سببیت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اصطلاح term

سببیت/علیت

Causality

علیت یا سببیت کے اصول کے تحت کسی واقعہ کا کوئی سبب ہوتا ہے۔ مثلاً اگر گیند کو ٹکر ماری جائے تو گیند حرکت کرتا ہے، اس میں اثر "گیند کی حرکت" کا سبب "ٹکر مارنا" تھا۔ یعنی ایک واقعہ دوسرے واقعہ کا سبب بنتا ہے۔ طبیعیات اور دوسری سائنس میں عام طور پر "سببیت کے اصول" کو تسلیم کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ انسانی تاریخ میں بھی کسی نہ کسی طور سببیت کا اصول لاگو سمجھا جاتا ہے۔

بعض اوقات احتمال نظریہ کے تحت بھی سببیہ کی تعریف کی جاتی ہے۔ اگر ایک واقعہ کے رونما ہونے سے دوسرے واقعہ کے وقوع پزیر ہونے کا احتمال بڑھ جائے، تو پہلے واقعہ کو دوسرے واقعہ کا سبب مانا جا سکتا ہے۔ (دیکھو مشروط احتمال

طبیعیات کا شعبہ مقداریہ میکانیات جس کی مساوات ریاضی کی شاخوں احتمال و احصاء کے استعمال سے بنتی ہیں، میں بعض صورتوں میں "قانونِ سببیت" کی نفی ہوتی ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]