بودھی دھرم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
BodhidharmaYoshitoshi1887.jpg
بودھی دھرم
مختلف زبانوں میں نام
انگریزی: Bodhidharma
تامل: போதிதர்மன்
تیلگو: భోధిధర్మా
سنسکرت: बोधिधर्म
اردو: بودھی دھرم
آسان چینی: 菩提达摩
روایتی چینی: 菩提達摩
Chinese abbreviation: 達摩
پینین: Pútídámó
Wade–Giles: P'u-t'i-ta-mo
تبّتی: Dharmottāra
کوریائی: 달마 Dalma
جاپانی: 達磨 Daruma
مالے: Dharuma
تھائی: ตั๊กม๊อ Takmor
ویتنامی: Bồ-đề-đạt-ma

بودھی دھرم چھٹی صدی یا ساتویں صدی ء کا بدھ سنت ہے ۔ اس کو زین بدھ مذہب کا مبلّغ مانا جانا ہے ۔ وہ پلّاوا شاہی خاندان کا تیسرا شہزادہ تھا ۔

روایتی داستان[ترمیم]

چینی روایات میں کہا جاتا ہے کہ بودھی دھرم ہندوستان یا وسطی ایشیا سے اپنی والدہ کے کہنے پہ چین گیا۔ چین کے گاؤں میں وہاں کے مقامی نجومیوں نے پیشن گوئی کی کہ کوئی مصیبت آنے والا ہے۔بودھی دھرم جیسے اس گاؤں پہنچا تو لوگوں کو لگا کہ یہ شاید وہی مصیبت ہے جس کی پیشن گوئی کی گئی تھی اس لیے اس گاؤں کے لوگوں نے اسے گاؤں سے نکال دیا۔لیکن چند دنوں بعد جس مصیبت کی بات نجومی کر رہے تھے وہ ایک بیماری کی شکل میں اس گاؤں میں پھیل گئی۔ ایک بچی اس بیماری سے متاثر ہوجاتی ہے اور پوری جسم پر نشانات پڑجاتے ہیں تو اس گاؤں کے لوگ اس بچی کو لے کر ایک غیرآباد پہاڑیوں میں چھوڑ آتے ہیں، بودھی دھرم انہی پہاڑیوں میں رہ رہا ہوتا ہے تو مختلف جڑی بوٹیوں کی دوا تیار کر کے اس بچی کو پلادیتا ہے جس سے وہ واپس تندرست ہوجاتی ہے۔وہ اس بچی کو واپس گاؤں لے آتا ہے گاؤں کے لوگ اسے دیکھ کر خوش ہوجاتے ہیں اور بودھی دھرما کو گاؤں میں رہنے کی درخواست کرتے ہیں۔بودھی دھرم لوگوں کی درخواست قبول کرتے ہوئے کچھ عرصے کے لیے اس گاؤں میں رہنے پر رضامند ہوجاتا ہے۔ چینی کراٹوں میں ایک قسم ہے جسے شاولن کانگ فو کہا جاتا ہے ،اسے بودھی دھرم نے ہی ایجاد کیا ہے۔ بودھی دھرم اس گاؤں میں رہا اور وہاں کے لوگوں کو مختلف چیزیں سکھاتا رہا۔ پھر ایک عرصے بعد بودھی دھرم نے واپس ہندوستان جانے کی بات کی۔ چینی روایات کے مطابق ، نجومیوں نے پھر سے پیشنگوئی کی کہ اگر بودھی دھرم واپس چلاگیا تو پھر مصیبت طاری ہوجائے گی۔اس پر گاؤں والوں نے اسے روکنے کی کوشش کی۔گاؤں والوں نے بودھی دھرم سے یہ بھی وسیعت لی کہ مرنے کے بعد بودھی دھرم کا جسم اسی گاؤں میں دفنایا جائے گا ۔