ہیلیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(ہیلیئم سے رجوع مکرر)
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ہوا سے لگ بھگ سات گنا ہلکی ہونے کی وجہ سے ہیلیئم کو اڑنے والے غباروں میں استعمال کیا جاتا ہے۔ ہائڈروجن اس سے بھی زیادہ ہلکی ہوتی ہے مگر اس میں آگ لگنے کا خطرہ ہوتا ہے
Helium,  2He
Helium-glow.jpg
General properties
Pronunciation /ˈhiːliəm/, HEE-lee-əm
Appearance Colorless gas, exhibiting a purple glow when placed in a high voltage electric field
Helium in the دوری جدول
سانچہ:Infobox element/periodic table
جوہری عدد (Z) 2
Group, period 18 (noble gases), period 1
Block s-block
مشابہ عناصر گروہوں کے اجتماعی نام سانچہ:Infobox element/category format
Standard atomic weight (Ar) 4.002602(2)
برقی تشکیل 1s2
Electrons per shell
2
Physical properties
Phase gas
نقطۂ انجماد (at 2.5 MPa) 0.95 کیلون ​(−272.20 °C, ​−457.96 °F)
نقطہ کھولاؤ 4.22 K ​(−268.93 °C, ​−452.07 °F)
کثافت at stp (0 °C and 101.325 kPa) 0.1786 g/L
Critical point 5.19 K, 0.227 MPa
سخانۂ ائتلاف 0.0138 جول فی مول
Heat of 0.0829 kJ/mol
Molar heat capacity 20.786 J/(mol·K)
بخاری دباؤ (defined by ITS-90)
Atomic properties
برقی منفیت Pauling scale: no data
Covalent radius 28 پیکومیٹر
وانڈروال رداس 140 pm
Miscellanea
قلمی ساخت سانچہ:Infobox element/crystal structure
آواز کی رفتار 972 میٹر فی سیکنڈ
حر ایصالیت 0.1513 W/(m·K)
مقناطیسیت diamagnetic[1]
کیمیائی شعبۂ اخلاص اندراجی عدد 7440-59-7
Main isotopes of helium
سانچہ:Infobox element/isotopes header
  • Atmospheric value, abundance may differ elsewhere.
| references | in Wikidata

ہیلیئم (helium) ایک کیمیائی عنصر کو کہتے ہیں جس کا جوہری عدد 2 اور جوہری وزن 4.0026 ہوتا ہے، اس عنصر کو انگریزی نظام میں He کی علامت سے ظاہر کیا جاتا ہے۔ ہیلیئم ایک بے رنگ ، بے بو ، بے ذائقہ ، غیرسام (non-toxic) اور غیر عامل (inert) یک ایٹمی گیس (inert monoatomic gas) ہے۔

ہمجا[ترمیم]

ہیلیئم کے آٹھ ہمجا (isotopes) ہوتے ہیں مگر صرف دو پائیدار ہوتے ہیں جو ہیلیئم3 اور ہیلیئم4 ہیں۔ ہیلیئم3میں ایک نیوٹرون اور ہیلیئم4 میں دو نیوٹرون ہوتے ہیں۔ ہیلیئم کے سارے آئسوٹوپ میں دو پروٹون ہوتے ہیں۔

ہیلیئم3 نہایت کم یاب ہے۔ زمین کی فضا میں ہیلیئم کے دس لاکھ ایٹم میں صرف ایک ہیلیئم3 کا ایٹم ہو تا ہے باقی سب ہیلیئم4 کے ایٹم ہوتے ہیں۔

طبیعی خاصیت[ترمیم]

ہیلیئم میں آواز کی رفتار ہوا کے مقابلے میں تین گنا زیادہ ہے۔ اگر کوئی انسان تھوڑی سی ہیلیئم سونگھ لے تو اسکی آواز چند سیکنڈ کے لیے پتلی ہو جاتی ہے۔ اسکے برعکس زینون یا سلفر ہیکزا فلورائیڈ سونگھنے سے آواز بھاری ہو جاتی ہے۔


ہیلیئم4 ٹھنڈا کرنے پر 4.2K پر مائع بن جاتی ہے اور 2.17K پر سپر فلوئڈ میں تبدیل ہو جاتی ہے۔

اگر ہیلیئم3 اور ہیلیئم4 کی برابر برابر مقدار کو ملا کر انتہائی ٹھنڈا کیا جائے تو 0.8K پر دونوں مایعات الگ الگ ہو جاتے ہیں۔ اسکی وجہ یہ ہے کہ ہیلیئم4 کے ایٹم bosons جبکہ ہیلیئم3 کے ایٹم فرمیون ہوتے ہیں۔

مزید دیکھیئے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Magnetic susceptibility of the elements and inorganic compounds, in Handbook of Chemistry and Physics 81st edition, CRC press.