اسرائیل سعودی عرب تعلقات

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اسرائیل سعودی عرب تعلقات
نقشہ مقام اسرائیل اور سعودی عرب

اسرائیل

سعودی عرب

اسرائیل اور سعودی عرب کے درمیان میں کوئی سرکاری سفارتی تعلقات نہیں ہیں۔ تاہم، خبروں میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ دونوں ملکوں کے علاقائی دشمن ایران کے خلاف باہمی اہداف کے حصول کے لیے پس پردہ وسیع سفارتی اور انٹیلی جنس تعاون ہو رہا ہے۔[1][2] اسی دوران میں، فلسطینی قومی عملداری اور محمود عباس کے ساتھ سعودی تعلقات بگڑ رہے ہیں۔[3]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Greg Myre (25 ستمبر 2006). "Olmert reportedly held secret meeting with king of Saudi Arabia". International Herald Tribune. اخذ شدہ بتاریخ 6 جنوری 2014. 
  2. YASSER OKBI (5 جنوری 2016). "IDF officer to Saudi paper: Israel has 'common language' with moderate Arab states". MAARIV HASHAVUA. اخذ شدہ بتاریخ 5 جنوری 2016. 
  3. "Saudi Arabia and the Palestinian Authority – Ties Are Fraying". Jerusalem Center For Public Affairs (بزبان انگریزی). 14 نومبر 2016. اخذ شدہ بتاریخ 14 نومبر 2016. 

بیرونی روابط[ترمیم]