shiromaniakalidal.net

سکھوں کی ایک مذہبی اور سیاسی جماعت۔ اکالی سنسکرت زبان کا لفظ ہے۔ جس کے معنی غیر فانی کے ہیں۔ اکالی جماعت اکال سے منسوب ہے۔ یہ ایک مذہبی جماعت ہے جو اپنے غلو کی وجہ سے مشہور ہے۔ مہاراجہ رنجیت سنگھ نے مختلف حربوں سے کام لے کر اس کی طاقت مٹا دی تھی۔ اس زمانے میں اکالیوں میں بھولا سنگھ مذہبی تنگ دلی اور تعصب کی وجہ سے بہت بدنام تھا۔ اس جماعت کا مقصد یہ رہا ہے کہ مذہبی بنیادوں پر حکومت کی جائے۔

ہندوستان میں انگریزوں کے تسلط کے بعد اکالیوں کی زیادہ تر توجہ مذہب کی طرف رہی۔ لیکن جب برصغیر میں آزادی کی تحریک شروع ہوئی تو انھوں نے اپنے گورددواروں کو ہندو مہنتوں سے چھڑانے کے لیے تحریک شروع کی جو اکالی تحریک کے نام سے موسوم ہے۔ سر فضل حسین مرحوم کی توجہ سے گرروددوارہ ایکٹ منظور ہوا اور گوردوارے سکھوں کے حوالے کر دیے گئے۔ ماسٹر تارا سنگھ اور سنت فتح سنگھ اسی جماعت کے سربراہ تھے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "SOI"۔
  2. "SOI Clash"۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 اپریل 2014۔
  3. Tribune News Service (8 اکتوبر 2015)۔ "SAD aims to widen reach, to contest UP poll"۔ http://www.tribuneindia.com/news/punjab/sad-aims-to-widen-reach-to-contest-up-poll/132330.html۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 8 اکتوبر 2015۔ External link in |website= (معاونت)
  4. Sarabjit Pandher (3 ستمبر 2013)۔ "In post-Independence India, the SAD launched the Punjabi Suba morcha in the 1960s, seeking the re-organisation of Punjab on linguistic basis."۔ The Hindu۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 ستمبر 2015۔
  5. http://www.frontline.in/static/html/fl1508/15080400.htm
  6. "List of Political Parties and Election Symbols main Notification Dated 18.01.2013"۔ India: Election Commission of India۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل (پی‌ڈی‌ایف) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 9 مئی 2013۔
  7. "Members: Lok Sabha"۔ loksabha.nic.in۔ لوک سبھا سیکریٹریٹ۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2019۔