مارٹن لوتھر کنگ جونیئر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
مارٹن لوتھر کنگ جونیئر

مارٹن لوتھر کنگ جونیئر (انگریزی: Martin Luther King, Jr.) (پیدائش: 15 جنوری 1929ء اٹلانٹا - وفات: 4 اپریل 1968ء میمفس) ایک امریکی پادری، حقوق انسانی کے علمبردار اور افریقی-امریکی شہری حقوق کی مہم کے اہم رہنما تھے۔ آپ نے امریکہ میں یکساں شہری حقوق کے لیے زبردست مہم چلائی۔ کم از کم دو عیسائی گرجاؤں نے کنگ کو شہید کا درجہ دیا۔ انہوں نے 1955ء کے منٹگمری بس مقاطعہ کی قیادت کی اور 1957ء میں جنوبی عیسائی قیادت اجلاس کے قیام میں مدد دی، اور اس کے پہلے صدر بنے۔ کنگ کی کوششوں کے نتیجے میں 1963ء میں واشنگٹن کی جانب مارچ کیا گیا، جہاں کنگ نے اپنی شہرۂ آفاق "میرا ایک خواب ہے" (I Have a Dream) تقریر کی۔ انہوں نے شہری حقوق کی مہم کے حوالے سے عوامی شعور اجاگر کیا اور امریکہ کی تاریخ کے عظیم ترین مقررین میں سے ایک کی حیثیت سے اپنی شناخت مستحکم کی۔

1964ء میں نسلی تفریق اور امتیاز کے خلاف شہری نافرمانی کی تحریک چلانے اور دیگر پرامن انداز احتجاج اپنانے پر لوتھر کنگ کو نوبل امن انعام سے نوازا گیا۔ آپ اس اعزاز کو حاصل کرنے والے سب سے کم عمر شخص تھے۔ 1968ء میں اپنے قتل سے پہلے آپ نے غربت کے خاتمے اور جنگ ویتنام کی مخالفت کے لیے کوششیں کی اور دونوں کے حوالے سے مذہبی نقطہ نظر سامنے لائے۔ 4 اپریل 1968ء کو میمفس، ٹینیسی میں لوتھر کنگ کو قتل کر دیا گیا۔

1977ء میں انہیں بعد از وفات صدارتی تمغۂ آزادی اور 2004ء میں کانگریسی طلائی تمغا سے نوازا گیا۔ 1986ء میں یوم مارٹن لوتھر کنگ جونیئر کو امریکہ میں قومی تعطیل قرار دیا گیا۔ ٹائم میگزین نے 1963ء میں آپ کو "سال کی شخصیت" قرار دیا تھا۔