بیریلیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
Beryllium,  4Be
Be-140g.jpg
General properties
Pronunciation /bəˈrɪliəm/, bə-RIL-ee-əm
Appearance white-gray metallic
Beryllium in the دوری جدول
سانچہ:Infobox element/periodic table
جوہری عدد (Z) 4
Group, period 2 (alkaline earth metals), period 2
Block s-block
مشابہ عناصر گروہوں کے اجتماعی نام سانچہ:Infobox element/category format
Standard atomic weight (Ar) 9.012182(3)
برقی تشکیل 1s2 2s2
Electrons per shell
2, 2
Physical properties
Phase solid
نقطۂ انجماد 1560 کیلون ​(1287 °C, ​2349 °F)
نقطہ کھولاؤ 2742 K ​(2469 °C, ​4476 °F)
کثافت near درجہ حرارت کمرہ 1.85 g/cm3
when liquid, at m.p. 1.690 g/cm3
سخانۂ ائتلاف 12.2 جول فی مول
Heat of 297 kJ/mol
Molar heat capacity 16.443 J/(mol·K)
بخاری دباؤ
Atomic properties
تکسیدی عددs 2, 1[1]amphoteric oxide
برقی منفیت Pauling scale: 1.57
تائین توانائی
(more)
جوہری رداس empirical: 105[2] پیکومیٹر
calculated: 112 [3] pm
Covalent radius 96±3 pm
وانڈروال رداس 153 pm
Miscellanea
قلمی ساخت سانچہ:Infobox element/crystal structure
آواز کی رفتار thin rod 12870[4] m/s (at r.t.)
حرارتی پھیلاؤ 11.3 µm/(m·K) (at 25 °C)
حر ایصالیت 200 W/(m·K)
مزاحمیت 36 n Ω·m (at 20 °C)
مقناطیسیت diamagnetic
Young's modulus 287 GPa
Shear modulus 132 GPa
Bulk modulus 130 GPa
Poisson ratio 0.032
موس پیمانہ 5.5
Vickers hardness 1670 MPa
Brinell hardness 600 MPa
کیمیائی شعبۂ اخلاص اندراجی عدد 7440-41-7
Main isotopes of beryllium
سانچہ:Infobox element/isotopes header
| references | in Wikidata

بیریلیم یا بلوصر (beryllium) ایک کیمیائی عنصر کا نام ہے جو اپنی علامت (انگریزی نظام میں) Be رکھتا ہے اور اس کا جوہری عدد 4 تسلیم کیا جاتا ہے۔

وجۂ تسمیہ[ترمیم]

اس کا انگریزی نام اصل میں beryl نامی ایک سنگ جواہر سے ماخوذ کیا جاتا ہے جو اپنی رنگت میں شفاف (بے رنگ) اور چمکدار ہوتا ہے ؛ beryl کا لفظ بذات خود پراکرت سے یونانی میں (beryllos) اور پھر لاطینی (beryllus) و فرانسیسی سے ہوتا ہوا انگریزی میں آیا ہے۔ اس کے پراکرت مآخذ کے بارے میں ایک نظریہ یہ بھی بیان کیا جاتا ہے کہ شاید یہ ہندوستان کے شہر بلور سے آیا ہو۔۔ اس کے علاوہ یہ بھی ممکن ہے کہ اس کی اساس عربی ہی ہو اور وہاں سے پراکرت میں داخل ہوا ہو کیونکہ اس قسم کے پتھر (یعنی beryl کو) عربی میں بلور کہا جاتا ہے اور عربی ہی سے یہ اردو زبان میں آیا ہے۔ بہرحال اصل ماخذ پراکرت ہو یا عربی دونوں میں اس کا اردو تلفظ بلور ہی بنتا ہے اور اسی سے بلو کے ساتھ عنصر کا لاحقہ صر (ium) لگا کر اس کا اردو متبادل اختیار کیا جاتا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Beryllium: Beryllium(I) Hydride compound data". bernath.uwaterloo.ca. اخذ کردہ بتاریخ 2007-12-10. 
  2. "Published by J. C. Slater in 1964". 
  3. "Calculated data". 
  4. sound