یہودی زبانیں

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
Jewish funun.jpg
یہودی ثقافت
بصری فنون
بصری فنون فہرست
ادب
ییدش لادینی
عبرانی اسرائیلی
امریکی انگریزی
فلسفہ فہرست
فنون ادا
موسیقی رقص
اسرائیلی ایوان عکس ییدش جلوہ گاہ
طرز طباخی
یہودی اسرائیلی
سفرڈی اشکینازی
شامی
دیگر
مزاح زبانیں
علامات لباس
مقالہ بہ سلسلۂ مضامین

یہودیت

Star of David.svg
Lukhot Habrit.svg  Menora.svg

تاریخ یہودیت

عقائد
خدا کی وحدانیت · ارض اسرائیل · بنی اسرائیل · صدقہ · صنوعت
عبادات اور عبادت گاہیں
مِقواہ · شول · بیت مِقداش · منیان · شاخاریت · منخا · معاریب · شماع
تہوار
شابات · روش ھاشاناہ · عشرۃ التوبہ · یوم کِپور · سکوت · سِمخات توراہ · ہنوکا · عیدپوریم · عید فسح · شاوُوت
اہم شخصیات
ابراہیم · سارہ · اسحاق · یعقوب عرف اسرائیل · بارہ قبائل · موسیٰ · سلیمان · داؤد
کتب و قوانین
تورات · زبور
مشنی ·
تلمود · ہالاخا · کاشرُوت


یہودی زبانیں جو پوری دنیا اور بالخصوص یورپ، ایشیا اور شمالی افریقہ میں یہود کے ذریعہ وجود میں آئیں۔ گوکہ عبرانی کئی صدیوں تک یہود کی بول چال کی زبان رہی۔ اور پانچویں صدی ق م میں یہودیہ میں آرامی بھی ان کی روز مرہ کی زبان کا حصہ بن چکی تھی۔ نیز تیسری صدی ق م میں یہود اپنے عہد انتشار میں یونانی بھی بولا کرتے تھے۔ لیکن اس کے بعد جلد ہی عبرانی کی مقام یہودی معاشرے میں کم ہوتا چلا گیا اور پھر تقریباً سولہ صدیوں تک یہ زبان صرف مذہبی کتب اور رسومات کا حصہ بنی رہی۔ 1880 کی دہائی کے اواخر میں الیعزر بن یہودا کی کوششوں سے عبرانی زبان کا احیا ہوا اور فلسطین میں یہ زبان بولی جانے لگی۔ بالآخر یہ ریاست اسرائیل کی قومی زبان قرار پائی۔
صدیوں تک یہود ان خطوں اور علاقوں کی ہی زبان استعمال کرتے رہے جہاں وہ نقل مکانی کرتے۔ تاہم ان زبانوں میں عبرانی تعبیرات اور مفردات کا اضافہ کرتے رہتے تھے۔
یہود کے عہد انتشار میں فروغ پانے والی زبانوں میں زیادہ مشہور ییدش، یہودی۔ہسپانوی اور یہودی۔عربی زبانیں ہیں۔
1850 کی دہائی میں ییدش یہود میں سب سے زیادہ بولی جانی والی زبان تھی، تاہم موجودہ دور میں انگریزی، جدید عبرانی اور روسی زبانیں سب سے زیادہ مقبول ہیں۔

فہرست یہودی زبانیں[ترمیم]

افرو۔ایشیائی زبانیں[ترمیم]

ہند۔یورپی زبانیں[ترمیم]



مزید دیکھیے[ترمیم]