لیڈی گاگا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
لیڈی گاگا

سٹیفنی جوئَین اَینجلِینا جرمانوٹا (انگریزی: Stefani Joanne Angelina Germanotta) (پیدائش: 28 مارچ 1986)، جو لیڈی گاگا (Lady Gaga) کے نام سے مشہور ہے، ایک امریکی گلوکارہ، گیتکارہ، موسیقار اور ریکارڈ ساز ہیں۔ یہ نام انہوں نے راک بینڈ کوئین کے 'ریڈیو گاگا' نامی گانے سے حاصل کیا۔ سن 2008ء میں، انہوں نے ایک 'دی فیم' نامی البم ریلیز کیا اور بعد میں مزید دو البم ریلیز کیے، 'دی فیم مانسٹر' اور 'بورن دِس وے'۔ انہوں نے مختلف گریمی اور برِٹ اوارڈ جیتے ہیں۔ ان کا موسیقی ڈیوِڈ بوئی، مائیکل جیکسن، میڈونا اور کوئین سے متاثر ہے اور وہ اپنی فیشن، کارکردگی اور میوزک وڈیو کا رنگارنگ اور بھڑکیلا طرز کے لیے معروف ہیں۔ ان کا موسیقی میں کام کے علاوہ، وہ رقاص، فعالیت پسند، تاجر، فَیشن ڈزائنر، اداکارہ اور انسان دوست بھی ہیں۔ وہ اکثر متبادل جنسیت (ایل جی بی ٹی) کے معاملات میں حمایت کرتی ہیں اور ہم جنسی حقوق کے لیے آواز بلند کرتی ہیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

لیڈی گاگا نیو یارک سٹی میں 28 مارچ 1986 کو پیدا ہوئی، جوزف جرمانوٹا، ایک انٹرنیٹ تاجر، ارو سِنتھیا کی سب سی بڑی بیٹی۔ چار کی عمر پر پیانو سیکھنا شروع کیا، پیانو پر اپنا پہلا گانا تیرہ کی عمر پر لکھا اور چودہ کی عمر پر سٹیج پر کارکردگی ادا کرنا شروع کیا۔ گیارہ کی عمر پر، کانوینٹ آف دی سیکرڈ ہارٹ، ایک نجی رومن کیتھولک اسکول میں داخل ہوئیں، جو مین ہٹن کی اوپری مشرق جانب پر واقع تھا، لیکن انہوں نے اکثر کہا ہے کہ ان کا خاندان امیر نہیں تھی، وہ کہتی ہیں کہ میرے والدین کا تعلق نچلے طبقے سے تھا، اس لیے ہمیں سب کچھ کمانے کے لیے محنت کرنی پڑی۔ میری والدہ صبح کے آٹھ بجے سے رات کے آٹھ بجے تک ٹیلی کام میں کام کرتی تھیں اور میرے والد نے بھی ایسے ہی کیا۔" ہائی اسکول میں اداکارہ بنیں اور مرکزی کردار ادا کیے، جیسے 'گائز اینڈ ڈالز' میں اَیڈلیڈ کا کردار اور 'اے فنی تِھنگ ہَیپنڈ آن دی وے ٹو دی فورَم' میں فِلیا کا کردار۔ گاگا نے کہا ہے کہ ان کی مکتبی زندگی "بہت وقف، بہت مطالعہ دوست، بہت با نظم و ضبط" تھی، لیکن اس کے علاوہ "بے خود اعتماد" بھی، جیسے انہوں نے ایک بار انٹرویُو میں بتایا تھا، "میں دیگروں سے کافی الگ تھی اور میں محسوس کرتی تھی کہ میں بہت انوکھی ہوں۔"

سترہ کی عمر پر، لیڈی گاگا جلد ہی نیُو یارک یُونورسٹی کا ٹِش اسکول آف دی آرٹس میں داخل ہوئیں اور گیارہویں سٹریٹ پر یونورسٹی کی چھاترالی میں رہیں۔ وہاں انہوں نے موسیقی پڑھا اور اپنی گیتکاری کی بہتری کے لیے فنون، مذہب، سماجی مسائل اور سیاست کے بارے میں مضمون لکھے۔ گاگا نے محسوس کیا کہ اپنے ہم جماعتوں سے وہ زیدہ تر تخلیقی تھیں۔ "جب سے آپ فن کے بارے میں سوچنا سیکھ لیں، اپنے آپ کو ہی پڑھا سکتے ہیں۔" انہوں نے کہا۔ اپنا سوفومور سال کے دوسرے سمیسٹر کے اختتام، انہوں نے اپنے موسیقی پر غور کرنے کے لیے اسکول چھوڑ دیا۔ ان کے والد نے ان کا ایک سال کا کرایہ ادا کرنا مان لیا، اگر وہ مان لے کہ وہ واپس اسکول جائے گی اگر وہ ناکام ہوئی۔ "میں نے اپنا پورا گھرانہ چھوڑ دیا، سب سے سستہ اپارٹمنٹ رہنے کے لیے ڈھونڈا اور ایک سال کے لیے گند ہی کھایا جب تک کوئی مجھے سنے۔" انہوں نے بتایا ہے کہ پندرہ کی عمر سے اسے عدم اشتہا (بُلِیمیا) اور جوع البقرہ (اَینوریکسیا) ہوا ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]