کاجول دیوگن مکھرجی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کاجول
(انگریزی میں: Kajol ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Kajol at Karan Johar's 40th birthday bash at Taj Lands End (24).jpg
کاجول کرن جوہر کی 40ویں سالگرہ بیش تاج لیندز اینڈ پر، 25 مئی 2012۔

معلومات شخصیت
پیدائش 5 اگست 1974ء (عمر 47 سال)
ممبئی، مہاراشٹر، بھارت
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قد 1.61 میٹر  ویکی ڈیٹا پر (P2048) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات اجے دیوگن (شادی۔1999–تاحال)
اولاد 2
تعداد اولاد 2   ویکی ڈیٹا پر (P1971) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدین
والدہ تنوجہ  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
عملی زندگی
پیشہ فلمی اداکارہ
پیشہ ورانہ زبان ہندی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دور فعالیت 1992–2001, 2006–2010
کارہائے نمایاں دل والے دلہنیا لے جائیں گے،  کچھ کچھ ہوتا ہے،  کبھی خوشی کبھی غم،  دیوی (2020 فلم)  ویکی ڈیٹا پر (P800) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

کاجول (بنگلہ زبان : কাজল দেবগন Kajol Debgon)، ہندی فلموں کی ایک مشہور اداکارہ ہیں، کاجول پانچ اگست 1974 کو ہندوستانی ریاست مہارشٹرا کے شہر ممبئی میں پیدا ہوئیں، [1] ان کی والدہ اداکار تنوجا مراٹھی تھیں اور نانی شوبھنا سمرتھ بھی اداکارہ تھیں۔ کاجول کے والد شومُو مکھرجی - جو دل کے عارضے میں گرفتارہونے کے بعد سن 2008 میں انتقال کر گئے تھے ، ایک فلم ہدایتکار اور فلمساز تھے[2]۔ ان کی چھوٹی بہن تنشا بھی اب فلموں میں کام کر رہی ہیں [3] ۔کاجل کی پھوپھو ، جوہی مکھرجی اور دیب مکھرجی ، فلمساز ہیں، جبکہ ان کے پھوپھو اور دادا ، بالترتیب ، ششادھر مکھرجی اور کمارسن سمرت ، فلمساز تھے [4] [5]۔ کاجول کی کزنز رانی لمکھرجی ، شربنی مکھرجی اور موہنیش بہل بھی بالی ووڈ اداکار ہیں جبکہ ایان مکھرجی ایک ہدایتکار ہیں۔ [5][6][7][8] سنہ 2019 میں ایک انٹرویو کے دوران ، کاجل نے بتایا کہ وہ انگریزی ، ہندی اور مراٹھی بولتی ہیں ، اور "بنگالی زبان کو سمجھ سکتی ہیں"۔

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

کاجول خود کو بچپن میں "انتہائی شرارتی" بیان کرتی ہیں، وہ بہت چھوٹی عمر سے ہی بہت ضدی اور دلکش تھیں [9]۔ جب وہ جوان ہوئیں تو ان کے والدین الگ ہو گئے تھے لیکن تنوجا کے مطابق کاجول اس تقسیم سے متاثر نہیں ہوئی تھیں کیونکہ "ہم نے [اس کے] سامنے کبھی بھی بحث نہیں کی" [10]۔ کاجول کی دیکھ بھال ان کی دادی کی نانی کرتی تھی ، جنہوں نے

"مجھے کبھی یہ محسوس نہیں ہونے دیا کہ میری والدہ مجھ سے دور رہ کر کام کر رہی ہیں [11]۔"

کاجول کے مطابق ، اس کی والدہ نے بہت چھوٹی عمر میں ہی اس میں آزادی کا جذبہ پیدا کر دیا تھا۔ دو الگ الگ ثقافتوں کے مابین پرورش پزیر ہونے پر ، اسے اپنی والدہ سے "مہاراشٹری عملیت پسندی" اور اپنے والد سے "بنگالی مزاج" ورثہ میں ملا [12]۔ کاجول کی تعلیم بورڈنگ اسکول میں ہوئی جس کا نام سینٹ جوزف کانونٹ اسکول ، پانچگانی ہے۔ اپنی تعلیم کے علاوہ ، اس نے غیر نصابی سرگرمیوں ، جیسے رقص میں بھی حصہ لیا [12]۔

کیریئر[ترمیم]

کاجول نے اپنے فلمی سفر کا آغاز 1992 میں فلم 'بے خودی' سے کیا، جس میں انہوں نے رادھا کا کردار اداکیا تھا، اس فلم کو باکس آفس پر کوئی خاص کامیابی نہ مل سکی، اس فلم کو باکس آفس پر کوئی خاص کامیابی نہ مل سکی لیکن اس فلم نے انھیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچا دیا۔ جبکہ 1993 میں فلم بازیگر میں انہوں نے پہلی بار بولی وڈ کنگ شاہ رخ خان کے ساتھ اپنی بے ساختہ اداکاری کے جوہر دکھائے اور فلم کو باکس آفس پر شاندار کامیابی حاصل ہوئی۔ بازیگر، یہ دل لگی، دل والے دلہنیا لے جائیں گے، عشق، دشمن، پیار کیا توڈرنا کیا، کچھ کچھ ہوتا ہے، کبھی خوشی کبھی غم، فنا، یو می اور ہم، وی آر فیملی اور مائی نیم از خان کاجول کی مشہور فلمیں ہیں۔[13]

24 فروری 1999میں کاجول نے اداکار اجے دیوگن کو زندگی کا ساتھی بنا لیا۔ ان کی ایک چھوٹی بیٹی ہے جس کا نام نيسا ہے اور ایک بیٹا جس کا نام یُگ ہے۔ وہ اجے دیو گن اور اپنے 2 بچوں کے ساتھ خوش وخرم زندگی گزار رہی ہیں۔[14]

کاجول کے نام کل 6 فلم فیئر ہیں، جن میں سے 5 بہترین اداکارہ کے ایوارڈ ہیں جو خود ایک ریکارڈ ہے، یہ ریکارڈ اداکارہ نوتن کو بھی حاصل ہے جو کاجول کی سگی خالہ ہیں۔ کاجول نے منفی کردار بھی بخوبی نبھائے جن میں فلم 'گپت' بھی شامل ہے جس کے لیے انہیں بہترین منفی کردار (ویلن) کے فلم فئیر ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔ کاجول کو2011 میں ہندوستان کے سب سے بڑے سویلین اعزاز پدما شری سے بھی نوازا گیا۔[15]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "کاجول". اردو پوائنٹ. 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 ستمبر 2016. 
  2. Dawar 2006, p. 62.
  3. Singh, Suhani (30 November 1999). "The Pulp Prodigy: Ayan Mukerji ready to enter the big league of Bollywood". انڈیا ٹوڈے. 11 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 11 نومبر 2020. 
  4. Varma، Anuradha (14 June 2009). "In Bollywood, everyone's related!". دی ٹائمز آف انڈیا. 19 دسمبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 جون 2012. 
  5. ^ ا ب Mathur، Vartika (3 September 2009). "Identity crisis". دی ہندو. 27 اگست 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 11 نومبر 2020. 
  6. "Actor Mohnish Behl's father dies in fire". Rediff.com. 4 August 2004. 06 اگست 2004 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 11 نومبر 2020. 
  7. "Waking up Ayan". میڈ ڈے. 12 August 2008. 03 اپریل 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 جنوری 2012. 
  8. Choudhary، Anuradha (13 April 2012). "Kajol: A Mother's Role is More Defined". iDiva. 09 جون 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 جون 2012. 
  9. "The agony & ecstasy of being Tanuja". The Times of India. 10 August 2003. 25 ستمبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 جون 2012. 
  10. "When Kajol was head girl". Rediff.com. 22 August 2007. 07 جون 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2012. 
  11. "Kajol shoots for a short film on education and literacy". Mid Day. 19 April 2012. 30 جون 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 02 جون 2012. 
  12. ^ ا ب Bose، Derek (15 June 2003). "Portrait of a portraitist". The Tribune. 03 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 جنوری 2021. 
  13. "کاجول". جیو اردو. 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 ستمبر 2016. 
  14. "بھارتی اداکارہ کاجول". دی ایث نیوز. 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 ستمبر 2016. 
  15. "ایور گرین کاجول". ڈان نیوز. 5 اگست 2014. 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 5 اگست 2014.