بالی وڈ کے خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

خانز آف بالی وڈ ایک اصطلاح ہے جو اہم مرکزی کردار ادا کرنے والے مرد اداکاروں ، بنیادی ممبئی زبانی طور پر ان فلمی اداکاروں کے لیے استعمال ہوتی ہے جن کے نام خان ہیں اور خاص طور پر یہ اصطلاح بالی وڈ کے تین خانوں کے لیے استعمال ہوتی ہے ؛ عامر خان، شاہ رخ خان اور سلمان خان[1][2]۔ ان تینوں کا آپس میں کوئی رشتہ نہیں لیکن اتفاقاً ان کا خاندانی نام ایک جیسا ہے[2] [3]۔ اوران کی عمر تقریباً ایک ہی جتنی ہے۔ تین خان بھارتی سینما کی تاریخ میں سب سے زیادہ کامیاب اداکار ستارے ہیں۔ مختلف ذرائع سے یہ رپورٹ ملی ہے ان تنخواہوں کا پیکج 50 کروڑ تک ہے جو امریکن ڈالر میں آٹھ ملین تک ہے۔ 1980ء کے آخر تک یہ تینوں خان کامیاب ترین ستارے رہے ہیں۔ 1990ء کی دہائیوں سے تین دہائیوں تک باکس آفس مارولیو سینما یونیورسٹ کے مقابلے پر ان ہی کا غلبہ ہے۔ ہر ایک کو مختلف اوقات میں "بالی وڈ کا بادشاہ " کہا جاتا رہا ہے۔ شاہ رخ خان 1990ء اور 2000ء کی دہائی کا سب سے کامیاب اداکار رہا ہے لیکن 2010ء کے آغاز سے عامر خان عالمی سطح پر سب سے زیادہ کامیابی حاصل کر رہا ہے جب کہ سلمان خان قومی سطح پر سب سے زیادہ کامیاب رہا ہے۔ انہوں نے 6 نیشنل فلم ایوارڈ اور 26 فلم فیئر ایوارڈ کے ساتھ ساتھ عامر نے ایک اکیڈیمی ایوارڈ نامہ بھی جیتا ہے۔ یہ تینوں سب سے زیادہ مشہور بھارتی مسلمان ہیں جن کی شہرت سمندر پار تک ہے اور فلموں میں دنیا کے سب سے مشہور اداکار تسلیم کیے جاتے ہیں۔ انہوں نے ٹاپ ٹین فلموں میں دس میں سے 9 بھارتی فلموں میں مجموعی طور پر اداکاری کی ہے۔ انہوں نے سرکاری طور پر 100 کروڑ کلب کا ریکارڈ قائم کیا۔ ان میں سلمان خان کی فلم " ہم آپ کے ہیں کون " (1994ء) اور شاہ رخ خان کی فلم " دل والے دلہنیا لے جائیں گے " 1995ء اور عامر خان کی فلم "گجنی " 2008ء پہلی نقد 100 کروڑ ثابت ہوئی۔ عامر کی فلم "دنگل " 2016ء نے بالی وڈ میں 1000 کروڑ کا ریکارڈ کلب قائم کیا ہے۔ بیرون ملک چینی مارکیٹوں میں اس کی کامیابی نے 2000 کوریج کلب بنائے جو دنیا بھر میں ان کی اعلیٰ ترین مجموعی فلم بن رہی ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://www.desiblitz.com/content/the-three-khans-of-bollywood
  2. ^ ا ب https://www.forbes.com/sites/robcain/2016/03/20/are-bollywoods-three-khans-the-last-of-the-movie-kings/
  3. "Fab At 50: A Tale Of Three Khans"۔ Huffington Post (انگریزی زبان میں)۔ 8 جون 2015۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔