2011ء تا 2013ء سعودی عرب میں احتجاج

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
2011ء تا 2013ء سعودی عرب میں احتجاج
مضامین بسلسلہ عرب بہار
Saudi Arabia (orthographic projection).svg
تاریخ 11 مارچ 2011 – 24 دسمبر 2012
(1 سال، 11 مہینا، 3 دن)
مقام سعودی عرب24°39′00″N 46°46′01″E / 24.65°N 46.767°E / 24.65; 46.767متناسقات: 24°39′00″N 46°46′01″E / 24.65°N 46.767°E / 24.65; 46.767
وجوہات

اہداف

طریقہ کار

حاصل مراعات

فریق تنازع
سرکردہ رہنما

Flag of سعودی عرب انسانی حقوق کے محافظ

Flag of سعودی عرب آزاد حزب اختلاف رہنما

تعداد
مظاہرین:ہزاروں[27][28]
آن لائن مہم:26,000[29]
متاثرین
اموات:17 تصدیق شدہ
زخمی:100+[30]
گرفتار: ریاض: 50;[31][32][33] صوبہ الشرقيہ: 145[16]
اموات:1 تصدیق شدہ

2011ء تا 2013ء سعودی عرب میں احتجاج، عرب بہار کا حصہ تھا، عرب بہار کا آغاز 2011ء میں تونس انقلاب سے ہوا۔ یہ احتجاج 2011ء میں جدہ اور صاطمہ کی سڑکوں پر خودسوزی کے ساتھ شروع ہوا۔[34][35][36] شیعیت کے خلاف تعصب برتنے پر یہ احتجاج قطیف، ریاض اور عوامیہ نامی شہروں میں ہوا۔[37][38]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Laessing، Ulf؛ Alsharif، Asma (5 February 2011)۔ "Saudi women protest, web activists call for reform"۔ Swiss Info۔ روٹیرز (enA)۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ16 February 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 16 February 2011۔ 
  2. ^ 2.0 2.1 "Voters register for Saudi municipal elections"۔ الجزیرہ۔ 23 April 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ25 April 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 25 April 2011۔ 
  3. ^ 3.0 3.1 3.2 al-Huwaider، Wajeha (23 May 2011)۔ "The Saudi woman who took to the driver's seat"۔ France 24۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ23 May 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2011-05-23۔ 
  4. "Corruption in Saudi Arabia’s Government reaches All Time Highs"۔ Islam Times۔ 1 December 2009۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-07-14۔ 
  5. Kawach، Nadim (17 April 2011)۔ "Saudi public sector hit by corruption"۔ Emirates 24/7۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ14 July 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-07-14۔ 
  6. "Saudi protests against unemployment"۔ الاہرام (enA)۔ روٹیرز (enA)۔ 9 January 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ14 July 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-07-14۔ 
  7. Alsharif، Asma؛ Jason Benham (10 April 2011)۔ "Saudi unemployed graduates protest to demand jobs"۔ روٹیرز (enA)۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ14 July 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-07-14۔ 
  8. al-Alawi، Irfan (1 April 2011)۔ "Saudi Arabia's anti-protest fatwa is transparent"۔ The Guardian۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ2 April 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2 April 2011۔ 
  9. Jansen، Michael (19 March 2011)۔ "Saudi king announces huge spending to stem dissent"۔ The Irish Times۔ اخذ کردہ بتاریخ 3 April 2011۔ 
  10. al-Saeri، Muqbil (March 2011)۔ "A talk with Peninsula Shield force commander Mutlaq Bin Salem al-Azima"۔ Asharq al-Awsat۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ29 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 29 March 2011۔ 
  11. "Saudi Shi'ites protest, support Bahrain brethren"۔ روٹیرز (enA)۔ 16 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ17 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 17 March 2011۔ 
  12. Benham، Jason (25 March 2011)۔ "Hundreds of Saudi Shi'ites protest in east"۔ روٹیرز (enA)۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ25 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 25 March 2011۔ 
  13. http://www.yementimes.com/en/1827/report/4483/Al-Nimr%E2%80%99s-death-sentence--triggers-protest.htm
  14. Cockburn، Patrick (5 October 2011)۔ "Suadi Police open fire on civilians"۔ The Independent۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ15 January 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-01-15۔ 
  15. "Saudis begin nationwide mosque sit-in"۔ Press TV۔ 23 December 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ17 January 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-01-18۔ 
  16. ^ 16.0 16.1 "Saudi Arabia: Arrests for Peaceful Protest on the Rise"۔ نگہبان حقوق انسانی۔ 27 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ31 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 31 March 2011۔ 
  17. al-Suhaimy، Abeed (23 March 2011)۔ "Saudi Arabia announces municipal elections"۔ Asharq al-Awsat۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ2 April 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2 April 2011۔ 
  18. Abu-Nasr، Donna (28 March 2011)۔ "Saudi Women Inspired by Fall of Mubarak Step Up Equality Demand"۔ Bloomberg۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ2 April 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2 April 2011۔ 
  19. "Saudis vote in municipal elections, results on Sunday"۔ Oman Observer۔ AFP۔ 30 September 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ14 December 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2011-12-14۔ 
  20. Alsharif، Asma (8 August 2012)۔ "Saudi authorities crack down on rights campaigners: activists"۔ روٹیرز (enA)۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ14 August 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-08-14۔ 
  21. Ottaway، David B. (3 August 2012)۔ "Saudi Arabia's Race Against Time"۔ Woodrow Wilson International Center for Scholars۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ14 August 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-08-14۔ 
  22. Rosie Bsheer (7 May 2012)۔ "Saudi Revolutionaries: An Interview"۔ Jadaliyya۔ اخذ کردہ بتاریخ 12 November 2012۔ 
  23. "Saudi-Arabiens Mächtige werden nervös"۔ Handelsblatt (German زبان میں)۔ DPA۔ 2 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ5 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 3 March 2011۔ 
  24. "Report: Saudi Facebook activist planning protest shot dead"۔ Monsters and Critics۔ DPA۔ 2 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ2 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2 March 2011۔ 
  25. Bustamante، Tom (2 March 2011)۔ "Iraq Oil Refinery Attack Shows Need for EarthSearch (ECDC) Systems"۔ Wall Street Newscast۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ2 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2 March 2011۔ 
  26. Matthiesen، Toby (23 January 2012)۔ "Saudi Arabia: the Middle East's most under-reported conflict"۔ دی گارڈین۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ23 January 2012 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-01-23۔ 
  27. "Several injured in Saudi Arabia protest"۔ Press TV۔ March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ18 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 18 March 2011۔ 
  28. "Kuwait Navy set for Bahrain - Saudi Shias Rally"۔ Arab Times۔ 18 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ19 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 19 March 2011۔ 
  29. E، Sara (6 March 2011)۔ "Saudi Facebook Administrator Faisal Ahmed Abdul-Ahadwas reportedly shot as Saudi Arabia bans protests ahead of its Day of Rage"۔ EU-digest۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ9 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 March 2011۔ 
  30. "Saudi police wound 3 Shiite protesters: witness"۔ France 24۔ AFP۔ 10 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ10 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 10 March 2011۔ 
  31. "Saudi police break up protest outside Riyadh interior ministry"۔ International Business Times۔ 21 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ21 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 21 March 2011۔ 
  32. Chulov، Martin (21 March 2011)۔ "Egyptians endorse reforms but Arab discontent simmers"۔ The Guardian۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ21 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 21 March 2011۔ 
  33. "Women remain barred from voting as Saudi Arabia announces elections"۔ The National۔ AP/Bloomberg۔ 23 March 2011۔ وثق شدہ اصل جمع شدہ22 March 2011 کو۔ اخذ کردہ بتاریخ 22 March 2011۔ 
  34. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ saudi_selfimmo65yr نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  35. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ Montreal نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  36. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ Reuters_Dozens_detained نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  37. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ PressTV_PreRage نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  38. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ ThReut_demosillegal نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔