مسند احمد بن حنبل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

مسند احمد بن حنبلحدیث کی ایک کتاب ہے جو مشہور سنی عالم دین امام احمد بن حنبل نے تصنیف کی۔ امام احمد بن حنبل اہل سنت و الجماعت کے آئمہ اربعہ میں سے ہیں۔ انہی کی وجہ سے مسلمانوں کا ایک طبقہ حنبلی کہلاتا ہے۔

زمانہ تصنیف[ترمیم]

امام احمدحنبل نے یہ کتاب 220ھ سے 237ھ کے درمیان تصنیف فرمائی۔

اصناف حدیث[ترمیم]

محدثین کرام نے کتب حدیث میں مختلف ترتیب کے تحت احادیث جمع کی ہیں اور ہر ترتیب کے لحاظ سے مجموعہ کا نام رکھا جاتا ہے۔ جس کتاب میں ابواب فقہیہ کی ترتیب سے احادیث جمع کی جائیں اس کتاب کو سنن کہتے ہیں۔ جیسے سنن ترمذی سنن نسائی وغیرہ ۔۔ اسی طرح جمع حدیث کی دیگر اصناف میں جامع، صحیح، معجم، مفرد وغیرہ بھی شامل ہیں۔ ان میں سےایک ترتیب کو 'مسند' کہا جاتا ہے۔ مسند ، حدیث کی اس کتاب یا مجموعہ کو کہتے ہیں جس میں احادیث کو صحابہ کرام کی ترتیب سے جمع کیا ہو۔یعنی ایک صحابی کے نام کا عنوان دے کر اس کے تحت اس کی تمام روایات ذکر کی جائیں۔ پھر دوسرے صحابی کا نام دے کر اس کے تحت اس کی تمام مرویات ذکر کیا جائیں ۔ کتاب مسند احمد اسی صنف سے تعلق رکھتی ہے۔ اسی لیے اس کتاب میں سب سے پہلے عشرہ مبشرہ کی تمام احادیث ہیں۔ بعدہ مکثرین کی روایات ہیں پھر دوسرے صحابہ کی۔ اور اس کے بعد مرد صحابہ کی تمام مرویات کا ذکر کرنے کے بعد ، خواتین صحابیات کی مرویات ذکر کی گئی ہیں۔ ان میں سب سے پہلےام المومنین عائشہ صدیقہ کی احادیث جمع کی گئی ہیں پھر باقی صحابیات کی۔ اس طرح اس مجموعہ میں تقریباً 28000 روایات آگئی ہیں۔

مسند احمد بن حنبل کا ایک قدیمی نسخہ جو ماہِ ربیع الاول 266 ہجری مطابق اکتوبر 879ء میں لکھا گیا۔