ایلومینیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
زاصر,  13Al
Aluminium-4.jpg
Aluminum Spectra.jpg
زاصر کے طیفی لائنیں
General properties
زاصر in the دوری جدول
Hydrogen (diatomic nonmetal)
Helium (noble gas)
Lithium (alkali metal)
Beryllium (alkaline earth metal)
Boron (metalloid)
Carbon (polyatomic nonmetal)
Nitrogen (diatomic nonmetal)
Oxygen (diatomic nonmetal)
Fluorine (diatomic nonmetal)
Neon (noble gas)
Sodium (alkali metal)
Magnesium (alkaline earth metal)
Aluminium (post-transition metal)
Silicon (metalloid)
Phosphorus (polyatomic nonmetal)
Sulfur (polyatomic nonmetal)
Chlorine (diatomic nonmetal)
Argon (noble gas)
Potassium (alkali metal)
Calcium (alkaline earth metal)
Scandium (transition metal)
Titanium (transition metal)
Vanadium (transition metal)
Chromium (transition metal)
Manganese (transition metal)
Iron (transition metal)
Cobalt (transition metal)
Nickel (transition metal)
Copper (transition metal)
Zinc (transition metal)
Gallium (post-transition metal)
Germanium (metalloid)
Arsenic (metalloid)
Selenium (polyatomic nonmetal)
Bromine (diatomic nonmetal)
Krypton (noble gas)
Rubidium (alkali metal)
Strontium (alkaline earth metal)
Yttrium (transition metal)
Zirconium (transition metal)
Niobium (transition metal)
Molybdenum (transition metal)
Technetium (transition metal)
Ruthenium (transition metal)
Rhodium (transition metal)
Palladium (transition metal)
Silver (transition metal)
Cadmium (transition metal)
Indium (post-transition metal)
Tin (post-transition metal)
Antimony (metalloid)
Tellurium (metalloid)
Iodine (diatomic nonmetal)
Xenon (noble gas)
Caesium (alkali metal)
Barium (alkaline earth metal)
Lanthanum (lanthanide)
Cerium (lanthanide)
Praseodymium (lanthanide)
Neodymium (lanthanide)
Promethium (lanthanide)
Samarium (lanthanide)
Europium (lanthanide)
Gadolinium (lanthanide)
Terbium (lanthanide)
Dysprosium (lanthanide)
Holmium (lanthanide)
Erbium (lanthanide)
Thulium (lanthanide)
Ytterbium (lanthanide)
Lutetium (lanthanide)
Hafnium (transition metal)
Tantalum (transition metal)
Tungsten (transition metal)
Rhenium (transition metal)
Osmium (transition metal)
Iridium (transition metal)
Platinum (transition metal)
Gold (transition metal)
Mercury (transition metal)
Thallium (post-transition metal)
Lead (post-transition metal)
Bismuth (post-transition metal)
Polonium (post-transition metal)
Astatine (metalloid)
Radon (noble gas)
Francium (alkali metal)
Radium (alkaline earth metal)
Actinium (actinide)
Thorium (actinide)
Protactinium (actinide)
Uranium (actinide)
Neptunium (actinide)
Plutonium (actinide)
Americium (actinide)
Curium (actinide)
Berkelium (actinide)
Californium (actinide)
Einsteinium (actinide)
Fermium (actinide)
Mendelevium (actinide)
Nobelium (actinide)
Lawrencium (actinide)
Rutherfordium (transition metal)
Dubnium (transition metal)
Seaborgium (transition metal)
Bohrium (transition metal)
Hassium (transition metal)
Meitnerium (unknown chemical properties)
Darmstadtium (unknown chemical properties)
Roentgenium (unknown chemical properties)
Copernicium (transition metal)
Nihonium (unknown chemical properties)
Flerovium (unknown chemical properties)
Moscovium (unknown chemical properties)
Livermorium (unknown chemical properties)
Tennessine (unknown chemical properties)
Oganesson (unknown chemical properties)
B

Al

Ga
مگنیصرزاصرچقمین
جوہری عدد (Z)13
Group, periodgroup 13 (boron group), period 3
Blockp-block
Standard atomic weight (Ar)26.9815386(13)
برقی تشکیل[Ne] 3s2 3p1
Electrons per shell
2, 8, 3
Physical properties
Phaseٹھوس
نقطۂ انجماد933.47 کیلون ​(660.32 °C, ​1220.58 °F)
نقطہ کھولاؤ2792 K ​(2519 °C, ​4566 °F)
کثافت near درجہ حرارت کمرہ2.70 g/cm3
when liquid, at m.p.2.375 g/cm3
سخانۂ ائتلاف10.71 جول فی مول
Heat of 294.0 kJ/mol
Molar heat capacity24.200 J/(mol·K)
بخاری دباؤ
پ (پاسکل) 1 10 100 1 کے 10 کے 100 کے
 دح پر (کیلون) 1482 1632 1817 2054 2364 2790
Atomic properties
تکسیدی عددs3, 2[1], 1[2]amphoteric oxide
برقی منفیتPauling scale: 1.61
تائین توانائی
(more)
جوہری رداسempirical: 143 پیکومیٹر
Covalent radius121±4 pm
وانڈروال رداس184 pm
Miscellanea
قلمی ساخت ​(fcc)
Face-centered cubic crystal structure for زاصر
آواز کی رفتار thin rod(rolled) 5,000 m/s (at r.t.)
حرارتی پھیلاؤ23.1 µm/(m·K) (at 25 °C)
حر ایصالیت237 W/(m·K)
مزاحمیت28.2 n Ω·m (at 20 °C)
مقناطیسیتparamagnetic[3]
Young's modulus70 GPa
Shear modulus26 GPa
Bulk modulus76 GPa
Poisson ratio0.35
موس پیمانہ2.75
Vickers hardness167 MPa
Brinell hardness245 MPa
کیمیائی شعبۂ اخلاص اندراجی عدد7429-90-5
Main isotopes of زاصر
ہم جا Abun­dance ہاف لائف (t1/2) اشعاعی تنزل Pro­duct
26Al trace 7.17×105y β+ 1.17 26Mg
ε - 26Mg
γ 1.8086 -
27Al 100% 14 تعدیلوں کیساتھ Al مستحکم ہے
| references | in Wikidata

ایلومینیم یا ایلومینیم (aluminium) ایک چاندی جیسی سفید دھات ہے۔ اس کا نشان Al ہے۔ اسکا جوہری عدد 13 ہے۔ یہ پانی میں عام حالت میں نہیں گھلتا۔

تاریخ

لوگوں نے 1760 سے ایلومینیم پیدا کرنے کی کوشش کی۔ پہلی کامیاب کوشش 1824 میں ڈینمارک کے ماہر طبیعیات اور کیمیا دان ہنس کرسچن آرسٹیڈ نے کی۔ اس نے اشنانصر (potassium) املگام کے ساتھ انآبائی (anhydrous) ایلومینیم سبزداد (aluminium chloride) کا رد عمل ظاہر کیا، جس سے دھات کا ایک گانٹھ قلع کی طرح نظر آتا ہے۔ اس نے اپنے نتائج پیش کیے اور 1825 میں نئی دھات کا نمونہ دکھایا۔ 1827 میں آلمانی کیمیا دان فریڈرک ووہلر نے آرسٹیڈ کے ختم ہونے کو دہرایا لیکن کسی ایلومینیم کی شناخت نہیں کی۔ (اس عدم مطابقت کی وجہ صرف 1921 میں دریافت ہوئی تھی۔) اس نے اسی سال انآبائی ایلومینیم سبزداد کو اشنانصر کے ساتھ ملا کر اور ایلومینیم کا پاؤڈر تیار کر کے اسی طرح کی تجربہ کی۔ 1845 میں وہ دھات کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے تیار کرنے میں کامیاب ہوئے اور اس دھات کی کچھ طبیعی خصوصیات بیان کیں۔

خصوصیات

ایلومینیم بجلی اور حرارت کا ایک بہت اچھا موصل ہے۔ یہ ہلکا اور مضبوط ہے۔ اسے چادروں میں ہتھوڑا لگایا جا سکتا ہے (طروقیہ) یا تاروں میں نکالا جا سکتا ہے (نکلنے والا)۔ یہ ایک انتہائی رد عمل شدہ ہے، حالانکہ یہ سنکنرن مزاحم ہے۔

ایلومینیم کی ایک تازہ غشا (film) نظر آنے والی روشنی کا ایک اچھا انعکاسہ (reflector) ہے اور درمیانی اور دور زیرسرخ شعاعوں کا بہترین انعکاسہ ہے۔

ایلومینیم اپنی سطح پر ایلومینیم اکسید (aluminium oxide) کی ایک چھوٹی، پتلی پرت بنا کر سنکنرن کو روکتا ہے۔ یہ تہہ تیزابساز (oxygen) کو پہنچنے سے روک کر دھات کی حفاظت کرتا ہے۔ سنکنرن تیزابساز کے بغیر نہیں ہو سکتا۔ اس پتلی تہے کی وجہ سے ایلومینیم کی رد عمل نظر نہیں آتی۔ پاؤڈر کے طور پر یہ گرم جلتا ہے۔ استعمال میں آتش بازی کی نمائش اور راکٹی ایندھن شامل ہیں۔

تیاری

خالص ایلومینیم باکسائٹ (bauxite) سے بنایا جاتا ہے، ایک قسم کی چٹان جس میں ایلومینیم اکسید (aluminium oxide) اور بہت سی نجاستیں ہوتی ہے۔ باکسائٹ کو کچل کر صوداصر آبکسید (sodium hydroxide) کے ساتھ رد عمل ظاہر کیا جاتا ہے۔ ایلومینیم اکسید پگھل جاتا ہے۔ اس کے بعد ایلومینیم اکسید کو مائع کرائولائٹ (cryolite) میں تحلیل کیا جاتا ہے، جو ایک نایاب معدنیات ہے۔ کرائولائٹ عام طور پر اگرچہ مصنوعی طور پر تیار کیا جاتا ہے۔ ایلومینیم اکسید کو ایلومینیم اور تیزابساز (oxygen) بنانے کے لیے برق پاشیدگی کیا جاتا ہے۔ ایلومینیم کا سب سے بڑا پیداوار کرنے والا چین ہے۔ چین تقریبا 31،873 کلوٹن ایلومینیم پیدا کرتا ہے۔

ایلومینیم کو پہلے بار ایک قیمتی دھات سمجھا جاتا تھا جو سونے سے بھی زیادہ قیمتی تھا۔ یہ اب درست نہیں ہے کیونکہ جیسے جیسے طرزیات میں بہتری آئی، یہ خالص دھات بنانا سستا اور آسان ہوتا گیا۔

واقعہ

زمین میں

مجموعی طور پر، زمین کی کمیت تقریبا 1.59٪ ایلومینیم ہے۔ زمین کی پرت میں، ایلومینیم سب سے پرچر دھاتی عنصر ہے (8.23٪ کمیت)۔ یہ زمین کی پرت میں تمام عناصر میں تیسرا زیادہ پرچر بھی ہے۔ زمین کی پرت میں بہت سارے چقمید (silicates) ایلومینیم پر مشتمل ہیں۔ لیکن زمین کے غلاف (mantle) کمیت کے لحاظ سے صرف 2.38٪ ایلومینیم ہے۔ ایلومینیم سمندری پانی میں بھی 2 مائکروگرام/کلوگرام کے ارتکاز میں پایا جاتا ہے۔

فیلڈسپارز، زمین کے پرت میں معدنیات کا سب سے عام گروہ، زاچقمید (aluminosilicates) ہیں۔ ایلومینیم معدنیات بریل، کرائولائٹ، لعل (garnets)، اسپنیل، اور فیروزے میں بھی پایا جاتا ہے۔ مقامی ایلومینیم کی اطلاع بحیرے جنوبی چین کے شمال-مشرقی براعظمی ڈھلوان میں سرد سیپز میں ملی ہے۔

خلاء میں

یہ تمام عناصر میں 12واں زیادہ پرچر ہے۔ یہ ان عناصر میں تیسرا زیادہ پرچر ہے جن میں طاق جوہری عدد ہوتے ہیں۔ ایلومینیم کا واحد مستحکم ہمجاء (isotope) ایلومینیم-27 ہے۔ یہ کائنات میں 18واں زیادہ پرچر نویہ (nucleus) ہے۔ یہ بڑے پیمانے والے ستاروں میں فحم (carbon) کے ائتلاف کے بعد پیدا ہوتا ہے جو بعد میں قسم II سپرنووا بن جائے گا: یہ ائتلاف مگنیصر-26 بناتا ہے، جو کہ مفت اولیے (protons) اور تعدیلے (neutrons) کو پکڑتے ہوئے ایلومینیم بن جاتا ہے۔ بنیادی طور پر اب موجود تمام ایلومینیم ایلومینیم-27 ہے؛ ایلومینیم-26 نظام شمسی کے اوائل میں موجود تھا لیکن اب ناپید ہے۔ ایلومینیم-26 کے نشانات جو موجود ہیں وہ بین الستاروی فارغے میں سب سے عام گاما شعاع خارج باز ہے۔

مرکبات

ایلومینیم 3+ تکسیدی حالت میں کیمیائی مرکبات بناتا ہے۔ وہ عمومی طور پر غیر فعال ہیں۔ ایلومینیم سبزداد (aluminium chloride) اور ایلومینیم اکسید (aluminium oxide) مثالیں ہیں۔ بہت کم ہی مرکبات 1+ یا 2+ تکسیدی حالت میں ہوتے ہیں۔

استعمال

خطرات

مزید دیکھیے

حوالہ جات

  1. زاصر یک اکسید
  2. زاصر بنفشداد
  3. عناصر اور غیر نامیاتی مرکبات کی مقناطیسی حساسیت، ہاتھکتاب برائے کیمیا اور طبیعیات 81ویں ایڈیشن، سی آر سی پریس۔

بیرونی روابط