پاکستان میں جنگل بانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

پاکستان میں جنگل بانی (forestry)، پاکستان کا ایک اہم شعبہ ہے۔ پاکستان میں جنگل بانی لکڑی،کاغذ،لیٹکس اور طب جیسے دیگر اہم اشیاء کا ذریعہ ہے۔ پاکستان کے کُل رقبے کا صرف 4 فیصد جنگلات ہیں جو زیادہ تر شمالی حصے میں واقع ہیں۔

اعداد و شمار[ترمیم]

کل جنگلاتی علاقہ (ماخذ)
قسم پاکستان ایشیا دنیا
کُل جنگلاتی علاقہ 2000ء (000 ہیکٹر) 2,361 504,180 3,869,455
قدرتی جنگلاتی علاقہ در 2000ء (000 ہیکٹر ) 1,381 375,824 3,682,722
شجر کاری علاقہ در 2000ء (000 ہیکٹر ) 980 110,953 186,733
کل خشک علاقہ در 1981ء (000 ہیکٹر) 72,524 1,078,121 5,059,984
جنگلات (فیصد) ~3% ~20% ~29%

اقسام[ترمیم]

ماحولیاتی نظام والے خطے 1993ء میں (مآخذ)
قسم ماحولیاتی نظام پاکستان ایشیا دنیا
جھاڑی،لکڑی اور گھاس والا علاقہ 36% 37% 37%
ویرل یا سبزیوں کا علاقہ; برف باری 34% 10% 16%
فصل اور سبزی دار علاقہ 28% 34% 20%
گیلا اور نمی دار علاقہ 1% 2% 3%

استعمال[ترمیم]

پاکستان میں جنگلات سے مختلف قسم کے اشیاء حاصل کیے جاتے ہیں جن میں لکڑی،طب،لیٹکس،فیول وڈ اور کاغذ جیسے اہم اشیا شامل ہیں، اس کے علاوہ جنگلات بہت سے انسانوں اور جانوروں کے خوراک کا ذریعہ بھی ہے۔ جنگلات جانوروں کے زندگیوں کو تحفظ دیتے ہیں اور انسانی صحت میں انتہائی اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ جو علاقے جنگلات کے زیادہ قریب ہوتے ہیں ان میں باقی علاقوں کے بہ نسبت بیماریاں بہت کم پائے جاتے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ جنگلات ماحول سے آلودگی جیسے ناسور سے ماحول کو بچاتے ہیں۔

سالانہ پیداوار، 1996 سے 1998 تک (مآخذ)
قسم پاکستان ایشیا دنیا
کل پیداوار (000m³) 31,528 1,111,958 3,261,621
فیول وڈ پیداوار (000m³) 29,312 863,316 1,739,504
صنعتی پیداوار (000m³) 2,217 268,470 1,522,116
کاغذ (ایک ہزار میٹرک ٹن) 619 88,859 313,206

مزید[ترمیم]