شب قدر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
شب قدر/لیلۃ القدر
Laylat-al-qadr.jpg
تلاوت قرآن شب قدر میں ایک اہم کام ہے۔
سرکاری نام ليلة القدر
عرفیت شب قدر، قیمتی رات، حکم کی رات، اقدامات کی رات
منانے والے مسلمان
اہمیت نماز تہجد اور توبہ،
محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم پر پہلی وحی نازل ہوئی
رسومات نفلی نمازیں، تلاوت قرآن، اعتکاف، نماز تہجد
تاریخ مضمون دیکھیں

اسلامی مہینے رمضان کے آخری عشرے کی طاق راتوں میں سے ایک رات جس کے بارے میں قرآن میں سورہ قدر کے نام سے ایک سورت بھی نازل ہوئی ہے۔ اس رات میں عبادت کرنے کی بہت تاکید ہے۔اکثر علماء کا خیال ہے کہ یہ 27ویں رات ہے۔

قرآن میں شب قدر[ترمیم]

قرآن مقدس میں اس کا ذکر خاص انداز میں کیا گیا ہے۔
إِنَّا أَنزَلْنَاهُ فِي لَيْلَةِ الْقَدْرِ • وَمَا أَدْرَاكَ مَا لَيْلَةُ الْقَدْرِ • لَيْلَةُ الْقَدْرِ خَيْرٌ مِّنْ أَلْفِ شَهْرٍ • تَنَزَّلُ الْمَلَائِكَةُ وَالرُّوحُ فِيهَا بِإِذْنِ رَبِّهِم مِّن كُلِّ أَمْرٍ • سَلَامٌ هِيَ حَتَّى مَطْلَعِ الْفَجْرِ

بے شک ہم نے اسے شب قدر میں اتارا ٭ اور تم نے کیا جانا، کیا شب قدر؟ ٭ شب قدر ہزار مہینوں سے بہتر ٭ اس رات میں فرشتے اور جبریل اترتے ہیں اپنے رب کے حکم سے، ہر کام کے لئے، وہ سلامتی ہے صبح چمکنے تک۔[1]

تاریخ[ترمیم]

اہل سنت[ترمیم]

27 رمضان انگریزی تاریخ [2]
1435 23 جولائی 2014
1436 13 جولائی 2015
1437 2 جولائی 2016

اہل تشیع[ترمیم]

23 رمضان انگریزی تاریخ [3]
1436 10 جولائی 2015
1437 27 جون 2016

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]