شاہ عبداللہ اقتصادی شہر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شاہ عبداللہ اقتصادی شہر
King Abdullah Economic City
مدينة الملك عبدالله الإقتصادية
شاہ عبداللہ اقتصادی شہر
شاہ عبداللہ اقتصادی شہر
صوبہ صوبہ المکہ
حکومت
 • چیئرمین محمد بن علی الابار
 • سی ای او فہد الرشید
رقبہ
 • کل 173 کلو میٹر2 (67 مربع میل)
 • زمینی 168 کلو میٹر2 (65 مربع میل)
 • آبی 5 کلو میٹر2 (2 مربع میل)
ویب سائٹ http://www.kaec.net

شاہ عبد اللہ اقتصادی شہر (King Abdullah Economic City) (عربی: مدينة الملك عبد الله الإقتصادية) سعودی عرب کے بادشاہ عبداللہ بن عبدالعزیز کی طرف سے 2005ء میں اعلان کردہ ایک بہت بڑا منصوبہ ہے۔

جائزہ[ترمیم]

شاہ عبد اللہ اقتصادی شہر 173 مربع کلومیٹر (66.8 مربع میل) کے مجموعی ترقیاتی علاقے کے ساتھ جدہ سے 100 کلومیٹر شمال میں بحیرہ احمر کے ساحل پر واقع ہے۔ شہر مکہ اور مدینہ کے مقدس اسلامی شہروں میں سے تقریبا ایک گھنٹے بذریعہ گاڑی اور طیارے سے تمام مشرق وسطی کے دار الحکومت شہروں سے ایک گھنٹے کی مسافت پر واقع ہے۔ شہر کی کل لاگت 86 بلین امریکی ڈالر ہے۔ شہر ملک کی نوجوان کے لیے ایک ملین ملازمتیں فراہم کرنے میں مدد دے گا۔[1][2]

شہر کے اجزاء[ترمیم]

صنعتی منطقہ[ترمیم]

صنعتی منطقہ کا رقبہ تقریبا 63 مربع کلومیٹر ہے۔

بندرگاہ[ترمیم]

بندرگاہ کا رقبہ تقریبا 13.8 مربع کلومیٹر ہے۔

رہائشی علاقے[ترمیم]

رہائشی علاقوں میں 260،000 اپارٹمنٹس اور 56،000 ولا شامل کرنے کا منصوبہ ہے۔

سمندری تفریح گاہ[ترمیم]

شاہ عبداللہ یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی

تفریح گاہ علاقے مقامی اور بین الاقوامی سیاحوں دونوں کو متوجہ کرنے کے لیے خصوصی خدمات اور سہولیات کا منصوبہ بنایا جائے گا۔

تعلیمی منطقہ[ترمیم]

تعلیمی منطقہ دو تحقیق اور ترقی پارکوں کے علاوہ کثیر جامعاتی کیمپس پر مشتمل کرنے کا منصوبہ ہے۔

مرکزی کاروباری ضلع[ترمیم]

مرکزی کاروباری ضلع 3.8 مربع کلومیٹر پر محیط دفاتر کی جگہ، ہوٹل اور مخلوط استعمال کے تجارتی مقامات کی پیش کش کرنے کا منصوبہ ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "BBC - New cities rise from Saudi desert"۔ BBC News۔ جون 11, 2008۔ مورخہ 6 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ جنوری 5, 2010۔
  2. Jad Mouawad (جنوری 20, 2008)۔ "نیو یارک ٹائمز - The Construction Site Called Saudi Arabia"۔ نیو یارک ٹائمز۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ مئی 7, 2010۔