ولبھ بھائی پٹیل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
سردار ولبھ بھائی پٹیل

ولبھ بھائی پٹیل (31 اکتوبر 1875ء15 دسمبر 1950ء) بھارت کے ایک سیاسی و سماجی رہنما تھے، جنہوں نے تحریک آزادئ ہند اور بعد از تقسیم ہند بھارت کی تکمیل میں اہم کردار ادا کیا۔ بھارت اور دنیا بھر میں انہیں 'سردار' کے نام سے جانا جاتا تھا اس لیے آپ سردار ولبھ بھائی پٹیل بھی کہلاتے ہیں۔

سردار کا تعلق بھارت کی ریاست گجرات سے تھا اور آپ کے کامیاب وکیل تھے۔ آپ نے سول نافرمانی کی تحریک میں گجرات کے عوام کو متحد کیا جو برطانوی راج کی ظالمانہ راج نیتی کے خلاف ایک زبردست احتجاج تھا۔ اس کردار کے باعث آپ گجرات کے موثر ترین رہنماؤں میں سے ایک ہو گئے۔ بعد ازاں آپ انڈین نیشنل کانگریس کے اعلیٰ ترین عہدوں تک پہنچے اور اپنا بھرپور کردار ادا کیا۔ آپ نے 1934ء اور 1937ء کے انتخابات میں کانگریس کو اور بعد ازاں ہندوستان چھوڑ دو تحریک کو منظم کیا۔

آپ نے بعد از تقسیمِ ہند بھارت کے وزیر داخلہ اور نائب وزیر اعظم کی حیثیت سے موجودہ متحدہ بھارت کی تشکیل میں اہم کردار ادا کیا۔ اس سلسلے میں آپ نے بھرپور عسکری قوت کا مظاہرہ کیا اور کئی ریاستوں کو وفاقِ بھارت میں شامل کیا۔ اس کاروائی کے باعث انہیں 'بھارت کا مرد آہن' (Iron man of India) کہا گیا۔ دراصل 3 جون کے منصوبے کے تحت ہندوستان بھر کی تقریباً 600 امارتوں میں مقامی نوابوں کو یہ اختیار دیا گیا تھا کہ وہ بوقت تقسیم بھارت یا پاکستان جس میں شامل ہونا چاہیں اپنی مرضی کے مطابق شامل ہو سکتے ہیں۔ 15 اگست 1947ء کی حتمی تاریخ تک سوائے تین ریاستوں کے تقریباً تمام ریاستیں بھارتی دباؤ کو برداشت نہ کر سکیں اور بھارت میں شمولیت کا فیصلہ کر لیا۔ یہ تین ریاستیں جموں و کشمیر، جوناگڑھ اور حیدرآباد تھیں۔ ان تینوں ریاستوں کو عسکری قوت کے ذریعے بھارت میں شامل کیا گیا۔