وخی زبان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
وخی
x̌ik zik
مستعمل افعانستان (9,600), چین (6,000), پاکستان (9,100), تاجکستان (7,000), روس (6,000)
واطن مکلمین 40,000  (date missing)
خاندانہائے زبان
خطات عربی, سیریلک, لاطینی
رموزِ زبان
آئیسو 639-3 wbl
Linguasphere 58-ABD-c
وخی کتاب کا سرورق

وخی پاکستان کے صوبہ گلگت بلتستان کے علاقے وادی گوجال، وادی اشکومن اور وادی یاسین کے سرحدی علاقوں اور صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع چترال کی وادی بروغل میں بولی جانے والی زبان ہے۔

پاکستان کے علاوہ وخی زبان افغانستان کے صوبہ بدخشان، وخان، تاجکستان کے علاقے گورنو بدخشان اور چین کے صوبہ سنکیانگ کے سرحدی علاقوں میں بھی بولی جاتی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق وخی بولنے والوں کی آبادی تقریبا ایک لاکھ نفوس پر مشتمل ہے۔

وخی کا شمار پامیری زبانوں کے گروہ میں ہوتا ہے۔

وخی زبان کو لاحق خطرات[ترمیم]

اقوام متحدہ کے ادارے یونیسکو نے وخی زبان کو مسقبل میں ناپید ہونے والی زبانوں کی فہرست میں شامل کیا ہے۔ وخی زبان کو رومن اور روسی رسم الخط میں لکھنےکی کوششیں کی جارہی ہیں، لیکن اب تک کوئی معیاری رسم الخط رائج کرنے میں کامیابی نہیں ہوئی ہے۔ پاکستان میں وخی زبان کے سب سے مشہور شاعر نذیر احمد بلبل ہیں۔ ان کی شاعری رومانوی اور سماجی موضوعات پر مبنی ہے۔ ریڈیو پاکستان گلگت سے وخی زبان میں روزانہ ایک بلیٹن نشر کیا جاتاہے، جو زبان کی ترویج کے لیے ناکافی سمجھی جاتی ہے۔