مرزا طاہر احمد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مرزا طاہر احمد
KhalifaIV Surrey.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 18 دسمبر 1928(1928-12-18)
قادیان، برطانوی ہند کے صوبے اور علاقے
وفات اپریل 19، 2003(2003-40-19) (عمر  74 سال)
لندن، انگلستان
مدفن ٹلفورڈ  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت (26 جنوری 1950–)
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند (–14 اگست 1947)
Flag of India.svg ڈومنین بھارت (15 اگست 1947–26 جنوری 1950)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب احمدیہ
زوجہ سیدہ آصفہ بیگم (ش- 1957–1992)
والد مرزا بشیر الدین محمود
والدہ سیدہ مریم بیگم
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ پنجاب
گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور
پیشہ مترجم،  معالج بالمثل،  مصنف  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Unterschrift von Mirza Tahir Ahmad.jpg
 
ویب سائٹ
ویب سائٹ The Tahir Foundation
The Tahir Archive

مرزا طاہر احمد قادیانی جماعت کے چوتھے خلیفہ تھے۔

خاندانی پس منظر

مرزا طاہر احمد جماعت احمدیہ کے بانی مرزا غلام احمد کے بیٹے مرزا بشیر محمود احمد کے ہاں قادیان میں پیدا ہوئے۔ والدہ کا نام سیدہ مریم بیگم تھا جو ان کی نسبت سے ام طاہر کی کنیت سے مشہور ہوئیں۔

تعلیم

ابتدائی تعلیم قادیان ہی میں حاصل کی۔ گریجویشن کے بعد انہوں نے ن میں قائم قادیانی جماعت کی نظریاتی درسگاہ جامعہ احمدیہ سے ’شاہد‘ کی سند حاصل کی۔ ازاں بعد انہوں نے ڈھائی برس تک لندن، میں انگریزی زبان کی تعلیم حاصل کی۔

خدمات

اکتوبر انیس سو اٹھاون میں وہ اپنی جماعت کے ادارے ’وقف جدید‘ کے سربراہ بنے اور اینس سو ساٹھ سے انیس سو انہتر تک وہ پہلے مجلس خدام الاحمدیہ کے نائب صدر اور پھر صدر رہے۔انیس سو اناسی سے انیسو سو بیاسی تک وہ ’مجلس انصاراللہ‘ کے صدر رہے اور انہوں نے جماعت کے ایک اور ادارے فضل عمر فاونڈیشن کے سربراہ کی حیثیت سے بھی خدمات سرانجام دیں۔

خلافت

مرزا ناصر احمد کے انتقال کے اگلے روز یعنی 9 جون، 1982ء کو آپ کو احمدیہ جماعت کے چوتھے خلیفہ کے طور پر منتخب کیا گیا۔

وفات

19 اپریل2003ء کو لندن میں وفات ہوئی۔

تصانیف

  1. خطبات طاہر
  2. الہام، عقل، علم اور سچائی
  3. سوانح فضل عمر
  4. مذہب کے نام پر خون

حوالہ جات